فردوس عاشق کا رانا ثناء کو 2 ارب روپے ہرجانے کا نوٹس، باجی آپ تو غصہ کر گئیں، رہنما مسلم لیگ ن

Spread the love

اسلام آباد، لاہور(جے ٹی این آن لائن سٹاف رپورٹرز )

وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی اطلاعات ونشریات محترمہ ڈاکٹر

فردوس عاشق اعوان نے مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما اور رکن قومی اسمبلی

رانا ثناء اللہ کی جانب سے ’الزام‘ لگانے پر 2ارب روپے ہرجانے کا قانونی نوٹس

ارسال کردیا۔ جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ تردید اور معافی اس انداز میں نشر اور

شائع کروائی جائے جس طرح سے جھوٹے الزامات کو نشر اور شائع کیا گیا۔

معاون خصوصی کے وکیل نے قانونی نوٹس میں کہا رانا ثناء اللہ کو مطلع کیا

جاتا ہے ان الزامات کی تردید کریں اور معافی مانگیں اور ساتھ ہی 2 ارب روپے

ہرجانہ 14 دن کے اندر ادا کریں بصورت دیگر ہتک عزت ایکٹ 2002 کی شق 8

کے تحت ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کے وکلا قانونی چارہ جوئی کا حق رکھتے

ہیں۔ ہرجانے کا نوٹس 26 مئی کو بجھوایا گیا جس میں مزید کہا گیا کہ فردوس

عاشق اعوان دنیا بھر میں ایک قابل اور ایماندار سیاستدان کے طور پر جانی جاتی

ہیں اور 10 برس تک قومی اسمبلی اور 5 مختلف وزارتوں میں وزیر کے عہدے

پر فائز رہیں جبکہ اب وہ موجودہ حکومت میں بطور معاون خصوصی اطلاعات اہم

ذمہ داریاں انجام دے رہی ہیں انکا تعلق انتہائی معزز گھرانے سے ہے اور رانا ثناء

اللہ کی میڈیا سے گفتگو میں موکلہ پر بے بنیاد اور جھوٹے الزامات لگائے گئے

جس کی وجہ سے موکلہ کی دل آزاری، شہرت کو نقصان اورساکھ مجروح ہوئی

ہے۔

صرف کرپشن کا پوچھا تو یہ حال ابھی تو بڑے بڑے سوال باقی تھے، رانا ثنااللہ

ادھر ہرجانہ نوٹس پر اپنے ردعمل میں پاکستان مسلم لیگ (ن ) پنجاب کے صدر

رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا فردوس باجی میں نے تو سرکاری بسوں اور دوائیوں کی

کرپشن کا پوچھا تھا آپ تو غصہ کر گئیں۔ فردوس باجی آپ سے وزارت ِ پیٹرولیم

میں ڈاکے کا پوچھا تھا، جس کا اعتراف آپ نے کیا تھا، وزارتِ صحت میں دوائیوں

کی قیمتوں میں اضافہ کی کرپشن جو آپ نے بتائی اس کا پوچھا اورفردوس باجی

آپ سے آپ کے نئے بوس کی نالائقی کے بارے میں پوچھا تھا جس پر آپ تو غصہ

کر گئیں ابھی تو کرپشن، نالائقی اور نااہلی کے بڑے سوال کرنے تھے آپ تو ابھی

سے غصہ کر گئیں،

Leave a Reply