state bank jtnonline

نئی مانیٹری پالیسی، شرح سود 7 فیصد پر برقرار رکھنے کا فیصلہ

Spread the love

کراچی(جے ٹی این آن لائن بزنس نیوز) نئی مانیٹری پالیسی

سٹیٹ بینک آف پاکستان نے نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے شرح سود

کو7 فیصد پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ سٹیٹ بینک کی جانب سے جاری

بیان میں بتایا گیا ہے کہ زری پالیسی کمیٹی نے اپنے 19 مارچ 2021ء کے اجلاس

میں پالیسی ریٹ کو 7 فیصد پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے، جنوری میں

گزشتہ اجلاس کے بعد نمو اور روزگار میں بحالی آتی گئی ہے اور کاروبار کا

اعتماد مزید بہتر ہوا ہے، شرح نمو 3 فیصد کے لگ بھگ ہے ابھی تک معتدل ہے۔

سٹیٹ بینک کے مطابق جنوری میں مہنگائی دو سال سے زیادہ عرصے کی پست

ترین سطح پر رہی، تاہم فروری میں مہنگائی میں تیزی سے اضافہ ہوا، بجلی کے

نرخوں میں حالیہ اضافہ اور چینی و گندم کی قیمتوں میں اضافہ فروری میں

مہنگائی کی رفتار بڑھانے کا سبب بنا، جبکہ بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ کے

اثرات آئندہ مہینوں کے دوران بھی مہنگائی کی شکل میں ظاہر ہوں گے۔ گورنر

سٹیٹ بینک نے کہاکہ آنے والے دنوں میں مانیٹری پالیسی اسی سطح پر رہے گی۔

اگر ضرورت ہوئی تو شرح سود مناسب طریقے سے بڑھائیں گے، مہنگائی کی

شرح 7 سے 9 فیصد رہنے کا امکان ہے۔ ملکی معاشی حالات بہتر ہو رہے ہیں،

ابھی وہ بہتری نہیں آئی جو دیکھنا چاہتے ہیں، مہنگائی کو کنٹرول رکھنے کے لیے

شرح سود برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس مہنگائی میں بجلی یا بین الاقوامی

تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوتو یہ عارضی ہے اورغذائی اشیا کی مہنگائی بھی

عارضی تھا، اس لیے کمیٹی کا خیال تھا کہ ان کی وجہ سے شرح سود میں تبدیلی

کی ضرورت نہیں ہے۔ بجلی کے نرخ بڑھنے سے مہنگائی بڑھنے کا خدشہ ہے۔

مانیٹری پالیسی کمیٹی کا خیال تھا کہ طلب میں دباﺅ نہیں ہے کیونکہ ہماری

صلاحیت مکمل طور پر زیر استعمال نہیں اور مہنگائی کی پیش گوئی میں توازن

ہے۔رضا باقر نے کہا کہ ان ساری وجوہات کی وجہ سے مانیٹری پالیسی کمیٹی کو

معاشی حالت پر نظر رکھنا چاہیے، اس پر نکتہ نظر تھا کہ پہلے کے مقابلے میں

حالات بہتر ہو رہے ہیں، کووڈ سے پہلے کے مقابلے میں حالات میں بہتری آئی

ہے لیکن قوم کی توقعات کے مطابق اب بھی نہیں ہے۔

نئی مانیٹری پالیسی

=—–= قارئین =-: خبر اچھی لگے تو شیئر کریں، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں
=—–=ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

Leave a Reply