افغان طالبان کا خواتین کیلئے شریعت کے تحت موثر انتظامیہ لانے کا اعلان

طالبان کا شناختی کارڈ، پاسپورٹ میں تبدیلی کا اعلان

Spread the love

طالبان کا شناختی کارڈ

کابل (جے ٹٰٰی این آن لائن نیوز) طالبان نے افغانستان کے قومی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ میں تبدیلی

کا اعلان کردیاجبکہ عبوری وزیر دفاع ملا محمد یعقوب نے طالبان جنگجو ؤں اور کمانڈرز کی

شہریوں سے بدتمیزی پر سرزنش کرتے ہوئے کہا ہے بدتمیزیاں برداشت نہیں کی جائیں گی،افغانستان

میں عام معافی کے اعلان کے تحت کسی مجاہد کو کسی سے انتقام لینے کا حق نہیں ، صوبہ ہرات میں

طالبان فورس نے چار اغواء کاروں کو فائرنگ کے تبادلہ میں ہلاک کردیا اور بعدازاں ان کی لاشیں

شہر کے مرکزی چوراہے پر کرین سے لٹکا دیں جبکہ مغوی باپ بیٹے کو بحفاظت بازیاب کرلیاتاہم

فائرنگ کے تبادلے میں ایک طالب اور ایک شہری سمیت دو افراد زخمی ہوگئے۔دوسری طرف

دارالحکومت میں افغانستان کے بیرون ملک پڑے زرمبادلہ کے ذخائر بحال کرنے کیلئے کابل میں

مظاہرہ کیا گیا۔افغانستان کی سرکاری نیوز ایجنسی کے مطابق طالبان کے ترجمان اور نائب وزیر

اطلاعات ذبیح اﷲ مجاہدنے کہاکہ افغانستان میں گزشتہ حکومت کے جاری کردہ شناختی کارڈ اور

پاسپورٹ اپنی معیاد تک کار آمد ہیں،مستقبل میں جو نئے پاسپورٹ اور شناختی کارڈ جاری کیے

جائینگے ان پر’اسلامی امارت‘ لکھا جائیگا،اس وقت افغانستان کے پاسپورٹ پر ’اسلامی جمہوریہ

افغانستان‘ تحریر ہے ، طالبان کی جانب سے افغانستان کا کنٹرول سنبھالنے کے بعد شناختی کارڈ اور

پاسپورٹ دفاتر بند پڑے ہیں۔دوسری طرف طالبان کے بانی ملا عمر کے بیٹے اور عبوری وزیر دفاع

ملا یعقوب نے اپنے آڈیو پیغام میں کچھ کمانڈرز اور جنگجوؤں کی بدتمیزی پر ان کی سرزنش کرتے

ہوئے کہا ہے شہریوں سے بدتمیزیاں برداشت نہیں کی جائیں گی، افغانستان میں عام معافی کے اعلان

کے تحت کسی مجاہد کو کسی سے انتقام لینے کا حق نہیں ، کچھ شر پسند، بدنام سابق فوجیوں کو

طالبان یونٹوں میں شامل ہونے کی اجازت دی گئی تھی جنہوں نے بعض اوقات پرتشدد زیادتیوں کا

ارتکاب کیا۔طالبان رہنماء نے اپنے ساتھیوں کو ایسے لوگوں کو اپنی صفوں سے دور رکھنے کی

ہدایت کی اور کہا ہم اپنی صفوں میں ایسے لوگ نہیں چاہتے۔ملا یعقوب نے طالبان جنگجوؤں کے

مختلف وزارتوں میں تصویریں لینے اور ویڈ یو بنانے پر اعتراض کرتے ہوئے کہا یہ قابل اعتراض

فعل ہے کیونکہ لوگ اپنا موبائل فون نکال کر اہم اور حساس وزارتوں میں بغیر کسی وجہ کے تصاویر

لے رہے ہیں، یوں گھومنا اور ویڈیوز بنانا دنیا اور آخرت میں مددگار ثابت نہیں ہوگا۔ادھرمقامی و

غیرملکی میڈیا کے مطابق افغانستان کے معروف شہر ہرات میں گزشتہ روزچار مبینہ اغواء کاروں

نے باپ بیٹے کو اغواء کرلیا جس پر طالبان فورس نے کارروائی کرتے ہوئے اغواء کاروں کے

ٹھکانے پر دھاوا بول دیا، جس پر اغواء کاروں اور طالبان فورس کے اہلکاروں کے مابین فائر نگ کا

تبادلہ ہوا جس کے نتیجے میں چاروں اغواء کار ہلاک کردیئے گئے جبکہ فائرنگ کی زدمیں آکر ایک

طالب اور ایک شہری بھی زخمی ہوگئے۔حکام کے مطابق دونوں مغوی باپ بیٹے کو اغوء کارو ں

کے چنگل سے بحفاظت چھڑالیا گیا۔میڈیا نے مقامی افراد کے حوالے سے رپورٹ دی کہ بعدازاں

طالبان نے ایک اغواء کار کی لاش شہر کے مرکزی چوراہے میں کرین سے لٹکا دی اور مقامی

لوگوں سے کہا چار اغواء کاروں نے باپ بیٹے کو اغواء کرلیا تھا جنہیں یہ سزادی گئی ہے۔ اطلاعات

کے مطابق باقی تین اغواء کاروں کی لاشیں بھی ممکنہ طورپر دیگر چوراہوں میں لٹکادی گئیں تاہم

فوری طورپر مزید معلومات حاصل نہیں ہوسکیں۔دریں اثناء بیرون ملک افغانستان کے زرمبادلہ

کے ذخائر بحال کرنے کیلئے کابل میں مظاہرہ کیا گیا، مظاہر ین کا کہنا تھا افغانستان میں ہر گزرتے

دن کیساتھ معاشی مسائل سر اٹھا رہے ہیں ،مظاہرین نے امریکہ اور بین الاقوامی اداروں سے امداد

اور بیرون ملک افغانستان کے زرمبا دلہ کے ذخائر بحال کرنے کا مطالبہ کیا،خیال رہے امریکہ نے

طالبان کے کنٹرول کے بعد افغانستان کے اپنے ملک میں موجود اثاثوں کو منجمد کردیا تھا، جبکہ

عالمی مالیاتی فنڈ نے بھی افغانستان کیلئے فنڈز کا اجرا ء کرنے سے انکار کررکھاہے ۔

طالبان کا شناختی کارڈ

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply