نیب ٹیم پر حملے کا معاملہ ، اعجاز جاکھرانی ، انکے بیٹے کا نام لسٹ سے فارغ

Spread the love

نیب ٹیم پر حملے

جیکب آباد(جے ٹی این آن لائن نیوز) نیب ٹیم پر حملے کا معاملے میں جیکب آباد پولیس نے نیب کی

درخواست میں شامل صوبائی مشیر اعجاز جکھرانی اور ان کے بیٹے کا نام نکال کر تین قریبی

ساتھیوں سمیت 250 نامعلوم افراد کیخلاف سرکار کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا،تاحال کوئی

گرفتاری عمل میں نہ آئی۔تفصیلات کے مطابق جیکب آباد میں 5 روز قبل نیب سکھر کی ٹیم نے صوبا

ئی مشیر جیل خانہ جات اعجاز جکھرانی کی گرفتاری کیلئے ان کے گھر پرچھاپہ مارا تھا تو چھاپے

کی اطلاع پرجکھرانی برادری اور پیپلز پارٹی کے سیکڑوں کارکن وہاں پہنچ گئے ،جنہوں نے نیب ٹیم

کو یرغمال بنا کر مبینہ تشدد کا نشانہ بنایا ،اطلاع ملنے پر چیئرمین نیب نے نوٹس لیا اور پولیس کو

ملوث افراد کیخلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کی تھی۔ اس سلسلے میں نیب سکھر کے انسپکٹر

عبدالرزاق نے جیکب آباد پولیس کو ایک درخواست دی جس میں کہا گیا نیب کی ٹیم صوبائی مشیر

اعجاز جکھرانی کی گرفتاری کیلئے وارنٹ کیساتھ ان کے جیکب آباد والے گھر پہنچی تو وہاں اعجاز

جکھرانی کے بیٹے رافع جکھرانی، ظفر برڑو، خادم بھٹو نے 1500 کے قریب افراد کے ہمراہ اعجاز

جکھرانی کی ایماء پرنیب ٹیم پر حملہ کرکے تشدد کا نشانہ بنایا ، گاڑیوں کے شیشے توڑے، نیب

سکھرکی اس درخواست پر گذشتہ روز جیکب آباد کے سول لائن تھانہ کی پولیس نے اے ایس آئی

اعجاز احمد کی مدعیت پر صوبائی مشیر کے پی اے ظفر برڑو، خادم بھٹو اور وسیم جکھرانی سمیت

250 نامعلوم افراد کیخلاف اقدام قتل، قتل کی دھمکیوں، ڈیوٹی میں مداخلت، ہنگامہ آرائی اور مارپیٹ

کا مقد مہ درج کرلیااور ایف آئی آر میں لکھا نیب نے درخوا ست دی لیکن مقدمہ درج کرانے کیلئے

کوئی فریادی نہیں آیا اسلئے ایس ایس پی کے احکامات پر سرکار کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا

ہے،تاہم نیب کی درخواست میں شامل صوبائی مشیر جیل خانہ جات اعجاز جکھرانی اور ان کے بیٹے

رافع جکھرانی کا نام کیس میں شامل نہیں کیاگیا۔

نیب ٹیم پر حملے

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply