262

میڈیکل بورڈ کی سفارشات مسترد، نوازشریف جیل منتقل

Spread the love

سروسز ہسپتال میں زیرعلاج سابق وزیر اعظم نواز شریف کے حوالے سے

میڈیکل بورڈ کی سفارشات کو محکمہ داخلہ پنجاب نے مسترد کرتے ہوئے انھیں امراض قلب کے ادارے

پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کاڈیالوجی میں ریفر کرنے کی بجائے سروسز ہسپتال سے کوٹ لکھپت جیل منتقل کر دیا گیا۔

واضع رہے میڈیکل بورڈ کے سربراہ پروفیسر محمود ایاز اور دیگر

ممبران نے اپنی سفارشات میں تجویز کیا تھا نواز شریف کو پی آئی سی میں منتقل کیا جائے

جہاں انکے دل کا معائنہ بہت ضروری ہے مگر محکمہ داخلہ نے میڈیکل بورڈ کی

رپورٹ پر پہلے انھیں پی آئی سی منتقل کرنے کی منظوری دی اور چند گھنٹے بعد ہی

منظوری واپس لیتے ہوئے نواز شریف کو پی آئی سی کی بجائے جیل منتقل کر دیا گیا ۔

بتایا گیا ہے سابق وزیراعظم کو 6 دن بعد ہسپتال سے واپس جیل منتقل کیا گیا،

نواز شریف نے پی آئی سی کے بجائے جیل منتقلی کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔

قبل ازیں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی والدہ شمیم اختر پوتی

مریم نواز کی ہمراہ اپنے بیٹے نواز شریف کی تیمارداری کیلئے سروسز ہسپتال پہنچیں۔

اس موقع پر والدہ کا کہنا تھا کہ اللہ میرے بیٹے کو صحت دے،

دونوں بیٹوں نواز شریف اور شہباز شریف کیلئے دعا گو رہتی ہوں۔

Leave a Reply