کورونا کو جڑ سے ختم نہ کیا تو وائرس دوبارہ پھیلنے کا خدشہ، عالمی ادارہ صحت

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

نیویارک(جے ٹی این آن لائن)عالمی ادارہ صحت

عالمی ادارہ صحت نے خبردار کیا ہے کہ اگر بعض ملکوں میں کورونا وائرس

کے کیسز نہایت معمولی بھی رہے لیکن جڑ سے ختم نہ کیے گئے تو خدشہ ہے کہ

کرونا وائرس، ویکسین کی تیاری2021ء سے پہلے ناممکن، عالمی ادارہ صحت

یہ وبا دوبارہ سر اٹھاسکتی ہے۔ ڈاکٹر ٹیڈروس

ادھانوم اور ایمرجنسی چیف مائیکل ریان نے آن لائن نیوز بریفنگ کے دوران کہا

کہ کورونا وائرس کی پیش رفت کو سست کرنے اور انسانی جانوں کے تحفظ میں

کامیابی مل رہی ہے جو اچھی خبر ہے۔ان کا کہنا تھا کہ لاک ڈائون میں مرحلہ وار

نرمی امید کی کرن اور خوش آئند ہے لیکن اس مرحلے میں تمام ملکوں کو محتاط

رہنا ہوگا، پابندیاں اٹھانا پیچیدہ اور مشکل مرحلہ ہے لہذا لاک ڈائون میں نرمی

کرتے ہوئے سست رفتاری اور مستقل مزاجی کا خیال رکھنا ہوگا۔ عالمی ادارہ

صحت کے ماہرین نے واضح کیا کہ اگر بعض ملکوں میں کورونا وائرس کے

کیسز نہایت معمولی بھی رہے لیکن جڑ سے ختم نہ کیے گئے تو خدشہ ہے کہ یہ

وبا دوبارہ سر اٹھاسکتی ہے۔

لاک ڈائون میں مرحلہ وار

نرمی امید کی کرن اور خوش آئند ہے لیکن اس مرحلے میں تمام ملکوں کو محتاط

رہنا ہوگا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply