عالمی عدالت انصاف، بڑھکیں مارنیوالا بھارت کلبھوشن کی رہائی مطالبہ سے دستبردار،کیس کا فیصلہ محفوظ

Spread the love

دی ہیگ(جے ٹی این آن لائن) کلبھوشن یادیو کیس مین پاکستانی وکیل خاورقریشی کے دلائل مکمل ہونے پر عالمی عدالت انصاف نے فیصلہ محفوظ کر لیا۔ فیصلے کی تاریخ کا اعلان فریقین کی مشاورت سے کیا جائے گا،

عدالت نے قرار دیا ضرورت پڑی تومزید شواہد مانگ سکتے ہیں۔ دوسری طرف بھارت کلبھوشن یادیو کی رہائی کے اپنے ہی مطالبے سے دستبردار ہوگیا۔

اس سے قبل پاکستان کی جانب سے کیس کی پیروی کرنیوالے وکیل خاور قریشی کا معزز عدالت کے روبرو کہنا تھا بھارت نے پاکستان کے دلائل کا جواب نہیں دیا۔

بھارتی وکیل نے دلائل کا جواب نہیں بلکہ غیر متعلقہ باتوں سے عدالتی توجہ ہٹانے کی کوشش کی۔ خاور قریشی کا کہنا تھا بھارت نے عدالت میں میرے الفاظ سے متعلق غلط بیانی سے کام لیا۔

مجھے کسی چیز کے اضافے کی ضرورت نہیں، حقائق خود بولتے ہیں۔ بھارت سے اٹھائے گئے سوالات کی تفصیل عدالت میں پیش کر دی ۔

2008ء کے معاہدے پر بھارت نے جواب نہیں دیا جبکہ کلبھوشن یادیو کے اغوا کی کہانی پر کوئی جواب نہیں دیا گیا۔ بھارت نے اپنے دلائل کو دھماکہ خیز قرار دیا۔

خاور قریشی نے اپنے دلائل جاری رکھتے ہوئے کہا بھارتی وکیل نے لاہور بار کے عہدیدار کو پاکستان کے سرکاری الفاظ بنا کر پیش کیا۔

بھارتی وکیل نے پہلے کہا اٹھارہ بار قونصلر رسائی کیلئے رابطے کا کہا جبکہ گزشتہ روز پاکستان سے قونصلر رسائی کیلئے رابطوں کی تعداد چالیس بتائی۔ بھارت نے اپنے اعلیٰ عہدیداروں کی تصاویر دکھانے پر واویلا مچایا،

Leave a Reply