نیب آرڈیننس میں ترامیم پر ہنگامہ ،اپوزیشن کی کڑی تنقید

Spread the love

نیب آرڈیننس میں ترامیم

لاہور،کراچی (جے ٹی این آن لائن نیوز) بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں

توسیع غیر قانونی اور بدنیتی پر مبنی ہے، سلیکٹڈ حکومت اپوزیشن کو مسلسل نشانہ بنائے رکھنا

چاہتی ہے۔پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر

ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ سلیکٹڈ حکومت وزیراعظم اور ان کے خاندان و رفقاء کو احتساب سے

استثنٰی دیتے ہوئے اپوزیشن کو نشانہ بنانے کا عمل جاری رکھنا چاہتی ہے، پینڈورا پیپرز کے بعد

خاص طور پر حکومت خود کو احتساب سے بچانا چاہتی ہے۔دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ مراد علی

شاہ نے احتساب عدالت پیشی کے بعد اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آرڈیننس لانا

غیر مناسب ہے، اسمبلیوں سے قانون سازی ہونی چاہیے، قانون سازی کرنی ہے تو مہنگائی کیخلاف

کریں، آپ اپنی مرضی کی قانون سازی لا رہے ہیں، سب سے محترم ادارے پارلیمنٹ کو بائی پاس

نہیں کیا جانا چاہیے۔مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ انتخابات جلد ہوں یا وقت پر ہوں عمران خان کہیں نظر

نہیں آتے، 2016 میں کہتے تھے جن کے ا?فشور اکاؤنٹس ہیں وہ سب چور ہیں، آج وزراء کے آفشور

اکاؤنٹس سامنے آئے ہیں۔پاکستان پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر راجہپرویز اشرف نے کہا ہے کہ

دنیا میں کوئی ایسی حکومت نہیں جو روزمہنگائی کرتی ہو،آج پورا ملک مصیبت سے دوچار ہے۔

مہنگائی اور بیروزگاری نے بائیس کروڑ عوام کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔عام آدمی یوٹیلٹی بل بھر سکتا

ہے نہ ٹیوشن فیس ،ہر روز نیا بجٹ ا رہا ہے۔ہر روز مہنگائی بڑھتی ہے۔ وہ ماڈل ٹاؤن سیکرٹریٹ میں

حسن مرتضی،ثمینہ خالد گھرکی،شہزاد سعید چیمہ اور نرگس فیض کیساتھ پریس کانفرنس سے خطاب

اور میڈیا کے سوالات کے جواب دے رہے تھے۔راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ وزیر اعظم سے مطالبہ

کرتا ہوں کہ مہنگائی کے سدباب کیلیے ایمر جنسی لگائیں۔انہوں نے کہا کہ ترجمان عوام کے زخموں

پر نمک چھڑکتے ہیں۔نوکری دینے اور لینے والوں نے سلیمانی ٹوپیاں پہن رکھی ہیں۔ایک دن ڈالر

انتہائی سطح پر پہنچتا ہے،اگلے روز روپیہ اور بے قدر ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی

داخلہ و خارجہ پالیسیاں ناکام ہو چکی پیں۔آپ نے لوگوں کی کمر توڑ کے رکھ دی ہے۔پیپلز پارٹی عوام

سے اظہار یک جہتی کیلیے سڑکوں پر ہے۔آپ نے عوام کو مہنگائی کے سونامی میں ڈبو دیا ہے۔ہر

شخص گھر،دفتر،بازار میں آپ کو بد دعائیں دے رہا ہے۔جینا مرنا اوربنیاد عوام۔کیساتھ ہے۔راجہ

پرویز اشرف نے کہا کہ حکومت نے پارلیمان کو یکسر نظر انداز کر رکھا ہے، آرڈیننسوں سے وہ

حکومت گزارہ کرتی ہے جسے پارلیمان کا ساتھ نہیں ملتا۔کیا یہ اداروں کی توقیر ہے کہ آپ قانون

سازی کی بجائے آرڈیننس کے پیچھے چھپتے ہیں ،چیرمین نیب نہیں بلکہ اسے تجدید دینے کے طریقہ

کار پر ہے۔راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پیپلز پارٹی ڈائیلاگ پر یقین رکھتی ہے۔آئین و قانون پر کوئی

کمپرومائز نہیں۔افواج پاکستان ہمارا ادارہ ہے انکے کردار پر بات نہیں کرنا چاہیے۔تمام وزرائے اعظم

کی حاضری دیکھ لیں،پیپلز پارٹی کے وزرائے اعظم سب سے زیادہ آئیتقریر کی اجازت سب کو ہونی

چاہیے،حکومت پارلیمنٹ کا ماحول تعمیری بنائیہماری کسی تنظیم میں کوئی دراڑ نہیں،سب متحد ہیں۔

تبدیلی نارمل عمل ہے،تین برس کے بعد ضرورت کے مطابق تبدیلی کی جاتی ہے۔لاہور سمیت جہاں

ضروری ہواتبدیلیاں کرینگے۔بعد ازاں مہنگائی اور بیروزگاری کیخلاف پاکستان پیپلز پارٹی وسطی

پنجاب کی موٹر سائیکل ریلی ماڈل ٹاؤن سے روانہ ہوئی ریلی کی قیادت راجہ پرویز اشرف،حسن

مرتضی،شہزاد سعید چیمہ اور عزیز الرحمن چن نے کی۔ریلی میں چودھری عاطف رفیق،انجم بٹ ،

چوہدری منشاء پرنس،چاہدری وقاص منشاء پرنس ،مجتبیٰ پرنس،اسد مرتضیٰ ۔چودھری اختر،ملک

جمشید،صابر بھلہ،محسن ملہی،عمران اٹھوال بھی موجود تھے،لاہور کے تمام زونز سے جیالے موٹر

سائیکلوں پر ماڈل ٹاؤن سیکرٹریٹ پہنچے۔ریلی کیساتھ پیپلز پارٹی کے ترانوں والا ٹرک بھی موجود

تھا۔ریلی میں موجودموٹر سائیکلوں اور گاڑیوں پر پیپلز پارٹی کے جھنڈوں کی بھر مارتھی ،ریلی

شرکاء کے مہنگائی،بیروزگاری ،پیٹرول،ایل پی جی اور حکمرانوں کیخلاف نعرے بازی کرتے ہوئے

کہا کہ وزیر اعظم قصائی ہے،کمرتوڑ مہنگائی ہے,سلیکٹڈ حکومت سو رہی ہے،غریب عوام رو رہی

ہے،تباہی سرکار کی آبیاری،بیروزگاری،بیروز گاری،ریلی فیروز پور روڈ کے راستے جین مندر،ایم

اے او کالج،داتا دربار،شنگھائی برج،مال روڈ،کیمپس نہر،جیل روڈ،صدیق ٹریڈ سنٹر سے ہوتی ہوئی

لبرٹی گول چکر پر اختتام پذیر ہوئی۔دریں اثناء راجہ پرویز اشرف،شہزاد سعید چیمہ و دیگر نے

بلوچستان زلزلہ متاثرین سے اظہار افسوس کرتے ہوئے ان کے جانی و مالی نقصان پر افسوس کا

اظہار بھی کیا۔

نیب آرڈیننس میں ترامیم

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply