مون سون بارشیں، پنجاب کے کئی شہروں میں نشیبی علاقے زیر آب

Spread the love

مون سون بارشیں

لاہور،گلگت (جے ٹی این آن لائن نیوز) صوبائی دارالحکومت میں موسلا دھار بارش سے جل تھل ہو

گیا ،بارش سے متعددنشیبی علاقے زیر آب آگئے جبکہ کئی مقا ما ت پر شاہرا ہیں پانی میں ڈوب گئیں

جس سے ٹریفک کا نظام درہم رہا ، بارش سے کئی فیڈر ٹرپ کر نے سے متعدد علاقوں میں گھنٹوں

بجلی بند رہی ، گزشتہ رات ہونیوالی شدید بار شوں، سیلابی ریلوں اور لینڈسلائیڈنگ کے باعث شاہراہ

بلاک ہوگئی جبکہ شاہراہ 100 میٹر تک سیلاب میں بہہ گئی ۔ تفصیلات کے مطابق ہفتہ کے روزلاہور

میں وقفے وقفے سے موسلا د ھا ر بارش ہوئی جس سے شہر جل تھل ہو گیا ۔ شدید بارش سے جیل

روڈ، شادمان ،جوہر ٹاؤن، مال روڈ، سمن آباد، گلشن روای،گلبرگ ، گڑھی شاہو، محمد نگر، شاد باغ ،

ٹھنڈی کھوئی سمیت مختلف علاقوں میں نشیبی علاقے زیر آب آ گئے ۔ کئی مقامات پر شاہراہیں بھی

پانی میں ڈوب گئیں جس سے گاڑیاں او رموٹر سائیکلیں بند ہونے سے لمبی قطاریں لگ گئیں، سروسز

ہسپتا ل بھی پانی سے بھر گیا، پارکنگ تالاب کا منظر پیش کرتی رہی، لیسکو کا ترسیلی نظام بھی بری

طرح متاثرہوا ،درجنوں فیڈرز ٹرپ کر گئے جس سے متعدد علاقوں میں گھنٹوں بجلی بند رہی ،تا ہم

بارش سے گرمی اور حبس میں کمی آگئی۔ شہر کے نشیبی علاقوں میں بارش کا پانی نکالنے کیلئے

واسا کی ٹیمیں الرٹ رہیں۔ پنجاب کے دیگر شہروں میں بھی بارش سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے،

فیصل آباد میں بارش کا پانی گھروں میں داخل ہوگیا۔دوسری طرف گلگت بلتستان کے ضلع چلاس میں

لینڈسلائیڈنگ اور سیلابی ریلہ قراقرم روڈ کا 100 فٹ حصہ بہا لے گیا، جس سے شاہراہ ٹریفک کیلئے

بند ہو گئی۔ ڈپٹی کمشنر دیا مر سعد بن اسد کے مطابق روڈ کی بحالی کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کام کا

آغاز کر دیا گیا ہے۔ چلاس میں سیلاب سے روڈ میں گہری کھائی بن گئی، تتا پانی روڈ بحالی کیلئے

ڈیزاسٹر مینجمنٹ، ایف ڈبلیو او اور این ایچ اے کی ہیوی مشینری کام کر رہی ہے۔دوسری طرف

معروف سیاحتی مقام نانگا پربت فیری میڈو روڈ موسلادھار بارش کے باعث بلاک ہوگیا ہے جس کے

باعث فیری میڈو میں سیاحوں کو مشکلات کاسامنا ہے۔محکمہ داخلہ گلگت بلتستان کے مطابق شاہراہ

قراقرم رائیکوٹ پل سیگور نر فارم تک 25 مقامات پر بلاک ہے، جسے جلد از جلد کھولنے کی

کوششیں جاری ہیں تاہم اس میں تین سے چار دن لگ سکتے ہیں لہٰذا مکمل بحالی تک شاہراہ قراقرم

رائیکوٹ پل سیگو ر نرفارم تک ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند رہے گی۔اس کے علاوہ استور کے

متاثرہ علاقوں میں واٹر سپلائی کا نظام اب تک بحال نہیں ہوسکا جبکہ ضلع غذر میں بھی گلیشیئرز

پگھلنے سے ند ی نالو ں اور دریا کے بہاؤ میں اضافہ ہوگیا۔دوسری جانب بلتستان ڈویژن میں

موسلادھار بارشوں سے ندی نالوں میں طغیانی ہے اور برالدو میں نچلے درجے کا سیلاب ہے۔محکمہ

موسمیا ت کے مطابق مون سون کا دوسرا سپیل بھی ملک میں داخل ہوگیا ہے جس کے باعث اگلے چند

روز تک وقفے وقفے سے بارشیں ہو سکتی ہیں۔

مون سون بارشیں

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply