نواز شریف کی حالت سنبھلنے کی بجائے مذید تشویشناک ہو گئی، بیرون ملک منتقلی کا امکان

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور(سٹاف رپورٹر) سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خون میں پلیٹ لیٹس کی

کمی کے باعث ان کے مسوڑھوں سے خون رسنا شروع ہوگیا ہے، ان کا بون میرو

نئے پلیٹ لیٹس نہیں بنا رہا جس کی وجہ سے بار بار پلیٹ لیٹس کی کٹس لگانے

کے باوجود ان میں کمی واقع ہوجاتی ہے، میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کو علاج

کیلئے بیرون ملک منتقل کرنے کی تجویز دے دی تاہم حکومت نے آغا خان ہسپتال

کراچی سے ڈاکٹر طاہر شمسی کو مشاورت کیلئے لاہور بلالیا ہے، ڈاکٹر شمسی

پاکستان میں بون میرو ٹرانسپلانٹ کے واحد ڈاکٹر ہیں اور اگر انہوں نے نواز

شریف کے علاج کی حامی نہ بھری تو سابق وزیر اعظم کو اگلے 24 سے 48

گھنٹوں میں خصوصی طیارے کے ذریعے لندن شفٹ کردیا جائے گا۔ذرائع نے بتایا

کہ سروسز ہسپتال میں زیر علاج سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے

مسوڑھوں سے خون رسنا شروع ہو گیا ہے جس پر ڈاکٹروں نے ان کے ٹوتھ برش

اور شیو کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔نوازشریف کا علاج کرنے والے ماہر

ڈاکٹروں نے نواز شریف کی صحت پر تشوی%9%%D ڨا 818%D8ا %7 ح8ہ %1 ع%ح85A%D تDک
%0A
%9%رB19%D ٹBد ف%%D کہ A79%D8%8%ز8C8%D ف8کB5حت اچھی نہیں ہے اگر خدا نہ خواستہ ان کے

جسم کے کسی حصے سے بلیڈنگ شروع ہو گئی تو یہ ان کی صحت کے لیے

اچھی نہیں ہو گی۔ذرائع کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ ان کا علاج کرنے والے ڈاکٹر

تاحال بیماری کی تشخیص نہیں کرسکے، جب پلیٹ لیٹس خطرناک حد تک کم ہوتے

ہیں تو تب جسم کے کسی بھی حصے سے کسی بھی وقت بلیڈنگ ہونے کا خطرہ

لاحق ہوتا ہے۔نوازشریف کو 6میگایونٹ لگنے کے باوجود ان کے خون کے پلیٹ

لیٹس میں حاطر خواہ اضافہ نہیں ہو سکا۔۔ حکومت نے وائی ڈی اے چلڈرن ہسپتال

کے صدر ڈاکٹر ناصر بخاری کو بون میرو ٹرانسپلانٹ کی ٹریننگ دی تھی لیکن

وہ بھی اس پائے کے ڈاکٹر نہیں ہیں، اگر طاہر شمسی نے بون میرو ٹرانسپلانٹ کی

ذمہ داری نہ اٹھائی تو نواز شریف کو آئندہ 24 سے 48 گھنٹے میں بیرون ملک

بھجوادیا جائے گا۔ذرائع نے بتایا کہ حکومت نے ڈاکٹر طاہر شمسی کی صلاحیت پر

نواز شریف کی بیرون ملک منتقلی کا فیصلہ چھوڑا ہوا ہے، اگر ڈاکٹر شمسی نواز

شریف کا بون میرو ٹرانسپلانٹ کرنے میں کامیاب ہوگئے تو ٹھیک ہے ، بصورت

دیگر انہیں فوری طور پر خصوصی طیارے کے ذریعے لندن شفٹ کردیا جائے گا۔

دوسری جانب سینئر صحافی و اینکر پرسن کامران خان نے کہا ہے کہ ’انتہائی

کلیدی عہدوں پر فائز دو حکومتی شخصیات نے مجھے کنفرم کیا کہ نواز شریف

کی صحت تشویش ناک ہے، اگلے 24 گھنٹوں میں اگر platelets خود بننا شروع

نا ہوئے اور مرض بھی diagnose نہ ہوا تو نواز شریف کو بیرون ملک جانے دیا

جائے گا وزیر اعظم کو بتایا گیاہے حکومت اس ایشو پر تساہل نہ برتیدوسری

طرف وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے نواز شریف کے علاج کیلئے اپنا

طیارہ مختص کردیا ، حالت ٹھیک نہ ہونے کی صورت میں بیرون ملک منتقل

کرنے کیلئے سنجیدگی سے غور کیا جارہاہے۔ذرائعکے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب

سردار اعثمان بزدار نے نواز شریف کی بیماری کے پیش نظر اپنا خصوصی طیارہ

اس مقصد کیلئے مختص کردیاہے کہ ملک کے کسی بھی حصے سے کسی ماہر

ڈاکٹر کو لانا پڑے توفوری طور پر لایا جائے۔ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف

کی تشویشناک حالت کے باعث لندن میں موجود انکی چھوٹی صاحبزادی اسما

نواز کو بھی پاکستان بلا لیا گیا ہے ،وہ آج صبح پاکستان آئیں گی۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply