Taliban

طالبان نے جوزجان کے دارالحکومت پر بھی قبضہ کر لیا

Spread the love

طالبان نے جوزجان دارالحکومت

کابل (جے ٹی این آن لائن نیوز) افغانستان میں طالبان نے گھمسان کی لڑائی کے بعد صوبہ جوزجان

کے دارالحکومت شبرغان پر بھی قبضہ کر لیا گزشتہ تین روز میں یہ دوسرا صوبائی دارالحکومت ہے

جس پر طالبان نے قبضہ کیا ہے اس سے پہلے جمعرات کے روز طالبان ایران سرح کے قریب صوبہ

نمرو کے دارالحکومت اور اہم تجارتی مرکز زرنج پر بھی قبضہ کر لیا تھا جہاں کی انتظامیہ اور

گورنر نے ایران مین پناہ لے لی ہے طلابان اتوار کے روز شبر گان کے گورنر ہاوس پر بھی قبضہ

کر لیا۔ صوبہ جوزجان کی صوبائی کونسل کے سربراہ نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے

دارالحکومت شبرغان پر طالبان کے قبضے کی تصدیق کردی۔ افغان صحافیوں اور مقامی میڈیا کے

مطابق طالبان زیادہ تر سرکاری عمارتوں اور شہر کا کنٹرول سنبھالنے میں کامیاب ہو گئے ہیں تاہم

ائیر پورٹ ابھی تک حکومتی کنٹرول میں ہے اور وہاں لڑائی جاری ہے۔طالبان نے شبرغان کی جیل

پر بھی قبضہ کر لیا ہے۔ سوشل میڈیا پر گردش کرتی ایک ویڈیو میں سینکڑوں قیدیوں کو جیل سے

نکلتے دیکھا جا سکتا ہے۔افغانستان کے دیگر صوبائی دارالحکومت جہاں اس وقت شدید لڑائی جاری

ہے، ان میں مغرب میں ہرات اور جنوب میں لشکر گاہ شامل ہیں۔افغانستان میں شدید لڑائی کے بعد

امریکہ اور برطانیہ نے اپنے شہریوں کو افغانستان سے نکل جانے کی ہدایت کر دی ہے۔ امریکی

سفارت خانے کی جانب سے کہا گیا ہے کہ امریکی شہری کمرشل فلائٹ آپشنز کا استعمال کرتے ہوئے

فوراً افغانستان چھوڑ دیں۔افغانستان میں سکیورٹی حالات اور عملے کی کمی کے پیش نظر، امریکی

سفارت خانے کی افغانستان میں اپنے شہریوں کی مدد کرنے کی قابلیت بھی انتہائی محدود ہے۔امریکی

سفارت خانے کی جانب سے کہا گیا کہ وہ ان امریکی شہریوں کی وطن واپسی کے لیے قرض فراہم

کر سکتا ہے جو اس وقت امریکہ کا ٹکٹ خریدنے کے متحمل نہیں ہو سکتے۔کابل میں بڑھتے ہوئے

تشدد اور دھمکیوں کے باعث سفارت خانے کا وہ عملہ جس کے امور کہیں اور سے انجام دیے جا

سکتے ہیں، انھیں پہلے ہی افغانستان سے نکل جانے کا حکم دیا گیا تھا۔ امریکہ کی افغانستان کے لیے

ٹریول ایڈوائزری لیول 4 ہے جس کا مطلب ہے کہ جرائم، دہشت گردی، بدامنی، اغوا، مسلح تصادم اور

کووڈ 19 کی وجہ سے افغانستان کا سفر نہ کریں۔وائٹ ہاوس کے ترجمان نے کہاہے کہ افغانستان میں

طالبان کی کارروائیوں کا کوئی قانونی جواز نہیں ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق جاری کیئے گئے ایک

بیان میں ترجمان وائٹ ہاوس کا کہنا تھا کہ افغانستان میں طالبان کی کارروائیاں عالمی سطح پر قانونی

جوازفراہم کرنے میں معاون ثابت نہیں ہو گی۔وائٹ ہاوس کے ترجمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ طالبان کو

افغانستان تشدد ختم کرنا ہو گا۔

طالبان نے جوزجان دارالحکومت

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply