لاک ڈاؤن کا سوچیں بھی نہیں، 2 خاندانوں نے ہوس زر میں ملک تباہ کر دیا

لاک ڈاؤن کا سوچیں بھی نہیں، 2 خاندانوں نے ہوس زر میں ملک تباہ کر دیا

Spread the love

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن پاکستان نیوز) لاک ڈاؤن کا سوچیں

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہمیں کسی صورت لاک ڈاؤن کر کے اپنی

معیشت کو تباہ نہیں کرنا۔ پاکستان میں کرونا کی چوتھی لہر آئی ہوئی ہے، ڈیلٹا

ویرینٹ سب سے زیادہ خطرناک ہے، عوام انتہائی احتیاط کریں اور ویکسین

لگوائیں۔ بھارتی حکومت امیرطبقے کی خاطر بغیر سوچے سمجھے لاک ڈاؤن لگا

کر اپنے غریب کو مصبیت ڈالنے سمیت ملکی معیشت کو بھی بتاہ کرچکی۔ ہمیں

کسی صورت لاک ڈاؤن کر کے اپنی معیشت کو تباہ نہیں کرنا، لاک ڈاؤن سے

مزدور طبقہ شدید متاثر ہوتا ہے، جہاں کرونا کی شرح زیادہ ہے وہاں سمارٹ لاک

ڈاؤن لگائیں، یہی بہترین فیصلہ ہے، سندھ حکومت کیلئے بھی یہی پیغام ہے کہ اگر

لاک ڈاؤن کریں گے تو لوگ بھوکے مریں گے۔ ملکی معیشت مشکل مرحلے سے

نکل چکی ہے، آج ہماری اور بھارت کی معیشت کو دیکھ لیں۔ لاک ڈاﺅن میں

دیہاڑی دار اور مزدور طبقہ کیسے گزارا کرے گا، کرونا وائرس کی بھارتی قسم

بہت تیزی سے پھیلتی ہے-

=-= یہ بھی پڑھیں، کرونا وباء میں عمران خان کا استحکامِ معیشت باؤنسر

2 خاندانوں نے پیسے لوٹنے کیلئے اداروں کو کمزور کیا، نیب میں اپنا آدمی بٹھا

کر ملک کو بیدردی سے لوٹا، سسٹم تباہ کرنے میں دیر نہیں لگتی، سسٹم بنانے میں

وقت لگتا ہے، ملک میں پی ٹی آئی کی پہلی حکومت ہے جو کہہ رہی ہے الیکشن

میں شفافیت کیلئے الیکٹرانک ووٹنگ سسٹم لایا جائے،کیونکہ اس سے فوری رزلٹ

سامنے آ جائیگا لیکن اپوزیشن خود کوئی تجویز دیتی ہے اور نہ وہ ہماری بات

ماننے کو تیار ہے، کرپٹ معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا، قانون کی حکمرانی سے ہی

کرپشن کا خاتمہ ممکن ہے، ہم قانون کی حکمرانی کی جنگ لڑ رہے ہیں، ماضی

میں سیاسی بھرتیاں کر کے ملک کو تباہ کیا گیا، نورمقد م کیس کا قاتل کسی طور

پر بچے گا نہیں، نورمقدم کیس سے سب کو ایک صدمہ لگا ہے، یقین دلاتا ہوں قاتل

بچ نہیں سکے گا چاہے وہ دوہری شہریت ہی کیوں نہ رکھتا ہو، کوئی یہ سمجھتا

ہے کہ وہ امریکی شہری ہے اور بچ جائے گا، ایسا نہیں ہو گا۔

=-= پاکستان سے متعلق مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

اتوار کو ٹیلی فون پر عوام کے سوالوں کے براہ راست جواب دیتے ہوئے وزیر

اعظم عمران خان نے کہا ماسک کے استعمال سے کرونا وائرس پھیلنے کی شرح

کم ہو جاتی ہے، ہم نے پہلے بھی درست فیصلے کر کے اپنی معیشت اور عوام کو

بچایا، اب بھی ایسا کرینگے، لاک ڈاﺅن ہو تو دیہاڑی داراور مزدور طبقہ کہاں

جائیگا، جب تک بچوں اور اساتذہ کی ویکسی نیشن نہ ہو سکو ل نہ کھولے جائیں۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا قانون توڑنے والے سربراہ صحافیوں سے ڈرتے

ہیں، اگر میں نے لندن میں فلیٹ بنائے ہوں تو سارا وقت آزاد میڈیا سے ڈروں گا،

میڈیا سے تب اختلاف ہوتا ہے جب غلط خبریں پھیلا ئی جاتی ہیں، احسا س پروگرام

کے تحت کافی قرضے دیئے جارہے ہیں، سپورٹس کو جو وقت دینا چاہیے تھا نہیں

دے سکا، سپورٹس میں پی ایچ ڈی ہوں، آخری 2 سال میں سپورٹس پر پورا زور

لگاﺅں گا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا نور مقدم کیس کو پہلے دن سے خود دیکھ

رہا ہوں، تمام تفصیلات لی ہیں، افغان سفیر کی بیٹی کے کیس کو ایسے دیکھ رہا

ہوں جیسے میری بیٹی ہو، افغان ہمارے اپنے ہیں، ہم انہیں بھائی سمجھتے ہیں۔

=–= کرونا وائرس سے متعلق خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

وزیراعظم نے پولیس کو داد دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اس کیس کو ہر زاویے

سے فالو کیا۔ اسی طرح نور مقدم کیس میں بھی ایک ایک چیز کو فالو کر رہے ہیں۔

یہ بہت بڑی ٹریجڈی ہے۔ آپ سب کو یہ یقین دلاتا ہوں کوئی کتنا ہی طاقتور کیوں نہ

ہو، قانون کے مطابق پوری سزا ملے گی۔ سب لوگوں کو تاکید کرتا ہوں مون سون

کے دوران ایک درخت ضرور لگائیں، پاکستان میں 10 ارب درخت اپنے بچوں

اور آگے کی نسلوں کیلئے لگا رہے ہیں۔ عمران خان نے کہا کرپٹ معاشرہ ترقی

نہیں کر سکتا، قانون کی حکمرانی سے ہی کرپشن کا خاتمہ ممکن ہے، اگر اوپر

لیول پرکرپشن ہو گی تو نیچے بیٹھے لوگ خود بخود کرپٹ ہو جاتے ہیں۔

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

آزاد کشمیرمیں جو سیاسی بھرتیاں کی گئیں اس پرنظرثانی کریں گے، ماضی میں

سیاسی بھرتیاں کر کے ملک کو تباہ کیا گیا، پہلے ہم گندم ایکسپورٹ کرتے تھے

اب امپورٹ کرنی پڑ رہی ہے۔ وزیراعظم نے کہا معذور افراد کو تمام محکموں میں

کوٹہ ملنا چاہیے، 18ویں ترمیم کے بعد زیادہ تر محکمے صوبوں کے پاس ہیں، ان

کو ہدایات دوں گا کہ ہر محکمے میں معذوروں کے لئے کوٹہ مختص کریں۔ وزیر

اعظم نے کہا سعودی وزیرخارجہ سے سفری پابندیوں سے متعلق بات کی ہے،

انہوں نے یقین دلایا کہ اس معاملے کو جلد حل کرلیا جائے گا، بیرون ملک مقیم

پاکستانی ہمارا سب سے بڑا اثاثہ ہیں۔

لاک ڈاؤن کا سوچیں ، لاک ڈاؤن کا سوچیں ، لاک ڈاؤن کا سوچیں ، لاک ڈاؤن کا سوچیں

Leave a Reply