مقبوضہ کشمیر، عیدالاضحیٰ پر جانور کی قربانی پر پابندی، مزید 2 نوجوان شہید

مقبوضہ کشمیر، عیدالاضحیٰ پر جانور کی قربانی پر پابندی، مزید 2 نوجوان شہید

Spread the love

سرینگر(جے ٹی این آن لائن کشمیر نیوز) مقبوضہ کشمیر عیدالاضحیٰ پابندی

بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں عیدالاضحی کے موقع پر

جانوروں کی قربانی پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ حکام نے جانوروں کے بہبود

کے قوانین کا حوالہ دیتے ہوئے گائے، بچھڑے، اونٹ اور دیگر جانوروں کو ذبح

کرنے یا قربانی سے روکنے کا حکم جاری کیا ہے، جبکہ بھارتی فوج نے ریاستی

دہشت گردی کی تازہ کارروائی میں سرینگرمیں مزید دو کشمیری نوجوانوں کو

شہید کر دیا ہے-

=-.-= آزاد و مقبوضہ کشمیر سے متعلق مزید خبریں ( == پڑھیں ==)

تفصیلات کے مطابق بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں عید

الاضحی کے موقع پر جانوروں کی قربانی پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ حکام

نے جانوروں کے بہبود کے قوانین کا حوالہ دیتے ہوئے گائے، بچھڑے، اونٹ اور

دیگر جانوروں کو ذبح کرنے یا قربانی سے روکنے کا حکم جاری کیا ہے، دوسری

طرف بھارت کے غیرقانونی زیرقبضہ جموں و کشمیرمیں بھارتی فوج نے سری

نگر میں ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی میں دو کشمیری نوجوانوں کو

شہید کر دیا، شہید نوجوانوں کی شاخت بلال احمد اورعرفان کے نام سے ہوئی ہے،

انہیں ایک گھرکے اندر شہید کیا گیا جس کو بھارتی فوج اور پیراملٹری فورسز نے

محاصرے اورتلاشی کی کارروائی کے دوران شہر کے دنمارعید گاہ کے علاقے

میں کیمیائی بارود سے تباہ کر دیا تھا۔ حکام نے کئی علاقوں میں انٹرنیٹ سروس

کو معطل بھی کر دیا ہے جبکہ آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں کارروائی

جاری تھی۔

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

یاد رہے ہندو اکثریتی ملک بھارت میں گائے کو مقدس تصور کیا جاتا ہے لیکن یہ

واضح نہیں حکومت نے جانوروں کی قربانی پر تقریباََ مکمل پابندی کا اعلان کیوں

کیا ہے۔ دنیا بھر میں مسلمان سنت ابراہیمی کی پیروی کرتے ہوئے اسلامی مہینے

ذی الحج کی 10 سے 12 تاریخوں کے درمیان جانوروں کی قربانی کرتے ہیں۔ اس

مرتبہ کشمیر میں بھارتی حکام کے اس فیصلے کے نتیجے میں بھارت مخالف

جذبات مزید بھڑکنے کا خدشہ ہے۔

مقبوضہ کشمیر عیدالاضحیٰ پابندی ، مقبوضہ کشمیر عیدالاضحیٰ پابندی

Leave a Reply