new zara meri bhi suno1

موت پر کمائی، معاشرے کا دوہرا رویہ، اندر کا شیطان اور سالگرہ

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

کراچی (جے ٹی این آن لائن سوشل میڈیا، مانیٹرنگ سیل) موت پر کمائی

اداکارہ و ماڈل نوشین شاہ کا کہنا ہے، کہ ہمارے یہاں فنکاروں کی زندگی میں انہیں کوئی نہیں پوچھتا، لیکن جب وہ مرجاتے ہیں، تو ان کی موت پر مختلف شوز کر کے پیسے کمائے جاتے ہیں۔

فنکارجب زندہ ہوتا ہے تو کوئی پوچھتا تک نہیں، نوشین شاہ

Nohin Shah Pakistani Actress & Model

ٹی وی پروگرام میں سینئر فنکاروں کیساتھ سلوک، کے بارے میں اظہار خیال کرتے ہوئے، جوانسال و خوبرو اداکارہ اور ماڈل نے کھری کھری سناتے ہوئے کہا، کہ جب وہ زندہ ہوتے ہیں تو آپ کہاں ہوتے ہیں، اس وقت ان کی کوئی مدد کیوں نہیں کرتا۔ نوشین شاہ نے قندیل بلوچ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ قندیل بلوچ جب زندہ تھی، تو کیوں گالیاں دیں، آپ نے جب وہ مرگئی تو آپ نے اس پر ڈراما بنا دیا، مجھے معاشرے کا یہ دوہرا معیار سمجھ نہیں آتا، یہ بہت ہی افسوسناک رویہ ہے۔ ہمیں اپنی اصلاح کرنا ہوگی-

سینئر فنکاروں کی نوبت بھیک مانگنے تک آجاتی ہے، اداکارہ و ماڈل

نوشین شاہ نے پاکستانی، اور بیرون ممالک کی فلم انڈسٹریز میں موازنہ کرتے ہوئے کہا، کہ باہر کے ممالک میں ایسا نہیں ہوتا، اور شاید ایسا اس لیے ہے کہ وہاں فنکاروں کو معاوضہ بہت زیادہ ملتا ہے، تو انہیں بھیک مانگنے کی ضرورت نہیں ہوتی، لیکن ہمارے یہاں سینئر فنکاروں کی یہ حالت ہوجاتی ہے، کہ نوبت بھیک مانگنے تک آجاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : نامور کامیڈین ببو برال کو بچھڑے ہوئے 9 سال

ماڈل صدف کنول کو سوشل میڈیا پر تنقید کا نشانہ بنائے جانے پر، اداکارہ زارا نور عباس نے اپنی دوست کی حمایت میں، سوشل میڈیا صارفین کو اندرکا شیطان بند کرنے کا پیغام دیدیا۔ ہوا کچھ یوں کہ شہروز نے اپنی والدہ سفینہ بہروز کو سالگرہ کی مبارکباد دی، جس پرتبصرہ کرتے ہوئے صدف کنول نے گلاب کے ایموجی کیساتھ لکھا، “ ہیپی برتھ ڈے ماما ”۔ اگرچہ بعد ازاں صدف نے اپنا کمنٹ ڈیلیٹ کردیا، لیکن بہت سے سوشل میڈیا صارفین اس کا سکرین شاٹ محفوظ کر چکے تھے۔

لگتا ہے یہ اس ماہ کی سب سے بڑی خبر ہے، زارا نور عباس

Zara Noor Abbassi Pakistani Actress

تنقید پرصدف اور شہروز نے تو خاموشی اختیارکی، لیکن زارا نور عباس نے ناراضگی کا اظہار کیا اور ناقدین کو جواب دیا۔ زارا نے اپنی ٹویٹ میں لکھا“، کسی نے کسی کی والدہ کو “ماما” کہا اور یہ قومی خبر بن گئی۔ حیرت ہے کہ ہم سب قرنطینہ میں بند ہیں، لیکن ہمارے اندر کے شیطان بند نہیں ہوئے۔ اگر آپ کو ایسا لگتا ہے کہ یہ اس ماہ کی سب سے بڑی خبر ہے، تو آپ نے اپنی زندگی کے 3 ہفتے ضائع کر دیے-

شہروز سبزواری اور صدف کنول کے درمیان دوستی

”شہروز سبزواری اور صدف کنول کے درمیان دوستی، گزشتہ سال اوسلو میں ہونیوالے تیسرے آئی پی پی اے، (ایپا) ایوارڈ کی ریہرسلز کے دوران ہوئی، دونوں نے ایک ساتھ ڈانس پرفارمنس دی تھی۔ اسی تقریب میں زارا بھی شریک تھیں، اور اوسلو میں قیام کے دوران ان سب کی دوستانہ تصاویر بھی سامنے آئی تھیں۔ سال 2012ء میں پسند کی شادی کرنیوالے شہروز اور سائرہ کے درمیان گزشتہ ماہ علیحدگی ہوگئی تھی۔ دونوں نے سوشل میڈیا پر طلاق کی تصدیق، میڈیا اور عوام سے درخواست کی تھی، کہ ان کی پرائیویسی کا احترام کیا جائے۔

سائرہ اور شہروز میں طلاق کی وجہ صدف کنول، حقیقت یا قیاس آرائی؟

سائرہ اور شہروز کی ایک بیٹی نورے ہے، جس کی پیدائش 2014ء میں ہوئی۔ اس جوڑے کی طلاق کے حوالے سے صدف کنول، کا نام خبروں کی زد میں رہا، سوشل میڈیا پر قیاس آرائیاں کی جاتی رہیں، کہ دونوں کے درمیان اختلافات کی وجہ شہروز اور صدف کے درمیان گہری دوستی بنی۔

قارئین: خبر اچھی لگے تو شیئر ضرور کریں، اپ ڈیٹس کیلئے فالو کریں

موت پر کمائی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply