ملا منصور کی پاکستان میں کوئی جائیداد نہی تھی،افغان طالبان

Spread the love

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک) افغان طالبان نے ملا اختر منصور کی جانب سے پاکستان

میں زمین کی خریدو فروخت کے حوالے سے میڈیا پر نشر رپورٹ کی تردید

کرتے ہوئے کہاہے کہ تجارت ایک جائز عمل ہے تاہم ملا منصور کے پاس ایسی

تجارت کیلئے وقت تھا اور نہ ہی انہوںنے اس نوعیت کا کاروبار کیا ۔ ہفتہ کو افغان

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کی جانب سے جاری بیان میں کہاگیاکہ پاکستان

کے وفاقی تحقیقاتی ادارے کے حوالے سے میڈیا میں رپورٹیں شائع ہوئیں کہ ملا

اختر محمد منصور پاکستان میں زمین کی خرید وفروخت کی تجارت میں مصروف

تھے باوجود کہ مدعی کے نام کسی اور کے ہیںاور جس تجارت کا حوالہ دیا گیا ہے

وہ ایک جائز عمل ہے، مگر ملامنصور کے پاس ایسی تجارت کیلئے وقت تھا اور

نہ ہی اسی نوعیت کا کاروبار تھا۔انہوںنے کہاکہ ہم نہیں جانتے کہ اس طرح پورٹیں

پھیلانے کا مقصد کیا ہوگا۔

Leave a Reply