انسٹاگرام لڑکیوں کو نفسیاتی مریض بنا رہا ہے، فیس بک کا اعتراف

انسٹاگرام لڑکیوں کو نفسیاتی مریض بنا رہا ہے، فیس بک کا اعتراف

Spread the love

سان فرانسسکو(جے ٹی این ٹیکنالوجی نیوز) فیس بک کا اعتراف

انسٹاگرام کی مالک کمپنی فیس بک نے اعتراف کیا ہے ان کی ایپ ” انسٹاگرام ”

بالخصوص نوعمر لڑکیوں کے دماغ پر منفی اثرات مرتب کر رہی ہے کیونکہ اس

میں جسمانی خدوخال اور چہرے پر زور دیا جاتا ہے۔ انسٹاگرام نے کہا ہے کہ وہ

اس رحجان کو کم کرنے اور صارفین کو ظاہری جسمانی کیفیات پر متوجہ ہونے

کی حوصلہ شکنی کرے گا۔ وال اسٹریٹ جرنل اخبار میں چند روز قبل ایک

رپورٹ شائع ہوئی ہے جس میں کہا گیا ہے گزشتہ تین برس سے فیس بک کے

ماہرین 2012ء میں خریدے جانے والے انسٹاگرام پر تحقیق کررہے تھے۔

=-،-= ایپ نوعمر و کمسن لڑکیوں پر “زہریلے اثرات” مرتب کررہی ہے

خلاصہ یہ ہے کہ فوٹو شیئرنگ ایپ نوعمر اور کمسن لڑکیوں پر ” زہریلے

اثرات ” مرتب کررہی ہے۔ یہاں تک کہ یہ پلیٹ فارم باڈی امیج اور ظاہری شباہت

پر زور دیتے ہوئے لڑکیوں کو دماغی و نفسیاتی مریض بنا رہا ہے۔ اخبار کے

مطابق برطانیہ میں 13 فیصد اور امریکہ میں 6 فیصد لڑکیوں نے کہا کہ انہیں

انسٹاگرام دیکھنے کے بعد اپنی زندگی ختم کرنے کا خیال آیا۔ یعنی انسٹاگرام سے

وابستہ ہونے کے بعد مجموعی طور پر ہر تین میں سے ایک نوعمر لڑکی اپنی

جسمانی شباہت سے غیرمطمئن دکھائی دی۔

=–= سوشل میڈیا سے متعلق ایسی مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

سوشل میڈیا مبصرین بھی اس ضمن میں کئی ایک بار کہہ چکے ہیں کہ جب سے

جدید ٹیکنالوجی پر مبنی سماجی رابطوں کی ویب سایٹ عام عوام کی دسترس میں

آئی ہیں اور انہوں نے ان سوشل میڈیا سائیٹس کا استعمال شروع کیا ہے، دنیا بھر

کے معاشروں میں خوبیاں کم اور خامیاں زیادہ پروان چڑھ رہی ہیں-

فیس بک کا اعتراف ، فیس بک کا اعتراف ، فیس بک کا اعتراف

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply