سندھ اسمبلی میں جزائر آرڈیننس کیخلاف قرارداد متفقہ منظور

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

سندھ اسمبلی جزائر آرڈیننس

کراچی (جے ٹی این آن لائن نیوز) سندھ اسمبلی نے بدھ کوسندھ کے جزائر سے متعلق حالیہ صدارتی

آرڈیننس کے خلاف ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی ،وفاقی حکومت کے اتحادی جی ڈی اے

نے بھی متنازع صدارتی آرڈیننس کی مخالفت کی اور قرارداد پر پی پی کا ساتھ دیا جبکہ ، اس معاملے

پر پی ٹی آئی کے ایک رکن سندھ اسمبلی شہر یار نے اپنی پارٹی پالیسی سے بغاوت کردی انہوں نے

اپنی جماعت کے ارکان کی جانب سے ایوان کی کارروائی کے بائیکاٹ میں حصہ نہیں لیا اور ایوان

میں موجود رہے ۔ان کا کہنا تھا کہ میں اس دھرتی کا بیٹا ہوں، سندھ ہماری ماں ہے اس لئے اس

تحریک کی حمایت کرتا ہوں۔سندھ کے جزائر سے متعلق صدارتی آرڈیننس کے خلاف قرارداد سجاول

سے تعلق رکھنے والے پیپلز پارٹی کے رکن محمد علی ملکانی اور محمود عالم جاموٹ نے پیش کی

تھی۔ آئی لینڈ اتھارٹی آرڈیننس کیخلاف قرارداد پر پیپلزپارٹی ارکان نے بڑے جذباتی انداز میں دھوان

دھار تقاریر کیں۔ صوبائی وزیر زراعت اسماعیل راہو نے اپنی تقریر میں کہا کہ شاہ عبد الطیف بھٹائی

نے پہلے ہی کہا تھاکہ کبھی سندھ کے جزائر پر قبضہ ہوگا یہ بات آج سچ ثابت ہورہی ہے آئین کے

آرٹیکل 172 میں واضح ہے کہ صوبوں کی ملکیت کیا ہے۔ایوان صد راعلی ترین ہاو س ہے مگرانہوں

یہ آرڈیننس جاری کردیا۔یہ کیا ظلم ہے؟کبھی یہاں گورنر راج کی بات ہوتی ہے۔کبھی کراچی پر قبضہ

کی دھمکی دی جاتی ہے ۔اب یہ آرڈیننس آگیا ہے ہم اس کو رد کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ کم عقل

اور کم تجربہ کار لوگ ہیں لیکن خود کو عقل مند سمجھتے ہیں۔جی ڈی اے نے حمایت کی خوشی کی

بات ہے۔اگر آپ وفاقی حکومت سے علیحدگی اختیار کریں تو اور بھی زیادہ خوشی ہوگی۔

سندھ اسمبلی جزائر آرڈیننس

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply