سمندری طوفان ٹاک ٹائی

سمندری طوفان ’’ ٹاک ٹائی‘‘ کی شدت بڑھ گئی، کراچی میں ہائی الرٹ جاری

Spread the love

سمندری طوفان ٹاک ٹائی

کراچی(جے ٹی این آن لائن نیوز) جنوب مشرقی بحیرہ عرب کے جنوب مشرق میں موجود ڈپریشن

سمندری طوفان کی شکل اختیار کرگیا، ہوا کا دباؤ کم ہوگیا۔ بحیرہ عرب کے جنوب مشرق میں بننے

والے سمندری طوفان ’ٹاک ٹائی‘ نے بھارت میں اثر دکھانا شروع کردیا۔طوفان کا رخ گجرات کی

جانب ہوگیا ہے جس کے بعد بھارتی ریاست کیرالہ میں تیز ہوائیں اور طوفانی بارشیں شروع ہوگئیں۔

تیز ہواؤں کے باعث کئی مکانات کی چھتیں گر گئیں، پانچ اضلاع میں ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا۔

بھارتی محکمہ موسمیات نے ریاست گجرات اور قریبی علاقوں کیلئے سائیکلون الرٹ جاری کردیا۔

سمندری طوفان کراچی کے جنو ب اور جنوب مشرق سے 1460 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے،

سمندری طوفان 18 مئی کو بھارتی گجرات سے ٹکرائے گا۔ محکمہ موسمیات کا ٹراپیکل سائیکلون

سینٹر مسلسل سمندری طوفان ٹاوٹے کی مانیٹرنگ کر رہا ہے ۔ محکمہ موسمیات کا بتانا ہے 18 مئی

کو سمندری طوفان بھارتی گجرات پہنچ جائیگا۔ بھارت کی ساحلی پٹی میں ہائی ٹائیڈز بننا شروع ہوگئی

ہیں۔ سائیکلون کے مرکز میں ہوا کی رفتار 70 سے 80 کلو میٹر فی گھنٹہ ہے اور کبھی بڑھ کر 100

کلو میٹر تک بھی پہنچ رہی ہے۔سائیکلون کے نتیجے میں سندھ کے علاقوں میں 18 سے 20 مئی کے

دوران گرد آلود کیساتھ تیز بارش کا امکان ہے۔ حیدر آباد، ٹھٹھہ، بدین اور جام شورو میں آندھی کیساتھ

بارش متوقع ہے، تاہم سمندری طوفان ٹاوٹے کے سمندر میں ممکنہ اثرات کے سبب ماہی گیروں کی

واپسی کیلئے رابطے شروع کر دیئے گئے۔عید الفطر سے پانچ روز قبل برف سے لدی درجنوں کی

تعداد میں لانچیں شکار کیلئے روانہ ہوئیں تھی، جس کیلئے فشر فورک فورم نے گہرے سمندر میں

موجود ماہی گیر لانچوں سے صوتی رابطے کرنا شروع کر دیے ہیں۔ ابراہیم حیدری، ریڑھی گوٹھ،

ککا پیر، کیماڑی کے ماہی گیروں نے شکار پر روانگی روک دی۔محکمہ موسمیات کے مطابق

سمندری طوفان سے پاکستان کے ساحلوں کو فی الحال خطرہ نہیں تاہم سندھ کے ماہی گیروں کو آج

سے 20 مئی تک گہرے سمندر میں نہ جانے کی ہدایت بھی جار ی کر دی گئی ہے۔ دوسری جانب ہوا

کے کم دباؤ کے نتیجے میں 16 اور 17 مئی کو شہر قائد کا درجہ حرارت 42 ڈگری تک پہنچنے کا

امکان ہے۔ سمندری ہوائیں منقطع رہیں گی، موسم گرم اور خشک ہوگا۔ طوفان کے باعث پاکستان اور

بھارت کی ساحلی پٹی پر تیز ہوائیں چلنا شروع ہو گئی ہیں۔ سمندری طوفان کا رخ شمال اور شمال

مغرب یعنی بھارتی گجرات کی جانب رہیگا۔محکمہ موسمیات کے مطابق 18 مئی تک سمندری طوفان

بھارتی گجرات تک پہنچ جائے گا۔ٹاک ٹائی نامی سمندری طوفان کے نتیجے میں بھارتی ریاست

گجرات کے ساحلی علاقوں اور پاکستانی سمندر کے قریب مشرق کی جانب ساحلی علاقوں کو خطرہ

ہو سکتا ہے۔اگر یہ سمندری طوفان شدت پکڑ گیا تو یہ پچھلی دو دہائیوں کے دوران پاک بھارت ساحلی

پٹی سے ٹکرانے والا طاقت ور ترین طوفان ہو گا تاہم ابھی تک کے اندازوں کے مطابق سمندری

طوفان آبادی والے ساحلی علاقوں سے دور رہے گا لیکن مہاراشٹرا کا ساحلی شہر ممبئی اس سے

متاثر ہو سکتا ہے۔ادھر وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے سائیکلون کے پیش نظر تمام اداروں کو

