میر مرتضیٰ بھٹو کی سالگرہ و برسی، فاطمہ بھٹو کا دُکھ ، بلاول کا خراج عقیدت

میر مرتضیٰ بھٹو کی سالگرہ و برسی، فاطمہ بھٹو کا دُکھ ، بلاول کا خراج عقیدت

Spread the love

کراچی (جتن خصوصی رپورٹ) میر مرتضیٰ بھٹو

سابق وزیراعظم محترمہ شہید بے نظیر بھٹو کے بھائی میر مرتضیٰ بھٹو کی 25

ویں برسی کل 20 ستمبر پیر کو منائی جائے گی، جبکہ گزشتہ روز یعنی 18

ستمبر کو میر مرتضیٰ بھٹو کی 67 ویں سالگرہ بھی منائی گئی، قائد عوام سابق

وزیراعظم اور پاکستان پیپلز پارٹی کے بانی شہید ذوالفقار علی بھٹو کے گھر میر

مرتضیٰ بھٹو نے 18 ستمبر 1954ء کو کراچی میں آنکھ کھولی، پاکستان کے

مضبوط ترین سیاسی گھرانے بھٹو فیملی کے اس رکن کے حوالے سے قابل ذکر

بات یہ ہے کہ ان کی پیدائش اور موت ستمبر کے مہینے میں ہوئی تھی، ان کی

سالگرہ اور برسی کی تاریخوں میں صرف دو دنوں کا فرق ہے، 20 ستمبر

1996ء کو انہیں نامعلوم افراد نے اس وقت گولیاں مار کر قتل کر دیا تھا جب ان

کی بہن محترمہ شہید بے نظیر بھٹو اس ملک کی وزیراعظم تھیں۔ میر مرتضی

بھٹو کی بیوہ غنویٰ بھٹو اس وقت سیاست میں فعال ہیں، فاطمہ بھٹو اور ذوالفقار

علی بھٹو جونیئر ان کی اولاد ہیں۔

=-.-= صوبہ سندھ کی مزید خبریں ( == پڑھیں == )

