169

مریم نواز ،عبد العزیز عباس کی نیب میں پیشی،سوالنامہ حوالے،8اگست کو دوبارہ طلب

Spread the love

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی نائب صدر مریم نواز

اور ان کے کزن عبد العزیز عباس چودھری شوگرمل مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں

نیب لاہور کے دفتر میں پیش ہوئے ،نیب نے مریم نواز کو سوالنامہ دے کر 8اگست

کو دوبارہ طلب کر لیا،عبد العزیز عباس نے بھی ایک گھنٹہ تک نیب افسران کے

سوالات کے جوابات دئیے ۔ تفصیلات کے مطابق مریم نواز اپنے خاوند کیپٹن (ر)

محمد صفدر کے ہمراہ جاتی امراء رائے ونڈ سے نیب لاہور کے ہیڈ کوارٹر ٹھوکر

نیاز بیگ پہنچیں ۔ ذرائع کے مطابق نیب کی تین رکنی ٹیم نے مریم نواز سے

چودھری شوگر ملز کے شیئرز اور دیگر معاملات پر 45منٹ تک سوالات پوچھے

۔مریم نواز سے متحدہ عرب امارات ،برطانیہ ، سعودی عرب کے چار افراد سے

کاروباری معاملات بارے میں سوالات پوچھے گئے ۔نیب نے مریم نواز سے

قرضوں اور سرکایہ کاری کی تفصیلات بھی مانگیں۔نیب نے مریم نوازسے اس

بارے میں بھی جواب مانگا ہے کہ ٹی ٹی کے ذریعے منتقل ہونیوالی رقوم کیسے

اور کہاں سے آئیں ۔مریم نواز سے زمین کی خریداری کی تفصیلات بھی طلب کی

گئیں ۔نیب کی تفتیش میں یہ انکشاف ہوا ہے کہ جنوری 2018 ء میں مسلم لیگ (ن)

کی حکومت کے دوران فنانشل مانیٹرنگ یونٹ کی رپورٹ کے مطابق چوہدری

شوگرملز نے اربوں روپے کی مبینہ منی لانڈرنگ کی۔ نیب تحقیقات 2018 میں

شروع کی گئی جس میں نواز شریف ،مریم نواز، شہباز شریف سمیت خاندان کے

دیگر ارکان شیئر ہولڈر پائے گئے ۔نیب ذرائع نے یہ دعوی کیا کہ اس میں شریف

فیملی سمیت متحدہ عرب امارات اور برطانیہ کے بھی چند شیئرہولڈرز ہیں۔

2001سے 2017کے درمیان بیرون ملک رہنے والے افراد کو اربوں روپے کا

شیئر ہولڈر بنایا گیا۔مریم نواز، حسن اور حسین نواز نے شیئر واپس وصول کئے

جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ منی لانڈرنگ کی گئی ۔نیب ذرائع نے انکشاف کیا کہ

یوسف عباس اور مریم نواز انکوائری میں شامل ہوئے لیکن منی لانڈرنگ کا جواب

نہیں دے سکے۔ مریم نواز 45منٹ تک نیب آفس میں موجود رہیں ۔ ذرائع کے

مطابق نیب کی جانب سے مریم نواز کو ایک سوالنامہ دیا گیا ہے اور انہیں 8اگست

کو دوبارہ پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق مریم نواز نے کہا

ہے کہ وہ صرف شیئر ہولڈر ہیں اور ان کا شوگر مل کے انتظامی یا دیگر معاملات

سے کوئی تعلق نہیں ۔قبل ازیںمریم نواز کی نیب میں پیشی کی اطلاع پر کارکن ان

کی رہائشگاہ جاتی امراء اور نیب ہیڈ کوارٹر کے باہر پہنچ گئے اور ان کی گاڑی

پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کرتے ہوئے ان کے حق میں نعرے لگاتے رہے ۔نیب

کے نوٹس پرنواز شریف کے بھتیجے عبد العزیز عباس اپنے بھائی یوسف عباس

شریف کے ہمراہ نیب ہیڈ کوارٹر آئے۔نیب کی جانب سے عبد العزیز یوسف سے

بھی شوگر مل میں شیئر ہولڈر ہونے سمیت دیگر امور بارے تفصیلی سوالات کئے ۔

عبد العزیز یوسف ایک گھنٹہ نیب آفس میں موجود رہنے کے بعد واپس روانہ ہوئے

۔دوسری جانبسما جی رابطے کی ویب سائٹ ٹو یٹر پر اپنے پیغام میں مسلم لیگ (ن

) کی نا ئب صدر مر یم نو از نے کہا ہے کہ بے مقصد تھیٹر جا ری ہے نیب کے پا

س پو چھنے کیلئے کچھ نہیں، مخصوص ایجنڈے پر کا م کر نے والی جے آئی ٹی

بھی کچھ نہیں نکا ل سکی ۔ مریم نو از نے کہا کہ نیب کو کا روبار سے متعلق

سوالو ں کے جو اب دیئے جو پہلے بھی ہزاروں مر تبہ دے چکے ہیں ۔ انہو ں نے

کہا کہ نیب کو ہراساں کرنے اور نشانہ بنا نے کے ہتھیا ر کے طور پر استعما ل کیا
جا رہا ہے۔

Leave a Reply