Spread the love

اسلام آباد (جے ٹی این پی کے) شاہ رخ جتوئی جیل

سپریم کورٹ نے شاہ زیب قتل کیس کے مجرم شاہ رخ جتوئی اور دیگر کی سزاؤں کیخلاف اپیل پر

سماعت میں جسٹس جمال خان مندوخیل نے وکیل سے شاہ رخ جتوئی کی صحت سے متعلق دریافت

کرتے ہوئےکہاہے کہ جیل میں ہی ہیں یا کہیں اور ہیں؟جس پر وکیل لطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ شاہ

رخ جتوئی جیل میں ہی ہے۔ بدھ کو سپریم کورٹ میں شاہ رخ جتوئی کی عمر قید کے خلاف اپیل پر

سماعت جسٹس مقبول باقر کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی،یہ بھی پڑھیں:سزائے موت کے

قیدی شاہ رخ جتوئی کانجی ہسپتال میں شاہانہ زندگی گزارنے کا انکشافوکیل شاہ رخ جتوئی نے کہا کہ

7 سال پہلے صلح ہوچکی لیکن کیس کا تعین اب میڈیا کرتا ہے۔جسٹس جمال خان مندوخیل نے کہا

کہ میڈیا آپ پر اثرانداز ہو سکتا ہے تاہم عدالت پر نہیں، جسٹس مقبول باقر نے کہا کہآپ کو لگتا ہے

کہ سپریم کورٹ میں کیس میڈیا چلاتا ہے؟ ایسی بات نہ کریں جو حقیقت کے منافی ہو۔جسٹس امین

الدین خان نے کہا کہ مقدمات ری شیڈیول ہونے کی وجہ سے فائل نہیں پڑھ سکا،شریک مجرم کے

وکیل اعظم نذیر تارڑ نے کہا کہ دہشتگردی کی دفعات عائد ہونے کا حکم سپریم کورٹ کے تین رکنی

بنچ نے دیا۔اعظم نذیر تارڑ نے بتایا کہ عدالت کے 7 رکنی بنچ کا فیصلہ بعد میں آیا جس کی روح سے

یہ کیس دہشتگردی کانہیں بنتا ہے، جسٹس امین الدین خان نے کہا کہ تمام نکات کا آئندہ سماعت پر

جائزہ لیں گے۔سپریم کورٹ نے کیس کی سماعت 3 ہفتے کیلئے ملتوی کر دی کر دی۔

شاہ رخ جتوئی جیل

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply

%d bloggers like this: