Pakistan Cricket Board

نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر، پاکستان کرکٹ بورڈ کا تاریخی سنگ میل

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور(جے ٹی این آن لائن سپورٹس نیوز) نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر

پاکستان کرکٹ بورڈ ( پی سی بی ) نے قومی کرکٹ اکیڈمی، ( این سی اے ) کو نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر، میں تبدیل کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ سابق ڈائریکٹرانگلش کرکٹ بورڈ ڈیوڈ پارسنس نے پی سی بی کو قومی اکیڈمی کی ری اسٹرکچرنگ کے لیے مفصل پروگرام بھی بنا کر دیدیا- جس سے ڈومیسٹک اور انٹرنیشنل کرکٹ میں فاصلہ کم، جونیئر سطح پر ملکی سسٹم میں داخل ہونیوالے کھلاڑیوں کا ریکارڈ مرتب کیا جا سکے گا، اور پھر وہ سسٹم سے غائب بھی نہیں ہوگا۔

( یہ بھی پڑھیں )

ڈیوڈ پارسنس کو نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر کا سربراہ بنانے کا تاثر غلط

تفصیلات کے مطابق اس ضمن میں ڈیوڈ پارسنس نے، کنسلٹنٹ کی حیثیت سے چند ماہ قبل لاہور کا دورہ کیا تھا، اور ان کی رپورٹ پر قومی اکیڈمی کے ڈھانچے کو تبدیل کرکے، آئندہ ماہ این سی اے کو نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر میں تبدیل کردیا جائیگا۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسر پی سی بی وسیم خان کے مطابق یہ تاثر غلط ہے، کہ ڈیوڈ پارسنس ہی ہائی پرفارمنس سینٹر کے نئے سربراہ ہونگے، لیکن نئی تقرریوں کیلئے ان سے مشاورت کی جائیگی، نئے لوگوں کا تقرر، ان کے تجربے و مہارت کو سامنے رکھتے ہوئے کیا جائیگا۔ عید سے قبل جب تمام درخواستیں مل جائینگی، تو نئے لوگوں کا تقرر کرتے وقت ڈیوڈ پارسنس کو بھی انٹرویو میں شامل کیا جائیگا۔

آئندہ ماہ کے وسط تک سسٹم میں نئی جان ڈال دی جائیگی، وسیم خان

وسیم خان کا کہنا تھا آئندہ ماہ مئی کے پہلے یا دوسرے ہفتے تک، تمام تقرریاں مکمل کرکے پاکستان کرکٹ کیلئے، ایک تاریخی سنگ میل عبور کر لیں گے۔ اسی طرح کے سینٹرز کراچی، ملتان، کوئٹہ، راولپنڈی اور پشاور میں بھی کام کریں گے۔ ڈومیسٹک کرکٹ ڈپارٹمنٹس کو قومی ہائی پرفارمنس سینٹر میں ضم کردیا جائیگا، ڈومیسٹک کرکٹ سے نکلنے والے جونیئر کھلاڑی کو ہائی پرفارمنس سینٹر میں تربیت دی جائیگی۔ پاکستان کے ناکام سسٹم کو کوالی فائیڈ کوچز اور ماہرین کی مدد سے اپ گریڈ کیا جائیگا، اور اس سسٹم میں نئی جان ڈالی جائیگی۔جبکہ نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر کا ڈائریکٹر براہ راست ڈومیسٹک کرکٹ کو بھی دیکھے گا۔

چار نئے عہدوں کی تخلیق، اشتہار بھی دیدیا گیا

ڈیوڈ پارسنس نے پاکستانی سسٹم کو سامنے رکھ کر اور پاکستانی کوچز سے بات کرکے نیا سسٹم بنایا ہے۔ اس جدید ہائی پرفارمنس سینٹر میں جمنازیم اور فٹنس کی سہولتوں کو اپ گریڈ کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا پی سی بی نے ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس کی تلاش بھی شروع کر دی ہے۔ پی سی بی نے ڈائریکٹر نیشنل ہائی پرفارمنس، ہیڈ نیشنل ہائی پرفارمنس کوچنگ، ہیڈ انٹرنیشنل پلیئر ڈویلپمنٹ اور ہائی پرفارمنس آپریشنز منیجر کیلئے اشتہار بھی دیدیا ہے۔ ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس کیلئے لیول ٹو کوچنگ کورس مانگا گیا ہے۔ انٹرنیشنل یا ٹیسٹ کرکٹر کو ترجیح دی جائے گی، جبکہ پندرہ سال کے تجربے کیساتھ فرسٹ کلاس کرکٹر بھی اپلائی کر سکتا ہے۔

تقرریوں کیلئے 29 اپریل تک درخواستیں طلب

سی ای او پی سی بی کا مزید کہنا تھا کہ ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس، پاکستان کرکٹ ٹیم کیلئے ورلڈ کلاس کھلاڑیوں کا پول تیار کرے گا۔ ہائی پرفارمنس سینٹر کے کوچنگ سربراہ کیلئے، لیول تھری کوچنگ کورس کیساتھ پانچ سال کا تجربہ درکار ہے۔ انٹرنیشنل پلئیر ڈویلپمنٹ کے سربراہ کیلئے بھی لیول تھری کوچنگ کورس کی شرط رکھی گئی ہے۔ امیدوار کوچنگ کورس کیساتھ سابق انٹرنیشنل کرکٹر اور پانچ سال کا تجربہ رکھتا ہو۔ ہائی پرفارمنس سینٹرز کے منیجرکے عہدے کیلئے گریجویشن، اور پانچ سال کا تجربہ مانگا گیا ہے۔ خواہشمند افراد تمام عہدوں کیلئے 29 اپریل تک درخواستیں جمع کروا سکتے ہیں۔

قارئین : خبر اچھی لگے تو شیئر ، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply