0

قومی کھیل ہاکی کو دو سال معطلی ، جرمانے اورپاکستان کی بدنامی کا خطرہ لاحق

Spread the love

پاکستان ہاکی فیڈریشن (پی ایچ ایف )نے پرو لیگ کیلئے حکومت سے 12کروڑ روپے مانگ لئے۔ ایسوسی ایٹس سیکریٹری پی ایچ ایف ایاز محمود کا کہنا ہے 20جنوری تک فنڈز جاری نہ کیے گئے تو نئے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔نیشنل ہاکی سٹیڈیم لاہور میں میڈیا کانفرنس کرتے ہوئے انکامزید کہنا تھا دو روز قبل فہمیدہ مرزا نے کہا ہمیں 27کروڑ دیے جبکہ اصل صورتحال یہ ہے ساڑھے تین سال میں ہمیں صرف 32کروڑ کی گرانٹ ملی، وزیر اعلی سندھ سے 22کروڑ گرانٹ آئی،وزیر اعلی پنجاب نے 20لاکھ دیے۔ پرو ہاکی لیگ کیلئے ہماری ٹیم نے ارجنٹائن جانا ہے،جہاں جانے کیلئے اڑھائی کروڑ روپے درکار ہیں،اس کے بعد لیگ کےلئے ہم نے آسٹریلیا جانا ہے جہاں ہمیں 18میچ کھیلنے ہیں،حکومت سے درخواست ہے فنڈز فراہم کریں،پروہاکی لیگ میںعدم شرکت پر دو سال معطلی، جرمانہ ہوگا اور ملک کی بدنامی الگ ہو گی ، ہمارے پاس فنڈز نہ ہونے پرسپورٹس بورڈ پنجاب سے کیمپ رہائش مانگی، حکومت کو چاہیے اپنے قومی کھیل کی مدد کرے ۔اس موقع پر قومی کوچ دانش کلیم کا کہنا تھا گرانٹ آجائےگی تو فیڈریشن کے حالات بہتر ہوجائیں گے، دو سال کی پابندی لگنے کے بعد سیاست یہاں ہی رہ جانی ہے۔ پروہاکی لیگ میں شرکت سے قومی ٹیم ٹاپ دس ٹیموں میں آسکتی ہے،ہماری موجودہ ٹیم میں نوجوان لڑکے شامل کیے گئے، بھارت اور بیلجیئم کی ٹیموں نے حکومتی گرانٹ سے بہتر پوزیشن حاصل کی۔

Leave a Reply