Imran Khan Prim minister Pakistan

مہنگائی مکائومشن، حکومت کا 15 ارب کے ریلیف پیکیج کا اعلان

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وزیراعظم عمران خان نے مہنگائی کے سدباب اور غریبوں کو ریلیف دینے

کیلئے 15 ارب روپے کا پیکج لانے کا اعلان کیا ہے۔ یہ اہم فیصلہ وزیراعظم کے زیر صدارت ہونے

والے معاشی ٹیم کے اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ یوٹیلیٹی سٹور کے ذریعے

کھانے پینے کی چیزوں پر ریلیف دیا جائے گا۔ کھانے پینے کی چیزوں کی قیمتوں کو ضلع کی سطح

پر انتظامیہ کے ذریعے مانیٹر کیا جائے گا۔اس کے علاوہ ذخیرہ اندوزوں کے خلاف بھرپور کارروائی

کی جائے گی۔ 15 ارب روپے کے پیکج میں تمام اہم اشیائے خورونوش شامل ہونگی۔ عام شہریوں کو

یوٹیلیٹی سٹورز سے سستی اشیا ملیں گی۔وزیراعظم عمران خان نے واضح اور دوٹوک موقف اختیار

کرتے ہوئے کہا کہ غریب عوام کی تکالیف پر حکومت خاموش تماشائی نہیں بن سکتی، ریلیف کیلئے

ہر حد تک جائیں گے۔ان خیالات کا اظہار وزیرِاعظم عمران خان نے عوام الناس خصوصاً غریب اور

تنخواہ دار طبقے کو مہنگائی سے ریلیف فراہم کرنے کے حوالے سے اہم اجلاس میں کیا۔اجلاس میں

معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشتر، چئیرمین یوٹیلیٹی سٹورز ذوالفقار علی خان،

وزارتِ خزانہ، صنعت وپیداوار اور سماجی تحفظ ڈویڑن کے وفاقی سیکرٹری صاحبان، ایم ڈی

یوٹیلیٹی سٹور اور دیگر سینئر افسران شریک ہوئے۔اجلاس میں غریب اور تنخواہ دار طبقے کو

مہنگائی سے ریلیف فراہم کرنے اور اشیائے ضروریہ سستے نرخوں پر فراہمی کے حوالے سے

اقدامات پر غور کیا گیا۔عام آدمی کو ریلیف فراہم کرنے کے حوالے سے وزیرِاعظم کی جانب سے لیے

گئے بڑے فیصلوں کا اعلان کل کابینہ کے اجلاس میں کیا جائے گا۔اجلاس سے خطاب میں وزیراعظم

عمران خان نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح پاکستان کی عوام اور خصوصاً غریب اور تنخواہ دار طبقہ

ہے جس کو ریلیف فراہم کرنے کے لئے حکومت ہر حد تک جائے گی۔ وزیراعظم نے گھی، دالیں،

چینی چاول سستے کرنے کا فیصلہ کیا ہے، گھی، دالیں،چینی، چاول اور آٹا 10 سے 25 فیصد سستا

فروخت کیا جائے گا۔ یوٹیلٹی اسٹورز کو اشیائے خور و نوش ذخیرہ کرنے لیے 10 ارب روپے فوی

طور پر جاری ہوں گے۔’ ‘فروری سے جون 2020 تک ہر ماہ یوٹیلٹی اسٹورز کو 2 ارب روپے کی

سبسڈی دی جائے گی اور ملک بھر کے 7 ہزار یوٹیلٹی اسٹورز پر سستی اشیاء دستیاب ہوں گی۔ پیکج

جون تک ہوگا، جولائی میں نیا پیکج آئے گا، چاول، تین سے چار قسم کا آئل اور گھی اور آٹا یوٹیلٹی

اسٹورز پر سستا ملے گا۔وفاقی حکومت نے 2 لاکھ ٹن گندم خریدنے کی ہدایت بھی جاری کردی ہے۔یہ

فیصلہ بھی کیا گیا ہے کہ سستے تندوروں کی تعداد 10 ہزار سے بڑھا کر 50 ہزار تک کی جائے گی،

وفاقی حکومت سستے تندوروں کو ادھار آٹا فراہم کرے گی جبکہ یوٹیلٹی اسٹورز پر 20 کلو آٹے کا

تھیلا 800 روپے میں ملے گا۔وزیراعظم عمران خان نے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اور گورنر سٹیٹ

بینک رضا باقر کو تبدیل کرنے کی خبروں کی سختی سے تردید کرتے ہوئے انھیں کام تیز کرنے کی

ہدایت کر دی ہے۔ذ حکومتی ترجمانوں کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے سب پر واضح کیا

کہ مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اور گورنر سٹیٹ بینک تبدیل نہیں ہو رہے، وہ بہترین کام کر رہے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے تمام شرکا پر واضح کیا کہ مشیر خزانہ اور گورنر سٹیٹ بینک کے حوالے

سے کوئی تبدیلی زیر غور نہیں ہے۔ مہنگائی کے خلاف حکمت عملی تیار کرتے ہوئے انھیں اہم

اقدامات کی ہدایت کرتے ہوئے کام کی رفتار تیز کرنے کا کہہ دیا ہے۔ ترجمانوں کو بتایا کہ چیئرمین

ایف بی آر شدید بیمار ہیں۔ شبر زیدی میری درخواست پر صرف چھ ماہ کیلئے آئے تھے۔ان کا کہنا تھا

کہ گندم اور آٹا بحران کے ذمہ داروں کے خلاف سخت ایکشن لوں گا۔ وزیراعظم نے پارٹی کو منظم

اور متحد رکھنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے دوٹوک موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ جہانگیر

ترین کا حالیہ آٹا بحران میں کوئی کردار نہیں ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ترک صدر

رجب طیب اردوان کے دورہ پاکستان کے حوالے سے اعلیٰ سطح اجلاس ہوا جس میںوزیراعظم عمران

خان نے کہا کہ پاکستان اور ترکی کے برادرانہ تعلقات تاریخی اہمیت کے حامل ہیں، دونوں ممالک

مشکل کی ہر گھڑی میں ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑے رہے ہیں، مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے

اصولی موقف کی واضح حمایت پر ترکی لائق تحسین ہے، دونوں ملکوں کی قیادت ہر شعبے میں

تعلقات کا فروغ چاہتی ہے اور دوطرفہ تعلقات کے فروغ میں ترک صدر کا دورہ اہم سنگ میل ہو گا،

طے پانے والے معاملات پر عملدرآمد پر خصوصی توجہ دی جائے، پاکستان اور ترکی کے درمیان

دوطرفہ معاہدوں پر پیشرفت کو یقینی بنایا جائے۔۔ اجلاس میں ترک صدر کے دورہ پاکستان سے

دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان

اور ترکی کے برادرانہ تعلقات تاریخی اہمیت کے حامل ہیں، دونوں ممالک مشکل کی ہر گھڑی میں

ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑے رہے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے

اصولی موقف کی واضح حمایت پر ترکی لائق تحسین ہے، دونوں ملکوں کی قیادت ہر شعبے میں

تعلقات کا فروغ چاہتی ہے اور دوطرفہ تعلقات کے فروغ میں ترک صدر کا دورہ اہم سنگ میل ہو گا۔

اجلاس میں وزیراعظم نے سیکرٹریز کو ہدایات کی کہ طے پانے والے معاملات پر عملدرآمد پر

خصوصی توجہ دی جائے، پاکستان اور ترکی کے درمیان دوطرفہ معاہدوں پر پیشرفت کو یقینی بنایا

جائے۔ وزیراعظم نے تمام معاہدوں کی رپورٹس کیلئے وزیر برائے اقتصادی امور حماد اظہر کو ذمہ

داری سونپ دی ہے اور طے پانے والے معاہدوں کی میں پیشرفت کیلئے ہر ماہ جائزہ اجلاس منعقد کیا

جائے گا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply