مجھے رول دینے کے بدلے جنسی ہراساں کیا گیا، ملہار راتھوڑ

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

ممبئی (جتن آن شوبز رپورٹر)

بھارتی اداکارہ و ماڈل ملہار راتھوڑ نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں رول دینے کے بدلے میں بے لباس ہونے کو کہا گیا تھا۔ بھارتی ویب سائٹ ہندوستان ٹائمز کے مطابق 26 سالہ ادکارہ ملہار راتھوڑ نے بالی ووڈ کی حقیقت بیان کرتے ہوئے بتایا کہ کیرئیر کے ابتدا میں ان کو ’کاسٹنگ کاؤچ‘ کا سامنا کرنا پڑا تھا- جس کا مطلب کسی با اثر شخصیت کی جانب سے زیر تربیت ملازم کو جنسی ہراساں کرنا ہے، مگر اب وہ ایک نامور اداکارہ بن چکی ہیں، اور کئی بین الاقوامی برانڈز کے اشتہارات کا بھی حصہ ہیں- مزید پڑھیں

ملہار راتھوڑ نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ جب وہ نوجوان تھیں اورشوبز انڈسٹری میں اپنا کیریئر بنانے کی غرض سے پہلی بار ڈائریکٹرز اور پروڈیوسرز کا سامنا کیا تو ایک 65 سالہ پروڈیوسر نے انہیں فلم میں رول دینے کے بدلے بے لباس ہونے کو کہا جس پر وہ اتنی خوفزدہ ہو گئیں تھیں- انکا کہنا تھا انہیں ایک منٹ تک تو سمجھ ہی نہیں آیا کہ اب کیا کریں۔ ملہار نے مزید کہا اگر آپ کی شوبز میں جان پہچان نہ ہو تو اس انڈسٹری میں کیرئیر بنانا بہت مشکل بات ہے- آپ کو چھوٹے چھوٹے رول ادا کرکے ہی آگے آنا پڑتا ہے۔ ملہار راتھوڑ نے مزید کہا کہ انہوں نے اپنا مستقبل بنانے کیلئے ہر قسم کی نوکری کر رکھی ہے، وہ کال سینٹر میں جاب سے لے کر گفٹنگ کارپوریٹ اور مارکٹنگ میں بھی کام کر چکی ہیں، پھر وہ ممبئی آ گئیں اور 2018ء میں ایک ٹی وی شو سمیت 2 فلموں میں بھی کام کیا۔ ملہار نے کہا کہ اداکاری ان کا خواب تھا، اور وہ بہت خوش قسمت ہیں کہ انہوں نے اپنا خواب پورا کر لیا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply