فیاض الحسن چوہان کے ناروا رویئے کیخلاف صحافیوں کاپنجاب اسمبلی کے احاطے میں احتجاج

Spread the love

پاکستان بھر کی صحافتی تنطیموں نے جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے مشترکہ پلیٹ فارم سے صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کے ناروا روئیے کے خلاف پنجاب اسمبلی کے احاطے میں زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا اور وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا کہ مذکورہ وزیر کو فوری طور پر صوبائی کابینہ سے الگ کیا جائے ۔لاہور پریس کلب کے صدر اور جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے کنونئینر ارشد انصاری کی کال پر کئے جانے والے اس مظاہرے میں پی ایف یو جے کے سیکرٹری جنرل رانا محمد عظیم ‘ پی یو جے کے صدر شہزاد حسین بٹ ‘ لاہور پریس کلب کے سابق صدر اعظم چودھری ‘ کلب کے سیکرٹری زاہد عابد ‘ سینئر صحافی سلمان غنی ‘ سینئر صحافی نعیم مصطفی‘ ایمراکے صدر محمد آصف بٹ ‘ ایمراکے سیکرٹری جنرل سلیم شیخ ‘ارشد چودھری ‘ پریس گیلری کمیٹی کے صدر خواجہ نصیر‘ سیکرٹری علی اقبال ‘ صدر لاہور فوٹو ایسویسی ایشن اکمل بھٹی ‘ مبر گورننگ باڈی عمران شیخ اور فوٹو گرافر عمر شریف سمیت دیگر نے شرکت کی ۔اس موقع پر مقررین نے کہا کہ بد زبان وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان پی ٹی آئی کے چہرے پر بد نما داغ ہیں جو سینئر اور با وقار صحافیوں کو شرمناک کہہ کر تذلیل کررہے ہیں ۔مقررین نے صوبائی وزیر کی تمام سرگرمیوں کے بائیکاٹ اور ان سے استعفی لینے کے مطالبے کااعلان بھی کیا ۔اس موقع پر مقررین نے مختلف میڈیا ہائوسز سے صحافیوں کی برطرفیاں نہ منظور کے نعرے بھی لگائے اور کہا کہ جب تک ہمارا ایک ایک ساتھی بحال نہیں کیا جاتا تب تک ہمارا یہ احتجاج جاری رہے گا اور جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے بینرز تلے ہم سب ایک ہیں ہم حکومت کو میڈیا انڈسٹڑی کا گلا گھونٹنے کی کسی بھی قیمت پر اجازت نہیں دیں گے۔

Leave a Reply