آئین میں ترمیم 0

مارچ میں مارچ کی تجویز شٹر ڈاؤن اورپہیہ جام کی تیاریاں حتمی مراحل

Spread the love

مارچ میں مارچ تجویز

اسلام آباد د (جے ٹی این آن لائن نیوز) حکومت مخالف اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم

) نے کہا ہے کہ لانگ مارچ سے قبل شٹر ڈاؤن، پہیہ جام کی تیاریاں حتمی مراحل میں داخل ہو گئی

ہیں جبکہ تحریک میں تیزی لانے پراتفاق کر لیا گیا ہے۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پاکستان

ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی سٹیرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں حکومت مخالف

اتحاد کی جماعتوں کے ممبران نے شرکت کی۔ یہ اجلاس 4 گھنٹے تک جاری رہا۔ پی ڈی ایم کی

حکومت مخالف تحریک اور احتجاج تیز کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا اور تمام جماعتوں کے نمائندوں

نے ایجنڈے پر رائے دی۔اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ترجمان پی ڈی ایم حافظ حمد

اﷲ نے کہا کہ لانگ مارچ سے قبل شٹر ڈاؤن، پہیہ جام کی تیاریاں حتمی مراحل میں داخل ہو گئی ہیں۔

اس کے علاوہ لاہور، گوادر جلسے سمیت تمام آپشن موجود ہیں۔آج اپنی سفارشات سربراہ اجلاس

میں رکھیں گے۔ تمام تجاویز پر غور کیا جائیگا اور تمام لائحہ عمل سے آگاہ کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا

کہ پی ڈی ایم نے حکومت سے نجات دلانے کا بیڑہ اٹھایا ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کے 126دن

کے دھرنے کو زیادہ کوریج دی گئی، پشاورکا جلسہ ناکام نہیں ہوا، رانا شمیم کا بیان حلفی، ثاقب

نثارکی آڈیو، سوالات اٹھا رہے ہیں، ہم توپہلے دن سے کہہ رہے ہیں انصاف نہیں ہو رہا، اس کی

وضاحت آنی ضروری ہے۔حافظ حمد اﷲ کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت کی شکل میں ملک کو بیماری

لاحق ہے۔ پی ڈی ایم تحریک میں تیزی لانے پراتفاق کیا گیا، مارچ میں مارچ کی بھی تجویزہے، ،(آج)

سربراہی اجلاس میں توثیق کے بعد فیصلوں اعلان کیا جائیگا، حکومت کے خلاف بطور احتجاج

استعفوں کی تجویز بھی موجود ہے ،لانگ مارچ کب کیا جائے گا اس کا اعلان اور فیصلہ قیادت کرے

گی،پارلیمنٹ میں سترہ نومبر کو جو قانون سازی کی گئی وہ سیاہ دن تھا،غلط قانون سازی کے خلاف

سپریم کورٹ جائیں گے،عدلیہ پر بہت بڑے سولات اٹھ گئے ہیں، وضاحت ججز اور عدلیہ کو کرنی

ہے۔ ۔ حافظ حمد اﷲ نے کہاکہ لاہور کا جلسہ، لانگ مارچ، پہیہ جام ہڑتال، شٹرڈاؤن سب پر غور کیا

جارہا ہے،ملک کے تمام شعبہ ہائے زندگی کو ساتھ لے کر احتجاج آگے بڑہایا جائے گا۔ انہوں نے

کہاکہ کنونشنز بھی منعقد کئے جانے کی تجویز بھی ہے،استعفوں کی تجویز بھی موجود ہے،گوادر میں

جلسے کی تجویز بھی موجود ہے،لانگ مارچ کب کیا جائے گا اس کا اعلان اور فیصلہ قیادت کرے

گی۔ انہوں نے کہاکہ پشاور جلسے کو درست طریقے سے میڈیا نے نہیں دکھایا،خیبرپختونخواہ میں

بلدیاتی انتخابات چل رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پارلیمنٹ کے اندر بھی کھیلیں گے اور باہر بھی۔ انہوں

نے کہاکہ چاروں صوبوں، میں سیمینارز اور کانفرنس اور گوادر میں جلسہ سفارشات سامنے آئی ہیں

،مارچ میں لانگ مارچ بھی ہو سکتا ہے ،دھرنا بھی ہمارے آپشنز میں شامل ہے

مارچ میں مارچ تجویز

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply