ولیمے کا کھانا ٖغریبوں میں تقسیم کر دیا گیا

Spread the love

بنگال (جے ٹی این ان لائن نیوز ) بھارتی ریاست مغربی بنگال میں ایک جوڑے نے اپنی شادی کا کھانا رشتہ داروں اور دوستوں کے بجائے غریبوں میں تقسیم کیا۔شادی شدہ جوڑے نے اس موقع پر سماجی فاصلے کا خیال بھی رکھا اور کم رشتہ داروں کو مدعو کیا۔

محبت کے جشن سے بے صبر شوہر کی دوسری شادی تک

انڈین وئب بھارتی نیوز رپورٹ کے مطابق جوڑے کی جانب سے دو دن تک ہزار کے قریب غریب افراد میں دال چاول تقسیم کیا گیا۔30 سالہ سوراو کارم کار اور 27 سالہ ستھی پتر نے مارچ میں شادی کا فیصلہ کیا تھا تاہم ماں کے بیمار ہونے وجہ سے شادی 16 اپریل تک ملتوی کی۔جوڑے کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلا کی وجہ سے بھی ان کی شادی دوبارہ سے ملتوی ہو رہی تھی لیکن گھر والوں نے فیصلہ کیا کہ ایک چھوٹی سی تقریب منعقد کرکے شادی کر دی جائے۔

دولہے سوراو کے مطابق کہ ان کی شادی گھر کے قریب ایک مندر میں ہوئی۔ان کا کہنا تھا کہ ان غریبوں کو کھانا کھلایا گیا جو ایک وقت کی روٹی بھی نہیں کھا سکتے۔سوراو اپنے گاں میں کھانے کا ایک ٹھیلا لگاتے ہیں۔ہزار کے قریب غریب لوگوں کو کھانا کھلایا گیا ،

دلہن کے مطابق وہ خوش ہیں کہ شادی کے موقع پر غریبوں کو کھانا کھلایا گیا۔ہماری شادی ملتوی بھی ہوئی تھی لیکن مجھے اچھا محسوس ہو رہا ہے کہ ہم نے اس بحران میں غریبوں کو کھانا کھلایا۔

سعودی امداد سے کروناوائرس کے خلاف عالمی مہم کو تقویت ملے گی،عالمی ادارہ صحت

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او)کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس ایڈہانوم نے کورونا وائرس کی وبا سے نمٹنے کے لیے پچاس کروڑ ڈالر کی خطیر رقم دینے پر جی ٹوئنٹی کے اہم رکن ملک سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کا شکریہ ادا کیاہے اور امید ظاہر کی کہ جی ٹوئنٹی کے دیگر ممبر ممالک بھی شاہ سلمان کے نقش قدم پر چلتے ہوئے نئے کورونا وائرس پر قابو پانے کی عالمی مہم میں حصہ لیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ 500 ملین ڈالر کے عطیے پر شاہ سلمان اور سعودی عوام کے بے حد ممنون ہیں- اس رقم سے کورونا کی وبا سے نمٹنے کے سلسلے میں عالمی مشن کو تقویت پہنچے گی-یاد رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاو کی روک تھام کے لیے سعودی عرب نے جی ٹوئنٹی کی قیادت کرتے ہوئے عالمی اداروں کے لیے 500 ملین ڈالر کی امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی جانب سے یہ امداد عالمی ادارہ صحت کی اپیل پر دی گئی ہے۔سعودی عرب کی جانب سے دی جانی والی 50 کروڑ ڈالر کی اس امداد میں 15 کروڑ ڈالرکورونا وائرس کی مناسب روک تھام کے لیے جدید آلات کی تیاری جب کہ 15 کروڑ ڈالر اس بیماری کے سدباب کے لیے ویکسین کی تیاری میں مدد کے لیے مختص ہیں۔

غریبوں میں تقسیم

Leave a Reply