شہید میر مرتضیٰ بھٹو کی 25 ویں برسی کل بروز پیر 20 ستمبر گڑھی خدابخش

بھٹو سمیت ملک بھر میں انتہائی عقیدت و احترام کیساتھ منائی جائے گی۔میر

مرتضی بھٹو 42 سال کی عمر میں 20 ستمبر 1996 کو کراچی میں اپنی بہن

محترمہ بینظیر بھٹو شہید کے دور اقتدار میں اپنے گھر کے قریب پولیس فائرنگ

میں جاں بحق ہو گئے تھے، پیپلزپارٹی شہید بھٹو گروپ کے زیر اہتمام لاڑکانہ

اور صوبہ سندھ سمیت ملک بھر میں کارکن خصوصی تقریبات منعقد کریں گے

جس میں میر مرتضی بھٹو مرحوم کے ایصال ثواب کے لئے قرآن خوانی کی

جائے گی، جبکہ خصوصی دعائیں بھی مانگی جائیں گی۔

=-.-= فوجی ٹربیونل نے انہیں سزائے موت سنائی تھی

وکی پیڈیا کے مطابق میر غلام مرتضی بھٹو ایک پاکستانی سیاستدان تھے، دہشت

گرد تنظیم الذوالفقار کے بانی تھے جو انہوں نے جنرل ضیاء الحق کے دور میں

اپنے والد شہید ذوالفقار علی بھٹو کی سزائے موت کے رد عمل میں بنائی تھی۔

وہ ایک مفرور کے طور پر افغانستان منتقل ہو گئے، جبکہ فوجی ٹربیونل نے ان

کی غیر حاضری میں انہیں سزائے موت کا حکم جاری کیا تھا-

=-،-= سات سال بعد بہن بھائی کی ملاقات

سات سال بعد بہن بھائی کی ملاقات 7 جولائی 1996ء کو وزیراعظم ہاؤس اسلام

آباد میں ہوئی۔ بینظیر والہانہ انداز میں بھائی سے گلے ملیں۔ چھ گھنٹے کی اس

ملاقات میں بیگم نصرت بھٹو بھی موجود تھیں۔ کچھ دیر کے لیے آصف علی

زرداری بھی شریک ہوئے۔ کہا جاتا ہے کہ اس ملاقات سے بچھڑے ہوئے بہن

بھائی سیاسی طور پر بھی قریب آ رہے تھے۔ لیکن اس ملاقات کے دو ماہ بعد 20

ستمبر 1996ء کو مرتضیٰ بھٹو کو ان کی رہائش گاہ ستر کلفٹن کے قریب ان کے

چھ ساتھیوں سمیت مبینہ پولیس مقابلے میں قتل کر دیا گیا۔

=-،-= جیکب آباد میں مرتضیٰ بھٹو کی سالگرہ تقریب

جیکب آباد میں شہید مرتضیٰ بھٹو کی سالگرہ منائی گئی، ضلعی دفتر میں کیک

کاٹا گیا۔ سالگرہ تقریب کوآرڈینیشن کمیٹی کے رکن ندیم قریشی کی صدارت میں

منعقد کی گئی جس میں نور محمد منجھو، عبدالسمیع سومرو، سلیم بروہی، بابل

کوریجو، اکرم تھیم، ریاض لاشاری، حیدری کیہر، عمران ابڑو اور دیگر

کارکنوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی، اس موقع پر رہنماﺅں نے خطاب میں

شہید مرتضی کی جدوجہد پر انہیں خراج تحسین پیش کیا۔ جبکہ کل بروز پیر ان

کی برسی کے موقع پر محفل قرآن خوانی کے انعقاد کا بھی اعلان کیا گیا-

٭….آج بھی آپ کو بہت مِس کرتی ہوں….٭ بیٹی کا جذباتی پیغام

سابق وزیراعظم اور پاکستان پیپلز پارٹی کے بانی چیئرمین ذوالفقار علی بھٹو کے

بیٹے سابق وزیراعظم شہید بینظیربھٹو کے بھائی میر مرتضیٰ بھٹو کی بیٹی

فاطمہ بھٹو نے والد کی سالگرہ پر ایک جذباتی پیغام شیئر کیا جس میں انہوں نے

اپنے والد میر مرتضیٰ بھٹو کے ہمراہ اپنی بچپن کی یادگار تصویر شیئر کرتے

ہوئے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر لکھا کہ میں آج بھی آپ کو بہت مِس

کرتی ہوں۔ آپ کی ہر سال سالگرہ کے موقع پر بلکہ ہر دن میں آپ کو بہت یاد

کرتی ہوں، جتنا یاد کرتی ہوں شاید اسے بتانے کے لیے الفاظ نہ ہوں۔ جبکہ والد

کی برسی پر فاطمہ بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ پچیس برس قبل میرے والد کو ہمارے

گھر کے سامنے قتل کیا گیا۔ ہمیں ان کی عدم موجودگی کا صدمہ اٹھائے 25 سال

گزر گئے اور ساتھ ہی ہمیں یہ دکھ بھی سہنا پڑرہا ہے کہ انہیں اور ان کے ساتھ

قتل ہونے والے ساتھیوں کو انصاف نہیں ملا۔ لیکن اس تمام عرصے میں، میں

جب بھی ان کے بارے میں سوچتی ہوں تو میرے تصور میں ان کا ہنستا مسکراتا

چہرہ ہی آتا ہے۔

=-،-= بلاول بھٹو زر داری کا شہید ماموں کو خراج عقیدت

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے شہید میر مرتضیٰ بھٹو

کے یومِ پیدائش پر اپنے پیغام میں اپنے ماموں کو ان کی 67 ویں سالگرہ پر

شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ شہید میر مرتضیٰ بھٹو نے

پاکستان میں آمریت کو للکارا اور جمہوریت کیلئے جدوجہد کی، قائدِ عوام کے

عدالتی قتل کے بعد شہید میر مرتضیٰ بھٹو نے طویل جلاوطنی کاٹی، شہید میر

مرتضیٰ بھٹو کی عوام دوستی اور جمہور کے حقوق کے لئے سیاسی جدوجہد

مشعلِ راہ ہے۔ پارٹی کارکن و عہدیدار شہید میر مرتضیٰ بھٹو کے ایصالِ ثواب

کے لئے دعا کریں۔

میر مرتضیٰ بھٹو ، میر مرتضیٰ بھٹو

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply