میٹرو ٹرین کا خسارہ

میٹرو ٹرین کا خسارہ پورا کرنے کیلئے بزنس پلان تیار

Spread the love

میٹرو ٹرین کا خسارہ

لاہور(جے ٹی این آن لائن نیوز) پنجاب حکومت نے اورنج میٹرو ٹرین کا خسارہ پورا کرنے کے لئے

بزنس پلان ٹاسک تیار کر لیا،ٹرین کے مختلف اسٹیشنوں پر کمرشل شاپس بنانے کی تجویز دی گئی

ہے ،ا سٹیشنوں کو ایڈورٹائزنگ کمپنیوں کو ایک سال کی لیز پر بھی دیا جاسکتا ہے۔ تفصیلات کے

مطابق اورنج میٹرو ٹرین کا خسارہ پورا کرنے کے لئے پنجاب حکومت نے بزنس پلان ٹاسک تیار کر

لیا گیا۔بتایا گیا ہے کہ پنجاب حکومت اورنج میٹرو ٹرین کے 27 اسٹیشنوں کو ایڈورٹائزنگ کمپنیوں کو

دینے کا ابتدائی پلان بنا رہی ہے۔ٹرین کے مختلف سٹیشنوں پر کمرشل شاپس بنانے کی تجویز بھی

سامنے آئی ہے،اسٹیشنوں کو ایڈورٹائزنگ کمپنیوں کو ایک سال کی لیز پر دیا جاسکتا ہے۔مختلف

ایڈورٹائزرز کمپنیوں کو اسٹیشن دینے کے علاوہ،ٹرین کے مختلف اسٹیشنوں پر کمرشل شاپس بنانے

کی تجویز بھی زیر غور ہے جبکہ کمرشل شاپس بنا کر ماہانہ کی بنیاد پر رینٹ آؤٹ بھی کی جاسکتی

ہیں۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ اسٹیشن کی دیکھ بھال بھی ایڈورٹائزنگ کمپنیوں کی ذمے داری ہوگی۔علاوہ

ازیں ماس ٹرانزٹ سروسز پر سبسڈی کا دبا ؤکم کرنے کیلئے نیا ٹیکس لگانے کی تجویز ہے، نئی

گاڑی کی رجسٹریشن پر شہریوں سے الگ سے ماس ٹرانزٹ ٹیکس وصول کیا جائے گا۔ نئی گاڑیوں

کی رجسٹریشن پر ماس ٹرانزٹ ٹیکس وصول کرنے کی تجویز حکومت کو پیش کردی گئی۔ اورنج

ٹرین، میٹروبس اور فیڈر بسوں پر حکومت پنجاب سالانہ 18 ارب روپے سے زائد کی سبسڈی دے

رہی ہے، ماس ٹرانزٹ اتھارٹی نے شہریوں سے گیسولین ٹیکس کے بعد اب گاڑیوں پر ماس ٹرانزٹ

ٹیکس کی وصولی کی تجویز دی ہے۔ ٹیکس کا اطلاق صرف تین بڑے شہروں پر ہوگا، ان شہروں میں

لاہور، ملتان اور راولپنڈی شامل ہیں، ان اضلاع کے شہریوں سے ہر نئی گاڑی کی رجسٹریشن پر

دیگر ٹیکسز کے ساتھ ساتھ ماس ٹرانزاٹ ٹیکس وصول کیا جائے گا، اس ٹیکس کی مد میں وصول

ہونے والی رقم سے ماس ٹرانزٹ پر دی جانے والی حکومتی سبسڈی کو کم کرنے میں مدد دے گی۔

میٹرو ٹرین

میٹرو ٹرین کا خسارہ

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply