Qudrat Ullah Shahab

نامور ادیب اور بیورو کریٹ قدرت اللہ شہاب کو بچھڑے 34 برس گئے

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور (جے ٹی این آن لائن ادبی نیوز) قدرت اللہ شہاب

وطن عزیز پاکستان کے نامور ادیب اور بیورو کریٹ قدرت اللہ شہاب کی 34

ویں برسی آج بروز جمعہ انتہائی عقیدت و احترام سے منائی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : فکر جب انقلاب دیکھے گی —– روشنی بے حساب دیکھے گی

ملک کے نامورادیب اور بیوروکریٹ کو ان کی خدمات پر خراج تحسین پیش

کرنے اور روح کو ایصال ثواب پہنچانے کے سلسلے میں ملک بھر کے ادبی

حلقوں میں تعزیتی سیمینارز اور تقریبات کا اہتمام کیا جارہا ہے ۔ نامور ادیب و

بیوروکریٹ قدرت اللہ شہاب 1917 ء کو جنت نظیر وادی کشمیر میں پیدا ہوئے-

انہوں نے 1941 ء میں انڈین سول سروس میں شمولیت اختیار کی۔

قیام پاکستان کے بعد وطن عزیز میں بھی انتہائی اہم عہدوں پر فائز رہے۔

قدرت اللہ شہاب گورنر جنرل پاکستان غلام محمد، اسکندر مرزا اور جنرل ایوب

خان کے سیکر ٹری رہے. وہ اقوام متحدہ کے ادارے یونیسکو سے بھی منسلک

رہے۔ پاکستان رائٹر گلڈ کی تشکیل ان کا ایک اہم کارنامہ ہے وہ ایک عمدہ نثر نگار

اورادیب تھے-

سوانح حیات شہاب نامہ سے بے پناہ شہرت حاصل ہوئی

پاکستان کے اس نامور ادیب اور بیورو کریٹ کو اپنی سوانح حیات شہاب نامہ سے بے پناہ شہرت حاصل ہوئی۔ ان کی سوانح حیات آج بھی انہتائی مقبول ہے، ان کی دیگر تصانیف میں سرخ فیتہ، یاخدا اور ماں جی قابل ذکر ہیں۔ وہ 24 جولائی 1986 ء کو انتقال کرگئے تھے۔ حق مغفرت فرمائے- الہٰی آمین

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply