Kashmir Curfio

مقبوضہ کشمیر میں کرونا وائرس پھیلنے پر پاکستان کا اظہا رتشویش،لاک ڈائون ختم ،ضروری سپلائی بحال کرنے کا مطالبہ

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں کرونا وائرس پر سخت تشویش کا اظہار

کرتے ہوئے کہاہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں لاک ڈائون ختم کرے ، وادی میں ضروری سپلائی

یقینی بنائی جائے ،کرونا وائرس کے باعث وزارت خارجہ میں خصوصی سیل قائم کردیا ہے جو دنیا

بھر میں پاکستانی سفارتخانوں سے رابطے میں ہے،دنیا بھر میں پاکستانی سفارتخانوں نے اپنی

کمیونٹی کی رہنمائی کے لئے فوکل پرسنز مقرر کردئے ہیں،صدر مملکت کے دورہ چین کے دور ان

دو معاہدوں پر دستخط کیے گئے۔ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے

کہاکہ بھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر میں ریاستی مظالم جاری ہے،مقبوضہ کشمیر میں کورونا

کی وجہ سے سخت تشویش ہے،بھارت پر زور دیتے ہیں کہ کورونا پھیلاؤ کی وجہ سے مقبوضہ

کشمیر میں لاک ڈائون ختم کرے،بھارت مقبوضہ کشمیر میں ضروری سپلائی یقینی بنائے۔ انہوںنے

کہاکہ صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی نے چین کا پہلا دورہ کیا،صدر نے چینی ہم منصب سے

مذاکرات کئے،دونوں ممالک کے درمیان تزویراتی تعلقات کو مضبوط بنانے پر اتفاق ہوا،وزارت

خارجہ نے کورونا پھیلاو روکنے کیلئے اہم اقدامات کئے ہیں،واک ان قونصلر سروسز وزارت خارجہ

نے بند کردی ہیں،وزارت خارجہ میں خصوصی سیل قائم کردیا گیا ہے جو دنیا بھر میں پاکستانی

سفارتخانوں سے رابطے میں ہے،دفتر خارجہ میں چوبیس گھنٹے کی ہیلپ لائن بھی قائم کردی گئی

ہے،دنیا بھر میں پاکستانی سفارتخانوں نے اپنی کمیونٹی کی رہنمائی کے لئے فوکل پرسنز مقرر

کردئے ہیں،شہریوں کی بہتری کیلئے ہر ضروری اقدامات کئے گئے ہیں، تمام شہریوں سے کہا گیا

ہے کہ حفاظتی اقدامات پر عمل کریں ۔ انہوںنے کہا کہ میڈیا کا اس چیلنج میں بہت اہم کردار ہے۔

ترجمان نے کہاکہ کوروناپرقابوپانے کیلئے وفاق اورصوبائی سطح پر متعدداقدامات کیے جارہے

ہیں،دونوں ملکوں کی قیادت نے باہمی اسٹریٹجک تعلقات کو مزید مستحکم بنانے پر اتفاق کیا ہے ۔

انہوںنے کہاکہ بھارتی حکومت مقبوضہ وادی میں کورونا وائرس کے حوالے سے تفصیلات فراہم

کرے۔انہوں نے اوورسیز پاکستانیوں کو غیر ضروری سفر نہ کرنے کی تجویز دی اور اپنی حفاظت

کے تحت سماجی دوری اپنانے کو کہا گیا ہے۔

Leave a Reply