Saudia women boxer Rasha Al Khamis 109

رنگ میں اترنے سے تھکن دور ہو جاتی ہے، سعودی خاتون باکسر

Spread the love

ریاض(جتن آن لائن سپورٹس نیوز) سعودی خاتون باکسر

سعودی خاتون باکسر رشا الخمیس نے مختلف کھیلوں میں سعودی خواتین کے حصہ لینے پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔ رشا الخمیس کا کہنا ہے باکسنگ ایک ایسا ہنر ہے جس سے زندگی زیادہ آسان، مشکلات سے خالی اور پرسکون ہو جاتی ہے۔ مزید پڑھیں

سعودی اخبار کے مطابق ریاض میں پیدا ہونے والی رشا الخمیس پہلی سعودی ایتھلیٹ خاتون ہیں جو باکسنگ کے کھیل میں سند یافتہ ہیں۔ رشا الخمیس سعودی باکسنگ فیڈریشن کے بورڈ کی واحد خاتون ممبر بھی ہیں۔ رشا الخمیس نے 6 سال کی عمر میں باسکٹ بال اٹھائی تھی اورساتھ ساتھ فٹ بال اور ٹینس میں بھی اپنا سفر جاری رکھا۔

تعلیمی میدان میں انہوں نے 2011 میں کنگ سعود یونیورسٹی سے بزنس ایڈمنسٹریشن میں بیچلر آف سائنس کی ڈگری حاصل کی اور مزید تعلیم کے لیے کیلیفورنیا کا رخ کیا۔ الخمیس کا کہنا ہے خادم حرمین شاہ سلمان بن عبد العزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی سربراہی میں سعودی عرب حیرت انگیز عزائم کو پورا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور جنرل سپورٹس اتھارٹی کے شہزادہ عبدالعزیز بن ترکی کھیلوں کے میدان کا مستقبل روشن کرنے میں پیش پیش ہیں۔

سعودی خاتون باکسر

Leave a Reply