ناراض بلوچوں سے مذاکرات

قانون کی حکمرانی نہ ہونےسے ہمارا ملک پیچھے رہ گیا ، عمران خان

Spread the love

قانون کی حکمرانی نہ

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے پرویز مشرف کا این آر او د

آئین توڑنے سے بڑا جرم تھا وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ، قانون کی حکمرانی نہ ہونے کی وجہ

سے ملک پیچھے رہ گیا، مہذب معاشرہ طاقتور کو قانون کے نیچے لے کر آتا ہے ، 60 کی دہائی میں

ہم ترقی کی طرف جارہے تھے مگر آہستہ آہستہ ہمارا ملک اوپر سے نیچے جانا شروع ہوگیا، 30

سالوں میں ملک تیزی سے نیچے گیا اور ہر چیز میں دنیا آگے نکل گئی۔وزیراعظم عمران خان نے

ڈسٹرکٹ کورٹس عمارت کے سنگ بنیاد کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 25 سال پہلے

پارٹی کا نام تحریک انصاف رکھا، مجھے اﷲ نے سب کچھ دیا، سیاست میں آنے کی ضرورت نہیں

تھی، میرے پاس سب کچھ تھا لیکن ملکی صورتحال دیکھ کر سیاست میں آیا۔عمران خان کا کہنا تھا کہ

عدلیہ آزادی کے وہ نتائج نہیں آئے جو آنے چاہیے تھے، طاقتور ہمیشہ قانون سے اوپر رہنا چاہتا ہے،

اوورسیز پاکستانی ملک کا سب سے بڑا اثاثہ ہیں، تارکین وطن ملک میں پلاٹ لیں تو قبضہ ہو جاتا

ہے، لندن میں قبضہ گروپ اس لیے نہیں کیونکہ وہاں قانون ہے۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ پاکستان

میں امیر اور غریب کیلئے الگ قانون ہمارا سب سے بڑا المیہ ہے، ملک آزاد عدلیہ کی وجہ سے ہی

ترقی کرسکتا ہے، کمزور کو انصاف چاہیے، طاقتور قانون سے اوپر ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اسلام آباد

کے گرین ایریاز کو بچانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ وزیر داخلہ شیخ رشید اور وزیراعظم عمران خان

نے ون آن ون ملاقات کی ۔ ملاقات میں افغانستان اور بارڈر منیجمنٹ کی صورتحال پر بریفنگ دی

گئی۔ بریفنگ کے دوران افغانستان سے انخلا اور پاکستان آنے والے غیر ملکیوں کے بارے میں

وزیراعظم کو آگاہ کیا گیا ۔ طورخم اور چمن بارڈر کی صورتحال پر بھی بات چیت کی گئی ۔ شیخ

رشید نے کہا وزارت داخلہ میں افغانستان سے متعلق فیسیلیٹیشن سنٹر 24 گھنٹے کام کر رہا ہے۔

وزیراعظم نے وزارت داخلہ کی کارکردگی کو سراہا۔ وزیر اعظم نے کہا ہے کہ کراچی میں روزگار

کیلئے مزدوروں و افرادی قوت کی صنعتوں تک آسان رسائی حکومت کی اولین ترجیح ہے ۔ وزیر

اعظم سے وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے ملاقات کی ہے ۔ وزیراعظم کو کراچی کی ترقی کے لیے

جاری مختلف منصوبوں پر پیش رفت سے آگاہ کیا گیا۔ وزیراعظم کو بتایا گیا کہ نیو کراچی سرکلر

ریلوے (KCR) کے آغاز کی منظوری کا عمل جلد مکمل کر لیا جائے گا۔ اس موقع پر وزیر اعظم کا

کہناتھا کہ وفاقی حکومت پاکستان کے سب سے بڑے شہر میں لوگوں کو ٹرانسپورٹ کی سہولیات کی

فراہمی یقینی بنائے گی۔ماضی میں حکومتیں ملک کے اقتصادی مرکز کراچی کو نظر انداز کرتی

رہیں۔کراچی میں روزگار کیلئے مزدوروں و افرادی قوت کی صنعتوں تک آسان رسائی حکومت کی

اولین ترجیحات میں سے ایک ہے۔ وزیرِ اعظم عمران خان سے وفاقی وزیرِ صنعت و پیداوار مخدوم

خسرو بختیار نے ملاقات کی ہے ۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں وزیرِ اعظم کو انڈسٹریل زونز کی

تعمیر، برآمدی ہدف کے حصول، چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں کی ترقی کیلئے اقدامات

اور آٹو پالیسی پر عملدرآمد پر پیش رفت سے آگاہ کیا گیا۔وزیرِ اعظم کو مزید بتایا گیا کہ بڑے پیمانے

کی صنعت کی پیداوار رواں مالی سال کیلئے طے شدہ ہدف سے تجاوز کرنے کی امید ہے جو کہ

ملکی اقتصادی صورتحال کیلئے خوش آئند ہے وزیراعظم عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود

قریشی کے درمیان ملاقات میں پارٹی امور اور ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا

گیا۔منگل کو وزیراعظم عمران خان سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ملاقات کی ۔ملاقات میں

پارٹی امور اور ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اسکے علاوہ افغانستان اور

خطے کی مجموعی صورتحال پر بھی گفتگوکی گئی ۔

قانون کی حکمرانی نہ

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply