ہائی پروفائل مقدمات کی سماعت لائیو دکھائی جائے, وفاقی وزراء کا چیف جسٹس سے مطالبہ

Spread the love

مقدمات کی سماعت لائیو

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات چوہدری فوادحسین نے کہا ہے کہ

افغانستان میں پائیدار امن کیلئے عالمی برادری نے پا کستا ن کی کاوشوں کو سراہا ہے، پاکستان

افغانستان میں مستقل اور پائیدار امن چاہتا ہے، وزیراعظم عمران خان نے واضح کیا ہے کہ امریکہ

کیساتھ صرف امن کے شراکت دار ہونگے ، آزاد کشمیر کے الیکشن میں تحریک انصاف کی پوزیشن

مستحکم ہے،اور ہر حلقے سے تحریک انصاف کے امیدوار میدان میں ہیں،تحریک انصاف کے علاوہ

کوئی دوسری جماعت سارے حلقوں سے امیدوار کھڑے ہی نہیں کر سکی ہے، پیپلز پارٹی نے صرف

چند حلقوں سے امیدوار کھڑے کئے ہیں، اسلئے بلاول بھٹو اپنی آدھی مہم کو چھوڑ کر فرار ہو گئے

ہیں جبکہ دوسری طر ف مریم نواز بھی مہم کر رہی ہیں لیکن ان کے پاس بھی کوئی پالیسی نہیں اور

نہ ہی انہیں تاریخ کا علم ہے، وہ مہم ادھوری چھوڑ کرجلد جائینگی، ان کو پاکستان اور ہندوستان کے

تعلقات میں کروٹیں بدلنے کا علم بھی نہیں ، پاکستان کی کشمیریوں کیلئے قربانیوں کے بارے میں بھی

معلوم نہیں ۔ چیف جسٹس سے درخواست ہے کہ اپوزیشن ہائی پروفائل کیسز خاص طور پر شر یف

فیملی کے کیسوں کو براہ روست دکھایا جائے ۔پیر کو یہاں وفاقی وزیر حماد اظہر اور مشیر داخلہ و

احتساب شہزاد اکبرکے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر اطلاعات نے کہا مریم نواز کشمیرکی

تاریخ سے بھی لاعلم ہیں وہ جو انتخابی مہم چلارہی ہیں ان کو پالیسی کا علم نہیں، دھاندلی کی باتیں

اس لئے کررہے ہیں کیونکہ ان کی سیاسی پوزیشن نہ ہونے کے برابر ہے۔ ار بو ں روپے پاکستان

سے چوری کرکے باہر لے جایا گیا،جائیدادیں خریدی گئیں ،شہبازشریف کو اپنے اوپر لگے الزامات کا

جواب میڈیا کے سامنے دینا چاہیے اربوں روپے انکے اکاؤنٹ سے نکل رہے ہیں ، یہ کہتے ہیں ہم نے

خدمت کی۔ اربوں روپے کی پراپرٹی اسوقت میں لندن میں ہے جن کا ہمیں علم ہے، ہمیں نہیں پتہ ان

کی دنیا میں اور کہاں کہاں جا ئیدا دیں ہیں؟ معاون خصوصی احتساب بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا بہتر

ہوگا شہباز شریف لندن بھاگنے کی کوشش نہ کریں، وہ جتنی مرضی انگلی لہرا لیں، ہم انھیں بھاگنے

نہیں دینگے ۔اپوز یشن لیڈر کے بیان کے ردعمل میں شہزاد اکبر کا کہنا تھا انھیں جب سے لندن نہیں

جانے دیا گیا، تب سے ان کی صحت خراب ہے۔ انھیں سوالوں کا جواب دینے کیلئے طلب کیا تھا لیکن

لیگی رہنما نے چٹکلا چھوڑا کہ انھیں ایف آئی اے نے ہراساں کیا۔ ماضی میں سیف الرحمان جیسے

لوگوں کو استعمال کیا جاتا تھا۔ یہ لوگ جب مایوس ہوں تو اداروں پر حملے شروع کر دیتے ہیں۔ حمزہ

شہباز سے ٹرانزیکشن اور منی لانڈرنگ سے متعلقہ سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا رضوان صاحب!

پہلے بھی کہا تھا وقت ایک جیسا نہیں رہتا۔ لیکن ایف آئی اے کے افسر نے پھر بھی اس دھمکی کے

باوجود درگزر کیا۔ یہ دھمکیاں ان کو وراثت میں ملی ہیں۔ یہ ویڈیو بنا کر ججوں کو بلیک میل کرتے

رہے۔ میں فواد چودھری کی تجویز سے اتفاق کرتا ہوں، ان کے کیسز کو لائیو دکھانا چاہیے۔ بڑے

کیسز کا فیصلہ جلد ہونا چاہیے کیونکہ لوگوں کا نظام انصاف پر اعتماد ہونا ضروری ہے۔وفاقی وزیر

اطلاعات فواد چودھری کا کہنا تھا اندر جو یہ باتیں کرتے ہیں لوگوں کو لائیو پتا چلنا چاہیں۔ ہم چیف

جسٹس صاحب سے اپیل کرتے ہیں کہ ہائی پرفائل کیسز کو لائیو چلانے کی اجازت دیں۔ برطانیہ کی

سپریم کورٹ میں کیسز لائیو دکھائے جاتے ہیں۔ پی ٹی آئی حکومت کی پوزیشن مستحکم ہے ،پی ٹی

آئی واحد جماعت ہے جس کے آزادکشمیر کے تمام حلقوں میں امیدوارہیں بلاول بھٹو میدان چھوڑ کر

بھاگ گئے کیونکہ ان کے امیدوار ہی نہیں آزاد کشمیر میں پیپلزپارٹی کے صرف8امیدوار ہیں۔

افغانستان کی صورتحال پر ان کا کہنا تھا کہ کوشش کررہے ہیں کہ افغانستان میں امن قائم ہو افغان

معاملے پر پاکستان کی کوشش دنیا سراہ رہی ہے ،ہم امن کیلئے شراکت دار ہیں تنازع میں نہیں، قومی

سلامتی کمیٹی میں تمام جماعتوں نے موقف کی حمایت کی۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے

جو تقریر اقوام متحدہ میں کی تھی، اس میں کشمیر کے حوالے سے موقف کی نوعیت کیا تھی اور اور

اسٹرٹیجک گہرائی کیا تھی، ان تمام باتوں کا کوئی علم ہے، مریم نواز آزاد کشمیر میں اپنی جن باتوں

کا پرچار کر رہی ہے ان کا نہ سر ہے نہ پیر ہے اور ابھی سے مسلم لیگ نون دھاندلی کا واویلا مچانا

شروع ہو گئی ہے کیونکہ انہیں معلوم ہے کہ کشمیر کے الیکشن میں ان کی پوزیشن نہ ہونے کے

برابر ہے اور جلد مریم نواز بھی انتخابی مہم سے راہ فرار اختیارکریں گی۔ وفاقی وزیر اطلاعات و

نشریات نے کہا کہ صدر مسلم لیگ نون شہباز شریف نے گیس اور بجلی کے اوپر لمبی چوڑی پریس

کانفرنس کی اور ہمیں امید تھی کہ وہ اپنے اوپر کیس کے حوالے سے روشنی ڈالیں گے اور ہمیں بھی

پتہ چلے گا کہ 25ارب روپے کی رقم اور دوسرے کیسز ان میں ان کا جواب کیا ہے کیونکہ ان سے

پوچھا جاتا ہے کہ پیسے کیسے بنائے تو کہتے ہیں کہ میں نے پنجاب میں میٹرو بنائی، ان سے پوچھا

جائے کہ بچوں نے پیسے کیسے بنائے اور باہر کیسے گئے تو کہتے ہیں انہوں نے پانی کے

پروجیکٹ لائے ہیں، شہباز شریف سے پوچھا جائے کہ ان کے اکاؤنٹس سے اربوں روپے نکل رہے

ہیں تو کہتے ہیں انہوں نے پنجاب کی خدمت کی ہے تو سمجھ یہ نہیں آتا کہ جو پیسہ سندھ میں پیپلز

پارٹی کو دیا گیا وہ سندھ کی عوام کیلئے تھا اور شہباز شریف کو پنجاب کی حکومت عوام کیلئے پیسہ

دیا گیا لیکن یہ پیسہ لندن سے کیوں برآمدہوتا ہے۔فواد چوہدری نے کہا کہ شہباز شریف کو چاہیے کہ

وہ میڈیا کے سامنے آئیں اور اپنا سارا کچھا چٹھا کھولیں۔ مشیر داخلہ و احتساب شہزاد اکبر نے کہا کہ

شہباز شریف نے بے نامی اکاؤنٹس سے 25ارب روپے کی ٹرانزیکشن کرائی اور ان کے بڑے بھائی

نواز شریف سزا یافتہ مجرم قرار دیئے جا چکے ہیں اور اب شہباز شریف سے ایف آئی اے سوال

پوچھتا ہے تو انہیں ناگوار گزرتا ہے۔۔ اس موقع پر وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے اپنے خیالات کا

اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں بجلی کی اوسط کھپت 16ہزار میگاواٹ ہے اور بجلی کی

حالیہ ترسیل میں گزشتہ سال کی نسبت نمایاں اضافہ ہوا ہے جبکہ گزشتہ ہفتے شب و روز محنت کے

بعد ساڑھے 24ہزار میگاواٹ بجلی سسٹم میں شامل کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کی

وجہ پیداوار میں کمی نہیں بلکہ ترسیلی نظام میں کمزوری ہے اور ترسیلی نظام میں کمزوریوں پر قابو

پانے کیلئے کوشاں ہیں۔ نون لیگ کے دور کے مہنگے منصوبوں کے باعث گردشی قرضے بھی قومی

خزانے پر بڑا بوجھ ہیں جبکہ حکومت آر ایل این جی کے سستے معاہدے کئے ہیں۔

مقدمات کی سماعت لائیو

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply