سعودی عرب میں پاکستان کا سفیر،محمد بن سلمان،سرمایہ کاری دونوں ملکوں کے مفاد میں ہے،عمران خان

Spread the love

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن) سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور وزیر اعظم عمران خان کے درمیان ون آن ون ملاقات ہوئی جس میں دوطرفہ تعلقات ، خطے کی صورتحال ، دہشتگردی کے خلاف جنگ سمیت مختلف امورپر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق دونوں رہنمائوں نے پاکستان میں اربوں ڈ الر کی سرمایہ کاری کے حوالے سے بھی بات چیت کی ۔ بعد ازاں سپریم کوآرڈینیشن کونسل کا افتتاحی اجلاس ہوا جس کی صدارت محمد بن سلمان اور وزیراعظم عمران خان نے کی۔

اعلیٰ سطحی کونسل کے قیام کی تجویز سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے دی تھی جس میں دونوں ممالک کے خارجہ امور،دفاع اوردفاعی پیداوارکے وزراء شامل ہیں۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا 20 ارب ڈالرز کے معاہدے سعودی سرمایہ کاری کا پہلا مرحلہ ہے،

سعودی عرب پاکستان میں مزید سرمایہ کاری کرے گا۔ یقین ہے وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں پاکستان بہت آگے بڑھے گا، پاکستان کا مستقبل روشن ہے۔ سعودی عرب میں پاکستان کا سفیر میں ہوں۔

تقریب سے وزیر اعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا پاکستانیوں کے لیے آج ایک عظیم دن ہے ، سعودی عرب ہمیشہ سے پاکستان کا دوست اور بھائی رہا ہے،سعودی قیادت اور عوام ہمارے دلوں میں رہتے ہیں۔

بعدازاب وزیر اعظم عمران خان نے سعودی علی عہد کے اعزاز میں دیے گئے عشائیہ سے خطاب میں کہا میرے لیے مکہ اور مدینے کا سفر سب سے بڑا اعزاز رہا ہے، سعودی عرب ہر ضرورت اور مشکل میں ہمارے ساتھ رہا ہے، سعودی سرمایہ کاری دونوں ملکوں کے مفاد میں ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا اسلامی فوجی اتحاد دہشت گردی کیخلاف مشترکہ جنگ کیلئے تمام مسلم ممالک کا اتحاد بنے گا، سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا دورہ باہمی اعتماد سے بھرپور تعلقات کومزید مضبوط کرے گا،ہرتنازع کا حل سیاسی اور پرامن طریقے سے نکالا جاسکتا ہے،

سعودی عرب کے ساتھ بینکنگ، تعلیم، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، تجارت، تعمیر، ثقافت، سینما اور سیاحت کے میدان میں بھی تعاون بڑھانا چاہتے ہیں، افغانستان میں امریکی مفادات کے نقصان کا خمیازہ پاکستان نے بھگتا، پاکستان اب کسی جنگ کا شراکت دار نہیں بنے گا۔

Leave a Reply