صوبہ سندھ، 12444 سکول غیر فعال، باقی میں بنیادی سہولیات کا فقدان

صوبہ سندھ، 12444 سکول غیر فعال، باقی میں بنیادی سہولیات کا فقدان

Spread the love

کراچی ( جے ٹی این آن لائن ایجوکیشن نیوز) صوبہ سندھ سکول

سندھ بھر میں تعلیمی اداروں کی صورتحال پر چشم کشا رپورٹ سامنے آگئی،

صوبے میں 12 ہزار 444 سکولوں کے غیر فعال ہونے کا نکشاف ہوا ہے۔ محکمہ

تعلیم سندھ کی سکول شماری سے متعلق حالیہ رپورٹ کے تحت صوبے بھر میں

49 ہزار 103 سکولوں میں سے 36 ہزار 659 فعال ہیں۔

=.-.= یہ بھی پڑھیں: تعلیمی سرگرمیوں کی مکمل بحالی مگر —–!

رپورٹ کے مطابق 49 ہزار 103 میں 36 ہزار 659 فعال سکولوں کے بعد صوبے

بھر میں غیر فعال سکولوں کی تعداد 12 ہزار 444 بنتی ہے۔ سندھ میں 45 لاکھ 61

ہزار 140 بچے سکولوں میں زیر تعلیم ہیں، جنہیں تدریس فراہم کے لیے 1 لاکھ

33 ہزار اساتذہ موجود ہیں۔ رپورٹ کے مطابق سندھ کے 49 ہزار سکولوں میں

سے 26 ہزار 260 میں پینے کا پانی موجود نہیں جبکہ صوبے کے 19ہزار 469

سکولوں میں بیت الخلاء تک موجود نہیں۔ صوبے کے 49 ہزار میں 31 ہزار سے

زائد سکولوں میں بجلی ہی موجود نہیں جبکہ 21 ہزار 9 سے زائد سکولوں کی چار

دیواری تک نہیں ہے۔

=.-.= قارئین =کاوش پسند آئی ہو گی، فالو کریں اپ ڈیٹ رہیں

سندھ بھرمیں رپورٹ کے مطابق 47 ہزار سے زائد سکولوں میں لیب موجود نہیں

جبکہ 36 ہزار سے زائد میں کھیل کے میدان کی سہولت دستیاب نہیں ہے۔صوبے

کے 47 ہزار سے زائد سکولوں میں لائبریری کا تصور تک موجود نہیں جبکہ

سندھ کے 7 ہزار 47 سکولوں میں بیت الخلاء جبکہ 13 ہزار 847 میں پینے کے

پانی کی سہولت موجود نہیں ہے۔

صوبہ سندھ سکول

Leave a Reply