مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے ہاتھوں مزید 3 نوجوان شہید، نماز جنازہ آج

Spread the love

سرینگر(جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں

نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران جنوبی کشمیر کے

ضلع شوپیاں میں تین اورکشمیری نوجوانوں لطیف احمد ڈار، طارق مولوی اور

شارق احمد نگرو کو علاقہ ادکھارا میں تلاشی اور محاصرے کی ایک پرتشدد

کارروائی کے دوران شہید کیا۔ جن کی آج نماز جنازہ ادا کی جائے گی اس موقع پر

مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال کی کال دی گئی ہے ،قبل ازیں اسی علاقے میں

بھارتی فوج کا ایک اہلکار ایک حملے میں زخمی ہو گیا تھا۔ نوجوانوں کی شہادت

پر علاقے میں زبردست بھارت مخالف مظاہرے کئے گئے۔ بھارتی فوجیوں اور

پولیس اہلکاروں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے گولیوں، پیلٹ گنز اورآنسو

گیس کا وحشیانہ استعمال کیا جس سے 20 سے زائد افراد زخمی ہو گئے ۔ تین

زخمیوں کو خصوصی علاج معالجے کیلئے سرینگر کے ہسپتال بھجوادیاگیا۔

شوپیاں میں نوجوانوں کے قتل کے بعد لال چوک، ریشی بازاراور اسلام آباد کے

اولڈ ٹائون کے علاقوں سے بھی مظاہروں اور جھڑپوں کی اطلاعات ملیں۔ قابض

انتظامیہ نے ضلع میں سخت پابندیاں نافذ کر دیں اور پورے جنوبی کشمیرمیں

انٹرنیٹ سروس معطل کر دی ۔ انتظامیہ نے سرینگر سے بانیہال تک ٹرین سروس

بھی معطل کر دی ۔ادھر آزادی صحافت کے عالمی دن کے موقع پر کشمیر میڈیا

سروس کی طرف سے جاری کی گئی ایک رپورٹ میں انکشاف کیاگیا ہے کہ

1989ء سے اب تک کشمیریوں کی جاری جدوجہد آزادی کے دوران اپنے پیشہ

وارانہ فرائض کی ادائیگی میں 18 صحافیوں کوقتل کیا جاچکا ہے۔

Leave a Reply