ملک بھر میں چھتیں، دیواریں آسمانی بجلی گرنے سے 37افراد جاں بحق،آج پھر بارش کی پیش گوئی

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

ملک بھر میں شدید بارش

لاہور( جے ٹی این آن لائن نیوز )ملک بھر میں شدید بارشوں نے ہر چیز ڈبو دی،

گلیاں اور سڑکیں ندی نالوں میں بدل گئیں۔ چھتیں، دیواریں اور آسمانی بجلی گرنے

سے 32افراد جاں بحق اور کئی زخمی ہو گئے۔ لاہور سمیت پنجاب کے متعد

اضلاع میں بھی شدید بارش،کراچی میں موسلا دھار بارش کے بعد پانی کے ریلوں

نے شہر کا حلیہ بدل دیا، پانی کا بہاؤ اپنے ساتھ کنٹینر،کار، بسیں سب کھلونوں کی

طرح بہا لے گیا، مختلف حادثات میں 25 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔کراچی کے

علاقے جوہر موڑ کے قریب آسمانی بجلی گرنے سے رہائشی اپارٹمنٹ کی دیوار

منہدم ہو گئی جس کے نتیجے میں بچوں اور خواتین سمیت 7 افراد جاں بحق ہو

گئے۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ دیوار کے ملبے تلے مزید افراد دبے ہوئے ہیں،

پولیس، کنٹونمنٹ بورڈ اور ریسکیو ادارے ملبہ ہٹانے کا کام کر رہے ہیں۔قصور

کے نواحی علاقے کوٹ رادھا کشن میںبارش کی وجہ سے مکان کی چھت گر گئی

میاں بیوی سمیت پانچ افراد جاں بحق ایک زخمی ۔ کوٹ رادھاکشن کے علاقہ

یوسف سٹی میں بارش کی باعث مکان کی چھت گر گی جس کے باعث 45سالہ

گلشاد۔35سالہ شگفتہ بی بی ۔آٹھ سالہ مریم بی بی ۔پانچ سالہ آمنہ بی بی ۔دو سالہ علی

حیدر ملبے تلے آکر شدید زخمی ہوگیے زخمیوں کو فوری طورپر ہسپتال ریفر کیا

گیا مگر وہ راستہ میںہی دم توڑ گیے جبکہ چھ سالہ فاطمہ بی بی شدید زخمی ہوگی

کراچی پولیس چیف غلام نبی میمن کے مطابق آج کراچی میں دیواریں گرنے کے

مختلف واقعات میں 15 افرادجاں بحق ہوئے ہیں جب کہ پانی میں ڈوب کر 4افراد

اور چھت گرنے کے حادثات میں 2افراد جاں بحق ہوئے ہیں، اس کے علاوہ کرنٹ

لگنے اور موٹر سائیکل حاد ثے میں ایک ایک شخص جاں بحق ہوا ہے چترال میں

سیلاب متعدد گھروں کو بہا کر لے گیا۔سرگودھا میں نشیبی علاقے ڈوب گئے۔

گلیوں اور بازاروں میں کئی فٹ پانی جمع ہو گیا۔ کرنٹ لگنے اور چھت گرنے سے

دو افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔پنڈدادن خان میں دیوار گرنے سے دو

بچے زندگی کی بازی ہار گئے۔ حافظ آباد میں آسمانی بجلی نے بچے سمیت تین

افراد کی جان لے لی جبکہ دو زخمی بھی ہوئے۔ فیصل آباد، منڈی بہائو الدین،

بچوں کیلئے میٹھا زہر، نوجوانوں کو اندر سے کھوکھلا کرنیوالے مشروبات

ظفر وال اور چشتیاں میں بھی جل تھل ہو گیا۔اپر چترال میں سیلابی ریلے میں پل

بہہ گیا۔ وادی کیلاش کے گاؤں رمبور میں سیلاب کی زد میں آ کر چار مکان تباہ ہو

گئے۔ ریشن گول نالہ میں پانچ گھر ریلے میں بہہ گئے۔ بیس سے زائد گھروں کو

شدید نقصان پہنچا۔ڈیرہ بگٹی میں چھت گرنے سے بچہ زخمی ہو گیا۔ چٹ ڈیم میں

دراڑ پڑ گئی۔ ندی کا بند ٹوٹنے سے فصلوں کو نقصان پہنچا۔ سیہون میں سعید آباد

ٹاؤن کمیٹی آفس ڈوب گیا۔میرپور خاص میں بھی بارش کے باعث گلی اور محلوں

میں پانی کھڑا ہے۔ پنگریو کے قریب ایل بی او ڈی سیم نالے میں شگاف پڑ گیا۔

پاک فوج نے امدادی کارروائیوں میں حصہ لیا۔ادھر چناب میں پانی کی سطح بلند

ہونے لگی ہے۔ ہیڈ مرالہ میں پانی کی آمد 2لاکھ 12ہزار کیوسک تک پہنچ گئی ہے۔

اسلام آباد میں سملی ڈیم اور راول ڈیم کی سطح بلند ہونے پر سپل ویز کھولنے پڑ

گئے۔سواں دریا میں پانی کی سطح میں خطرناک حد تک اضافے کے بعد ضلعی

انتظامیہ کو الرٹ کر دیا گیا ہے۔ میرپور آزاد کشمیر میں ندی نالے بپھر گئے۔ منگلا

ڈیم میں پانی کی سطح بڑھ گئی۔ مظفر آباد میں دریائے نیلم میں سیاح پھنس گئے،

مقامی افراد نے ریسکیو کیا۔بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بھی بارشوں کاسلسلہ

جاری ہے۔ بارشوں سے خضدار، قلات اور ڈیرہ بگٹی میں ایک خاتون اور بچے

سمیت 4 افراد جاں بحق جبکہ 5 زخمی ہوئے۔پی ڈی ایم اے کے مطابق بارشوں

سے 31 گھروں اور 4 سڑکوں اور ایک پل کو نقصان پہنچا ہے۔

ملک بھر میں شدید بارش

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply