Emmanuel Lenain Friench Ambisdor in india 115

بھارت مقبوضہ کشمیر میں عائد پابندیاں ختم کرے، فرانس

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

نئی دہلی، سرینگر(جتن آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) فرانس مقبوضہ کشمیر

نئی دہلی میں فرانس کے سفیر ایمانوئل لینین نے بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر سے پابندیاں ختم کرے۔ ایمانوئل لینن ان 25 غیرملکی سفیروں میں شامل تھے جنہیں رواں ہفتے مقبوضہ وادی کے دورے پرلے جایا گیا تھا۔ مزید پڑھیں

وادی کا دورہ صورتحال جانچنے کیلئے

ایمانوئل لینین کا نئی دہلی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہنا تھا کہ یہ دورہ اسلئے اہم تھا کہ بحیثیت سفیر مجھے اپنی آنکھوں سے صورتحال کو دیکھنے کی ضرورت تھی تاکہ حالات کا بہتر اندازمیں جائزہ لیا جاسکے۔ انہوں نے کہا مقامی حکام اور سول سوسائٹی کے کچھ حصوں، مقامی ذرائع ابلاغ اور کاروباری برادری کیساتھ براہ راست بات چیت بہت فائدہ مند تھی۔ یورپی یونین کے ترجمان برائے امور خارجہ اور سیکیورٹی پالیسی ورجینی بٹوہنریکسن نے بھی اسی طرح کا بیان دیا تھا جن کا کہنا تھا کہ پابندیوں کو جلد ختم کیا جائے۔

شبیر ڈار سمیت کئی حریت رہنما گرفتار، کرفیو کو آج 198 واں روز

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس نے سینئر حریت رہنماﺅں غلام محمد خان سوپوری اور شبیر احمد ڈار کو متعدد حریت کارکنوں کے ہمراہ بارہمولہ میں گرفتار کرکے سوپور تھانے منتقل کر دیا گیا جبکہ مسلسل 198 ویں روزسے جاری بھارتی فوجی محاصرے اور براڈبینڈ موبائل انٹرنیٹ سروسز کی معطلی کے باعث وادی میں معمولات زندگی بدستورمتاثر ہیں۔

سی آر پی ایف نے تلاشی کیلئے ڈرون استعمال کرنے شروع کردئیے

ذرائع ابلاغ نے اس کی تصدیق کی ہے کہ بھارتی فوج اور پیراملٹری فورسز نے محاصرے اور تلاشی کی کارروائیوں کے دوران ڈرون استعمال کرنے شروع کر دیے ہیں۔ بھارتی ریاست کرناٹک کے ضلع حوبالی میں ایک انجینئرنگ کالج میں زیر تعلیم تین کشمیری طلباء کو پاکستان کے حق میں ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنے کی پاداش میں بغاوت کے مقدمے کے تحت گرفتار کرلیا گیا۔

علیل رہنما سید علی گیلانی کی رہائشگاہ سے سکیورٹی ہٹا دی گئی

سرینگر میں بزرگ کشمیری رہنما سید علی گیلانی کی حیدرپورہ کے علاقے میں رہائشگاہ کے آس پاس انکی حفاظت کے پیش نظر تعینات تمام سیکورٹی اہلکاروں کو ہٹا دیا گیا ہے۔ جموں و کشمیر انتظامیہ کے حکم نامے کے مطابق وادی میں انٹرنیٹ سروسز پر عائد پابندی 24 فروری تک برقرار رہے گی- انتظامیہ کے پرنسپل سکریٹری شالین کبری کی جانب سے جاری کیے گئے حکم نامے کے مطابق خفیہ ایجنسیوں اور پولیس کی رپورٹ کے مطابق وادی میں سماجی رابطے کی ویب سائٹس کے استعمال پر پابندی کے باوجود ورچوال پرائیویٹ نیٹ ورک (وی پی این) کے ذریعے اسکا استعمال ہو رہا ہے۔

پلوامہ پولیس سٹیشن پردستی بم کا حملہ

دوسری طرف مشتبہ عسکریت پسندوں نے جنوبی کشمیر ضلع کے پلوامہ پولیس سٹیشن پردستی بم سے حملہ کیا۔ ایک عہدیدار نے بتایا کہ دستی بم پولیس تھانہ پلوامہ میں پھینکا گیا۔ تاہم کسی جان و مال کے نقصان کی کوئی اطلاع نہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ایران کےخلاف امریکہ پھر تنہا

فرانس مقبوضہ کشمیر

Leave a Reply