سمندری طوفان شاہین الرٹ

سمندری طوفان ’’شاہین‘‘ کا تیسرا الرٹ جاری، کراچی میں شدید بارش

Spread the love

سمندری طوفان شاہین الرٹ

کراچی (جے ٹی این آن لائن نیوز) شمال مشرقی بحیرہ عرب میں ٹراپیکل سمندری طوفان کی

تشکیل پر محکمہ موسمیات نے تیسرا الرٹ جاری کردیا۔محکمہ موسمیات کے مطابق 12گھنٹے سے

ڈپریشن مغرب اور شمال مغرب کی جانب بڑھ رہا ہے اور ڈپریشن کراچی کے مشرق اور جنوب

مشرق سے 240کلو میٹر دور موجود ہے جب کہ ٹھٹھہ سے 200 اور اورماڑہ سے 410کلومیٹر دور

ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق تیز بارشیں کراچی میں اربن فلڈنگ کا باعث بن سکتی ہیں جب کہ

بدین، ٹھٹھہ، حیدرآباد اور دادو میں بھی اربن فلڈنگ کا خطرہ ہے۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ

سسٹم آئندہ 12 سے 18 گھنٹوں میں سائیکلونک اسٹارم بن سکتا ہے جس کے باعث سندھ اور مکران

کے ساحلی علاقوں میں تیز ہوا اور طوفانی بارشوں کا امکان ہے۔ کراچی، حیدرآباد، ٹھٹھہ، بدین میں

2 اکتوبر تک وسیع پیمانے پر بارشوں کا امکان ہے جب کہ میرپور خاص، تھر پارکر، عمرکورٹ،

سانگھڑ اور دیگر اضلاع میں بھی بارش کا امکان ہے۔محکمہ موسمیات کا بتانا ہے کہ بلوچستان کے

مختلف اضلاع میں بھی 3 اکتوبر تک بارشوں کا امکان ہے اور تین اکتوبر تک سمندر میں طغیانی اور

کبھی انتہائی طغیانی رہ سکتی ہے۔محکمہ موسمیات نے ماہی گیروں کو 3 اکتوبر تک سمندر میں

جانے سے گریز کرنے کی ہدایت کی ہے۔دوسری جانب کراچی میں وقفے وقفے سے ہلکی اور تیز

بارش کا سلسلہ جاری ہے، شہر میں ہواؤں کی رفتار بھی تیز ہے اور بعض علاقوں میں تیز ہواؤں

کے ساتھ بارش ہوئی جب کہ بعض علاقوں میں معتدل بارش ریکارڈ کی جارہی ہے۔ بارش کے پیش

نظر متعلقہ ادروں کو حفاظتی اقدامات مکمل کرنے کی بھی ہدایت کر دی گئی۔۔ چیف میٹرولوجسٹ

سردار سرفراز کے مطابق شہر میں اربن فلڈنگ کا خطرہ ہے۔ ہواؤں کی رفتار 70 سے 80 کلو میٹر

فی گھنٹہ تک ہوسکتی ہے۔دوسری جانب تیز ہواؤں کے باعث فریئر ہال پارک کے قریب بجلی کا پول

گاڑی پر گرگیا۔ ایک درخت بھی تیز ہواؤں کے باعث اکھڑ گیا، واقعہ میں کوئی جانی نقصان کی

اطلاع نہیں۔ محکمہ موسمیات کے مطابق آج شہر قائد میں موسلا دھا ر بارش کا امکان ہے۔اس کے

علاوہ ٹھٹھہ، بدین کی ساحلی پٹیوں سمیت سندھ کے شہروں سکھر، شکارپور، خیرپور میں تیز ہواؤں

کے ساتھ موسلادھار اور ہلکی بارشوں کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری ہے۔ حیدرآباد ریجن کے

اضلاع میں آرمی اور رینجرز ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں جب کہ تمام متعلقہ

اداروں کو بھی الرٹ کر دیا گیا ہے۔ سندھ حکومت نے صوبے بھر میں آج تمام تعلیمی ادارے

بندکرنیکا اعلان کردیا۔وزیر تعلیم سندھ سید سردار شاہ کے مطابق موسم کی صورت حال اور تیزبارش

کے پیش نظر آج تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔سید سردار شاہ کا کہنا ہے کہ فیصلے کا اطلاق تمام نجی

و سرکاری تعلیمی اداروں پر ہوگا۔وزیرجامعات اسماعیل راہو کا بھی کہنا ہے کہ موسم کی صورت

حال کے پیش نظرسندھ بھر کی جامعات میں آج تعطیل ہوگی۔اس سے قبل ہی آل سندھ پرائیوٹ اسکولز

اینڈ کالجز ایسوسی ایشن غیریقینی موسم کی صورت حال کے باعث پرائیوٹ اسکول اورکالج کل بند

رکھنے کا اعلان کرچکی ہے۔آل سندھ پرائیوٹ اسکولز اینڈ کالجز ایسوسی ایشن کیچیئرمین حیدر علی

کا کہنا ہیکہ بارشوں سے متاثرہ اضلاع میں اسکولز بندکرنیکا فیصلہ کیا گیا ہے۔دوسری طرف محکمہ

موسمیات کی سائیکلون شاہین سے متعلق پیش گوئی کے بعد کراچی انتظامیہ نے شہر سے تمام غیر

محفو ظ بل بورڈز ہٹانے کے لئے فوری کارروائی شروع کر دی ہے ۔ کمشنر کراچی نے تمام ڈپٹی