الرٹ کرتے ہوئے کراچی شہر سے بل بورڈ ہٹانے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔وزیراعلیٰ سندھ کی

زیر صدارت سائیکلون کے حوالے سے اجلاس ہوا، جس میں اہم فیصلے کئے گئے۔ اس موقع پر

وزیراعلیٰ سندھ نے ایمرجنسی پلان ٹیم بنانے، کمشنر کراچی، کے ایم سی اور ڈی ایم سی کو نالوں کی

صفائی کی ہدایت کی۔اْنہوں نے کنٹونمنٹ بورڈ کو کسی بھی خطرے سے نمٹنے کیلئے تیار رہنے کی

ہدایت بھی کی۔ اس کیساتھ ساتھ ماہی گیروں کو بھی الرٹ جاری کیا 17 مئی سے 20 مئی کے دوران

گہرے سمندر میں نہ جائیں۔حیدر آباد میں بھی متوقع طوفانی بارشوں کے پیش نظر ریڈ الرٹ جاری

کردیا گیا۔کمشنرحیدرآباد ریجن کے دفتر میں کنٹرول روم قائم کردیا گیا ہے اور اس حوالے سے جاری

نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ کنٹرول روم میں ملازمین 24گھنٹے اپنی ڈیوٹی سر انجام دیں گے۔علاوہ

ازیں تھرپارکر میں بھی متوقع سمندری طوفان کے پیش نظرالرٹ جاری کردیا گیا ہے اور ڈپٹی کمشنر

آفس میں کنٹرول روم قائم کردیا گیا ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق موسمی سسٹم کے باعث 17 سے

20 مئی کے دوران ٹھٹہ، بدین، تھر، میرپورخاص، عمرکوٹ، سانگھڑ میں بارش کا امکان ہے، ہواؤں

کی رفتار 70 سے 90 کلو میٹرتک رہے گی۔اس کے علاوہ حیدرآباد،کراچی،جام

شورو،شہیدبینظیرآبادمیں 18سے20 مئی کے دوران گرد آلود ہوائیں چلنے اور بارش کی پیش گوئی

کی گئی ہے۔ کراچی سمیت سندھ کے کئی علاقوں میں گرمی کی لہر آ سکتی ہے، درجہ حرارت 42

سے 43 درجے تک جا سکتا ہے۔ ادھر ایڈمنسٹریٹر کراچی لئیق احمد نے بلدیہ عظمیٰ کراچی کے

مختلف محکموں میں متوقع ہیٹ ویو اور سمندری طوفان کی آمد کے پیش نظر 20 مئی تک ایمرجنسی

نافذ کردی ہے، ایمرجنسی کے پیش نظر تمام ہسپتالوں میں ڈاکٹر ز اور پیرامیڈیکل اسٹاف کی ہمہ وقت

موجودگی کو یقینی بنایا جائے جبکہ فائر بریگیڈ، ریسکیو یونٹ، سٹی وارڈنز، محکمہ باغات اور

محکمہ میونسپل سروسز میں بھی ایمرجنسی نافذ رہے گی، ایڈمنسٹریٹر کراچی لئیق احمد نے شہریوں

سے اپیل کی کہ وہ ہیٹ ویو اور متوقع سمندری طوفان کے پیش نظر احتیاطی تدابیر اختیار کریں اگلے

تین دنوں میں کرا چی کا درجہ حرارت بڑھنے کا امکان ہے لہٰذاشہری ان دنوں میں گھروں میں رہنے

کو ترجیح دیں، متوقع سمندری طوفان کے باعث تیز ہوائیں چلنے اور بارش کا امکان ہے اور تیز

ہواؤں کے باعث چھتیں اڑنے، سائن بورڈ گرنے، کچی تعمیرات کے منہدم ہونے کے امکانات ہیں، لہٰذا

شہری احتیاطی تدابیر اختیار کریں بجلی کے تاروں اور سائن بورڈز سے دور رہیں اور خصوصاً

بارش کے دوران برقی آلات اور بجلی کے کھمبوں کو چھونے سے گریز کریں، ہیٹ ویو کے دنوں

میں پانی کا زیادہ استعمال کیا جائے، دھوپ سے بچا جائے اورڈی ہائیڈریشن ہو نے کی صورت میں

فوری ہسپتال سے رجوع کریں، تمام افسران و ملازمین اپنی ذمہ داریوں کو محسوس کرتے ہوئے

شہریوں کی مدد کیلئے موجود رہیں،بارش ہونے کی صورت میں ہر ممکن کوشش ہوگی کہ نکاسی آب

کا عمل جلد از جلد مکمل کیا جائے اور جہاں بھی پانی کھڑا ہو اسے محفوظ طریقے سے نکال

دیاجائے۔ سمندری طوفان کی وجہ سے بارشوں کے دوران ایمرجنسی صورتحال میں ڈی واٹرنگ

پمپس کو ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کرنے کیلئے ٹرکس اور دیگر گاڑیوں کا بھی قبل از وقت

انتظام رکھا جائے۔

سمندری طوفان ٹاک ٹائی

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply