0

عمران حکومت کیلئے خطرے کی گھنٹی ، بی این پی مینگل راستے جدا کرنے پر تیار ، فیصلہ آج متوقع

Spread the love

بی این پی مینگل نے حکومتی اتحاد سے الگ ہونے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے حکومت نے آج سینیٹ کی خالی نشست پر ہونےوالے ضمنی انتخاب میں بی اے پی کے امیدوار کا سا تھ دیا تو ہم اتحاد کا حصہ نہیں رہیں گے، سینٹ کی نشست پر بلوچستان نیشنل پارٹی کے منظور کاکڑ اور بلوچستان عوامی پارٹی کے غلام نبی مد مقابل ہیں جبکہ دونوں جماعتیں حکومتی اتحا د ی ہیں۔ اگر حکومت آج بی اے پی کے امید وار کی حمایت سے دستبرادر نہیں ہوتی تو بی این پی مینگل حکومتی اتحاد میں رہنے کے اپنے فیصلے پر نظرثانی کرسکتی ہے اور حکومت سے علیحدگی کی صورت میں وفاق اور صوبہ بلوچستان میں عمران خان کی حکومت کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔ بلوچستان اسمبلی میں تحریک انصاف کے 7 اور بلوچستان عوامی پارٹی کے 24 جبکہ بی این پی مینگل کے 10 ارکان ہیں۔ مرکز اور صوبہ بلوچستان میں بی این پی مینگل حکومتی اتحاد مین شامل ہے ۔ حکومت کےلئے دونوں میں سے کسی ایک امیدوار کا انتخاب مشکل مرحلہ ہے۔

Leave a Reply