آج کل جس طرح کے ڈرامے چل رہے ہیں میری سمجھ سے باہر ہیں‘طلعت حسین

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

طلعت حسین

کراچی (جے ٹی این آن لائن نیوز)ستارہ امتیاز کے لیے حال ہی میں نامزد ہونے

والے نامور فنکار طلعت حسین کہتے ہیں کہ انہیں ایوارڈ لیٹ ملنے پر کوئی

اعتراض نہیں ہے۔ ’جو لوگ ایسی بات کرتے ہیں، وہ جتنی سمجھ بوجھ رکھتے ہیں

اسی حساب سے بات کرتے ہیں۔ میں ایسی باتوں پر یقین ہی نہیں رکھتا۔ ویسے بھی

ہم لوگ ایوارڈ لینے کے لیے تو پرفارم نہیں کرتے۔اپنی اداکاری کے ساتھ ساتھ

مخصوص آواز اور لب و لہجے سے اپنی پہچان بنانے والے طلعت حسین نے

اپنے ایک انٹرویو میں کہا کہ آج کل جس طرح کے ڈرامے چل رہے ہیں ان کے

سکرپٹ ’میری سمجھ سے باہر ہیں۔لیکن طلعت حسین کو اس حوالے سے کوئی

شکایت نہیں۔ وہ کہتے ہیں کہ وہ ڈراما اپنی چوائس سے نہیں کر رہے۔لیکن یہ بھی

سچ ہے کہ اب مجھے اداکاری کے لیے آفرز بھی نہیں آتیں۔ ایک دو آفرز آئیں تھیں۔

میں نے سکرپٹ منگوا کر پڑھا تو مجھے بالکل سمجھ نہیں آیا اور میں نے منع کر

دیا۔ سکرپٹ پڑھو تو اس میں احمقانہ سی گفتگو لکھی ہوتی ہے۔ آج ڈرامے میں

سوائے بیوی، بیٹی اور ساس بہو کے جھگڑے کے کچھ اور ہوتا ہی نہیں۔ان کا کہنا

تھا کہ ماضی میں انھوں نے جو ڈرامے کیے وہ بین الاقوامی طور پر پسند کیے

گئے۔میرے ڈراموں پر انڈیا میں شور مچاتھا اور ان کا کہنا تھا کہ ایسے ہوتے ہیں

بچوں کیلئے میٹھا زہر، نوجوانوں کو اندر سے کھوکھلا کرنیوالے مشروبات

ڈرامے۔ ایسا نہیں ہے کہ میں کوئی اکیلا ہی اْس وقت کام کر رہا تھا۔ بہت سے

دوسرے آرٹسٹوں کے ڈرامے بھی چل رہے ہوتے تھے لیکن میری خوش قسمتی

رہی کہ میرے ڈراموں کو زیادہ پذیرائی ملی۔جب ان سے پوچھا گیا کہ جب انہیں آج

کل کے لکھے ہوئے سکرپٹ پسند نہیں آتے تو کیا خود کوئی کہانی لکھنے کا ارادہ

ہے تو طلعت حسین نے جواب دیا کہ ان کا دل تو چاہتا ہے کہ وہ ڈراما لکھیں۔

انہوں نے ایک آدھ بار کوشش بھی کی اور ایک دو ڈرامے لکھے بھی۔ لیکن ان

سے کہا گیا کہ یہ تو بہت ہی مشکل کہانیاں ہیں لوگوں کو سمجھ کیسے آئیں گی لہٰذا

بات نہ بن سکی۔

طلعت حسین

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply