منی لانڈرنگ سکینڈل،ایف آئی اے نے انور مجید اور عبدالغنی مجید کو ضمانت دینے کی مخالفت کردی

Spread the love

میگا منی لانڈرنگ سکینڈل میں ایف آئی اے نے انور مجید اور عبدالغنی مجید کو ضمانت دینے کی مخالفت کر تے ہوئے کہا ہے کہ کیس اسلام آباد منتقل ہونے پر غور ہو رہا ہے، ضمانت نہ دی جائے،بینکنگ کورٹ کے جج نے کہا عدالت کو مطمئن کیا جائے ضمانت کیوں نہیں سنی جا سکتی، سپریم کورٹ نے بینکنگ کورٹ سے متعلق حکم جاری نہیں کیا، سپریم کورٹ کے فیصلے میں ذکر نہ کرنے پر عدالت کیا کر سکتی ہے؟،نیب کے تفتیشی افسر نے عبدالغنی مجید کی حراست سے متعلق درخواست دیدی۔ تفتیشی افسر نے کہا کہ مجید سے تفتیش مطلوب ہے، حراست کی اجازت دی جائے۔ منی لانڈرنگ سکینڈل کے سلسلے میں تفتیش چاہتے ہیں۔عدالت نے عبدالغنی مجید سے تفتیش سے متعلق درخواست پر ملزم کے وکلا کو نوٹس جاری کردیا۔تفصیلات کے مطابق کراچی کی بیکنگ کورٹ میں میگا منی لانڈرنگ سکینڈل سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ سماعت کے دوران کیس کے ملزم انور مجید اور عبدالغنی مجید کی درخواست ضمانت زیر غور آئی۔وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے )کے پراسیکیوٹر نے ملزمان کو ضمانت دینے کی مخالفت کردی۔ ایف آئی اے کے وکیل نے کہاکہ کیس اسلام آباد منتقل ہونے پر غور ہو رہا ہے، ضمانت نہ دی جائے۔وکیل کے مطابق سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں کیس نیب میں چلایا جانا ہے، کیس ایک صوبے سے دوسرے صوبے میں منتقل ہو رہا ہے۔ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم(جے آئی ٹی )کی بنیاد پر ہی یہ کیس ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد عدالت کو ضمانت دینے کا اختیار نہیں۔جج نے کہا کہ عدالت کو مطمئن کیا جائے ضمانت کیوں نہیں سنی جا سکتی جس پر ایف آئی اے کے وکیل نے کہا کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ واضح ہے۔انور مجید اور عبدالغنی مجید کی درخواست ضمانت پر مزید سماعت 14 فروری تک ملتوی کردی گئی۔

Leave a Reply