0

غیر علانیہ لوڈ شیڈنگ کیس،عدالت نے وفاقی حکومت سے صنعتوں کوبجلی فراہمی کی تجاویز طلب کر لیں

Spread the love

سپریم کورٹ آف پاکستا ن نے غیر علانیہ لوڈ شیڈنگ کیس کی سماعت کے دور ان وفاقی حکومت سے صنعتوں کو ترجیح بنیادوں پر فراہمی بجلی کی تجاویز طلب کر لیں۔ بدھ کو کیس کی سماعت جسٹس عظمت سعید شیخ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔سماعت کے دوران وکیل ا یٹما نے کہاکہ حکومت مخصوص انڈسٹری کو ترجیح بنیادوں پر بجلی فراہم کرنا چاہتی ہے۔وکیل ایٹما نے کہا کہ عدالت کا مساوانہ بجلی کی فراہمی کا حکم حکومت کے آڑے آرہا ہے۔ سر کاری وکیل نے کہاکہ بجلی فراہمی کی ترجیحات طے کرنا پالیسی میٹر ہے۔جسٹس عظمت سعید شیخ نے کہاکہ پالیسی میٹرز کا عدالتی جائزہ لیا جا سکتا ہے۔ جسٹس عظمت سعید شیخ نے کہا کہ آئین میں آرٹیکل 25 بھی موجود ہے۔ فیصلے پر نظر ثانی کا دروازہ کھولنے کو تیار ہیں۔حکومت کو کلین چٹ بھی نہیں دے سکتے۔ عدالت اپنی آنکھیں بند نہیں کر سکتی۔پہلے حکومت اپنا موقف دے اور ترجیحات بتائے۔ ترجیحات قابل جواز ہوئیں تو فیصلے میں تبدیلی کر دیں گے۔ بعد ازاں سپریم کورٹ نے وفاقی حکومت این ٹی ڈی سی اور دیگر فریقین کو نوٹس جاری کر تے ہوئے مقدمے کی سماعت اپریل کے دوسرے ہفتے تک ملتوی کر دی ۔

Leave a Reply