کمشنرز کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے اپنے ضلع کا ہنگامی دورہ کریں بل بورڈز کا معائنہ کریں

اوراپنے اپنے علاقوں سے تمام غیر محفوظ بل بورڈز ہٹادئے جائیں انھوں نے اس سلسلہ میں

نوٹیفکشین جاری کیا ہے جس میں انھوں نے ڈپٹی کمشنرز کو تمام اضلاع میں عمارتوں چھتوں اور

دیگر غیر محفوظ مقامات پر نصب بل بورڈز اور ہورڈنگز فوری ہٹانے کاحکم دیا ہے انھوں نے کہا

ہے کہ وہ یقینی بنائیں کہ شہر سے تمام غیر محفوظ بل بورڈز ہٹادئے جائیں انھوں نے کہا ہے کہ بل

بورڈز نہ ہٹانے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی انھوں نے ڈپٹی کمشنرز کو بھی ہدایت

کی ہے کہ وہ بل بورڈز نہ ہٹانے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کریں ۔ ۔ صوبائی ڈیزاسٹر

منیجمنٹ اتھارٹی نے متعلقہ اداروں کو حفاظتی اقدامات کرنے کی ہدایت جاری کر دی جبکہ ڈی ایم

سی سینٹرل علی زیدی کے احکامات پر ناگن چورنگی اور اس سے ملحقہ علاقوں میں ہیوی ڈیوٹی،

ٹرک ماونٹڈ پمپ لگا دیئے گئے ہیں۔دریں اثناکرچی میں ایمر جنسی نافذ کر دی گئی ہے ایڈمنسٹریٹر

کراچی مرتضی وہاب نے کہا کہ شہر میں متوقع طوفانی بارشوں کے پیش نظر تمام تر خدشات سے

نمٹنے کیلئے انتظامیہ متحرک ہے کو اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ کے ایم سی انتظامیہ نے

شہر میں ضروری اقدامات کئے ہیں، بلدیہ کے تمام ادارے ٹریفک پولیس رین ایمرجنسی ڈیوٹی پر

موجود ہے، اس کے علاوہ وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کابینہ ارکان کی ڈیوٹیاں بھی لگا دی

ہیں،کراچی کے لیے جن وزرا کو ذمہ داریاں تفویض کی گئی ہیں ان میں مکیش چاولہ ساؤتھ ، سعید

غنی ایسٹ ، تیمور تالپور کورنگی ، شہلا رضا سینٹرل ، ساجد جوکھیو ملیر، لیاقت آسکانی کیماڑی اور

وقار مہدی ویسٹ شامل ہیں،مرتضی وہاب نے کہا کہ شہر کے نشیبی علاقوں میں نکاسی آب کے لئے

واٹر پمپس لگا دئیے گئے ہیں، ہماری پوری کوشش ہوگی کہ شہریوں کو کسی قسم کی مشکلات پیش

نہ آئیں،ایڈمنسٹریٹرکراچی نے شہریوں سے اپیل کی کہ بارش کے دوران غیر ضروری طور پر

گھروں سے باہر نہ نکلیں، شہری حکومت اور بلدیاتی اداروں کے ساتھ تعاون کریں۔ طوفانی بارشوں

کے پیش نظر قومی ایئرلائن(پی آئی اے)سمیت دیگر ایئرلائنوں کے شیڈول میں تبدیلی جبکہ بعض

پروازیں منسوخ کردی گئیں۔ کراچی سے سکھر جانے والی پرواز پی کے594منسوخ کردی گئی۔

لاہور جانے والی پی آئی اے کی پرواز پی کے304 بھی منسوخ کی گئی ہے۔کراچی سے

اسلام آباد جانے والی سرین ایئر کی پرواز502دوپہر 12بجے روانہ ہونی تھی لیکن وقت تبدیل کردیا

گیا اب 1بجکر55منٹ پر روانہ ہوئی ۔ اسی طرح کراچی سے اسلام آباد جانے والی پی آئی اے کی

پرواز پی کے368دوپہر1بجے روانہ ہونی تھی وقت میں بھی تبدیلی کردی گئی جس کے بعد

پرواز2بجے روانہ ہوئی ہے۔کراچی سے کوئٹہ جانے والی پرواز پی کے310منسوخ کردی گئی۔

کوئٹہ جانیوالی سرین ایئر کی پرواز کو بھی منسوخ کردیا گیا۔طوفانی ہواؤں اور بارشوں

کے پیش نظر پورٹ قاسم بندرگاہ پر کھڑے جہازوں کو خطرات لاحق ہوگئے ہیں، انتظامیہ نے

ضروری اقدامات اٹھا لیے۔ پورٹ قاسم میں برتھ پر کھڑے جہازوں اور لانچوں کو طوفان سے خطرہ

ہے۔ انتظامیہ نے جہازوں اور لانچوں پر اضافی لنگر و ں سے باندھ دیے جبکہ ملازمین کی چھٹیاں

بھی منسوخ کردی گئیں۔طوفانی بارشوں کے پیش نظر پی ڈی ایم اے سندھ افسران اور ملازمین کی

چھٹیاں منسوخ کی گئیں۔مشیربرائے بحالیات غلام رسول کی ہدایت پر نکاسی کے لیے پیشگی انتظامات

بھی کرلیے گئے۔

سمندری طوفان شاہین الرٹ
سمندری طوفان شاہین الرٹ

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply