محمد عظیم خان کاکڑ کی چوتھی کتاب " ہماری حقیقت " کی تقریب رونمائی

محمد عظیم خان کاکڑ کی چوتھی کتاب ” ہماری حقیقت ” کی تقریب رونمائی

Spread the love

کوئٹہ ( جے ٹی این آن لائن ادبی نیوز) محمد عظیم خان کاکڑ

قلم اور کتا ب دوستی ہی معاشرے میں موجود جرائم کے خاتمہ میں مددگار ثابت

ہوتی ہیں ہمیں درپیش مشکلات اور چیلنجز سے نمٹنے کے لئے قلم کا استعمال اور

کتاب دوستی کو اپنانا ہو گا، ہماری حقیقت ایک بہترین تصنیف ہے جس میں

معاشرے کے مختلف پہلوﺅں کو اجاگر کیا گیا ہے محمد عظیم کا کڑکی علمی،

سیاسی و سماجی خدمات قابل تحسین ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سابق وفاقی وزیر اور

رہنماء جمعیت علماء اسلام حاجی رحمت اللہ کاکڑ، پروفیسر منیر احمد، پروفیسر

اقبال خان، نصر اللہ کاکڑ اور دیگر نے کوئٹہ پریس کلب میں محمد عظیم خان کاکڑ

کی چوتھی کتاب ” ہماری حقیقت ” کی تقریب رونمائی سے خطاب کے دوران کیا۔

=–= شوبز اور ادبی دنیا سے مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

کتاب کے مصنف عظیم خان کاکڑ نے علمی میدان میں بھی قابل ذکر خدمات انجام

دی ہیں، ںان کی علمیہ اکیڈمی سے فارغ ہونے والے 450 طلباء اس وقت مختلف

محکموں میں خدمات انجام دے رہے ہیں، یہی نہیں انہوں نے کرونا کے دوران

650 افراد میں راشن تقسیم کیا اور تقریبا 12 لائبریریاں قائم کی ہیں اب ایک اور

لائیبریری عثمان خان کاکڑ کے نام پر قائم کی جا رہی ہے جبکہ گانگلزئی میں ایک

لا ئیبریری تیار ہے اور ایک آرٹ گیلری قومی ہیروز کے لئے قائم کریں گے-

=-،-= بلوچستان سے متعلق مزید خبریں ( =،= پڑھیں =،= )

مقررین نے کہا کہ آ ج بھی ایسے لو گ موجود ہیں جو کتابوں کے ذریعے

معاشرے کی بہترین عکاسی کر رہے ہیں کیونکہ ڈیجیٹل دور نے لوگوں کو کتابوں

سے دور کر دیا ہے اور جو لوگ کتاب دوست ہیں وہ معاشرے کو درست سمت پر

گامزن کر رہے ہیں آج ہمیں زندان میں ڈا ل دیا گیا ہے، مہاجر و انصار، دیوبندی

اور بریلوی سمیت مختلف ناموں کا سہارا لیکر عوام کو باہم دست و گریبان کیا جا

رہا ہے، موجودہ حالات میں عظیم خان کا کڑ نے جو کتا ب لکھی ہے وہ عام بات

نہیں بلکہ یہ بڑی تگ و دو کا کام ہے، انہوں نے عوام کو بہترین پلیٹ فارم مہیا کر

دیا ہے، اس تقریب کا مقصد دنیا کی زندگی بہتر انداز میں گزارنا ہے، ہمیں

معاشرے میں وہ کردار ادا کرنا چاہیئے جس کے بارے میں روز آخرت پوچھ گچھ

ہو گی۔ اس موقع پر محمد عظیم کا کڑ کا کہنا تھا کتاب مظالم کے خلاف ہے اس

میں اعمال کا موضوع بھی دیا گیا ہے-

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

انہوں نے کہا کہ جس معاشرے میں قلم اٹھتا ہے وہاں سوچیں بدل جایا کرتی ہیں،

انہوں نے کہا کہ اگر کوئی چالیس سال کے بعد برائی کرتا ہے تو وہ عیب بن جاتا

ہے مذکورہ کتاب 35 سے 40 کتابوں کا نچوڑ ہے اس میں خوشی اور غم منانے

کے الگ الگ طریقے بتائے گئے ہیں، اس موقع پر انہوں نے اعلان کیا کہ یوم

آزادی پر بھر پور طریقے سے ایک جرگہ منعقد کریں گے۔

محمد عظیم خان کاکڑ ، محمد عظیم خان کاکڑ ، محمد عظیم خان کاکڑ

Leave a Reply