سعد رضوی گرفتای احتجاج

سعد رضوی گرفتای، ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے، دھرنے

Spread the love

سعد رضوی گرفتای احتجاج

لاہور ،اسلام آباد، کراچی(جے ٹی این آن لائن نیوز) سربراہ تحریک لبیک پاکستان سعد رضوی کی

گرفتاری پر پنجاب سمیت ملک بھر میں تحریک لبیک کے کارکن شدید غم غصے کا اظہار کرتے

ہوئے سٹرکوں پر آ گئے ۔تفصیلات کے مطابق تحریک لبیک کے مرکزی امیر صاحبزادہ سعد رضوی

کو گرفتارکئے جانے پرتحریک لبیک کے مرکزی رہنما کی گرفتاری پرشہر کی تمام اہم شاہراؤں

سمیت مختلف مقامات پر شدید ٹریفک جام، شاہدہ جی ٹی روڈ ،راوی روڈ، ریلوے اسٹیشن ،ملتان روڈ

،کینال روڈ چونگی امرسدھو فیروز پور روڈ ، ٹھوکر نیاز بیگ پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔

تفصیلات کے مطابق شہر میں بدترین ٹریفک جام کی وجہ سے جہاں شہریوں کو شدید پریشانی کا

سامنا کرنا پڑا، منٹوں کا سفر گھنٹوں میں تبدیل ہوگیا ۔ پولیس نفری کے ہمراہ شنگھائی پل فیروزپور

روڈ کے قریب پہنچی تو پولیس کی گاڑی پر نامعلوم افراد کی جانب سے پتھراؤہوا، جس کے باعث

گاڑی کے شیشے ٹوٹ گئے اور پولیس کی گاڑی واپس چلی گئی۔فیروزپور روڈ پرٹریفک کا نظام درہم

بر ہم ہونے سے لاہور سے قصور جانیوالی گاڑیوں کی طویل قطاریں لگ گئیں۔اسی طرح ملتان روڈ

،مال روڈ ،ٹھوکر نیاز بیگ ،کینال روڈ ،ریلوے اسٹیشن سمیت شہر کی تمام اہم شاہراؤ ں پر ٹریفک کا

نظام درہم برہم رہا ۔آخری اطلاعات آنے تک ہر کے تمام داخلی و خارجی راستوں پر ٹریفک کانظام

بری طرح درہم برہم تھا۔ مختلف سڑکوں پر ایمبولینس بھی ٹریفک میں پھنسی رہیں اور مریضوں کو

بروقت ہسپتال نہ بھجوا پر ان کے ورژا ء احتجاج کرتے نظر آئے ۔ سکھیکی کے کارکنوں نے احتجاج

کیا اور گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کی اورکہا حکومت ملک کے پرامن حالات کو خراب کرنے

کی کوشش کی جارہی ہے۔ دوسری جانب ضلع بھر میں پولیس کا تحریک لبیک کے کارکنوں کیخلاف

کریک ڈاؤن جاری رہا۔تحصیل سمبڑیال میں بھی کارکن احتجاج کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے ،

سیالکوٹ وزیرآباد روڈ موڑ سمبڑیال پر ٹائروں کو آگ لگا کر ٹریفک کیلئے روڈ کو بند کردیا ، جس

سے وزیرآباد روڈ ، ڈسکہ ،ماجرہ ، سیالکوٹ روڈ چاروں اطراف سے ٹریفک کی آمد و رفت بند ہونے

کی وجہ سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ۔ مظاہرین سے مذاکرات کیلئے مقامی انتظامیہ وہاں پر

پہنچ گئی ہے لیکن تحریک لبیک پاکستان تحصیل سمبڑیال کے کارکنوں کے عہدیدران نے کہا جب

تک ہمیں مرکزی قائدین کی جانب سے کوئی حکم نہیں ملتا ہم پر امن احتجاج جاری رکھیں گے ۔ اگر

انتظامیہ نے پر امن احتجاج میں کوئی ایکشن لیا تو حالات کی ذمہ دار خود ہو گی ۔کامونکے میں بھی

احتجاجی مظاہرین نے جی ٹی روڈ بلاک کر دی، جس سے گاڑیوں کی میلوں لمبی قطاریں لگ گئی۔

احتجاجی مظاہرین نے حکومت کیخلاف نعرے بازی کرتے ہوئے مطالبہ کیا توہین رسالت کے مرتکب

ملک فرانس کے سفیر کو ملک بدر اور مرکزی امیر صاحبزادہ بھائی محمد سعد حسین رضوی کو

فوری رہا کیا جائے۔ کسی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کیلئے پولیس کا عملہ بھی پہنچ گیا۔

وزیرآباد میں بھی اﷲ والا چوک میں ٹی ایل پی کے عہدیداران وکارکنوں نے احتجاج کیا ، چوک

چاروں اطراف سے بند کرنے سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا۔پولیس نے ٹی ایل پی کے کارکنان

پر لاٹھی چارج کیا اور سرپرست محمد عارف گنڈوسمیت دیگرکو گرفتار کرلیا ۔ احتجاج کی کوریج

سے پولیس کی جانب سے مقامی صحافی نمائندوں کوروکنے ، کیمرے چھیننے کی شدید مذمت کرتے

ہوئے آر پی او گوجرانوالہ ،سی پی او گوجرانوالہ سے فوری نوٹس لینے اور ایس ایچ او تھانہ صدر

وزیرآباد امجد کھوکھر کیخلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا گیا ۔فاروق آباد میں بھی احتجاج کے

باعث دونوں نہروں کے پلوں کو بند کرکے ٹریفک روک دی گئی، سیکڑوں کارکن جمع ہو گئے۔

ٹریفک بلاک کر دی ،سڑک بلاک ہونے پر پلو ں کے دونوں اطراف مبینہ طور پر ٹریفک کی لمبی

لمبی قطاریں لگ گئی۔پھول نگر میں بھی سعد رضوی کی گرفتاری کی خبر منظر عام پر آتے ہی

تحریک کے کارکنان نے بائی پاس پر رکاوٹیں کھڑی کر کے سڑک ٹریفک کیلئے بند کر دی،جس سے

مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔کارکنوں کا دھرنا رات گئے تک جاری تھا۔منڈی فیض آباد

میں کارکنوں نے بھٹہ چوک میں دھرنا دیا اور ہر قسم کی ٹریفک بند کر دی،شیخو پورہ میں بھی

گرفتاری کی اطلاع کارکنان میں جنگل کی آگ کی طرح دوڑ گئی جس پر تحریک لبیک پاکستان

مریدکے سمیت دیگر مضافات میں بھی جی ٹی روڈز کی ٹریفک کو معطل کرکے مظاہرین نے

احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع کردیا ۔ درجنوں لٹھ برداروں نے جی ٹی روڈ پر چلنے والی گاڑیوں

کو روک دیا جس سے مسافروں کو سفر کرنا مشکل ہوگیا ، جبکہ پولیس کی جانب سے مظاہرین

کیخلاف کوردعمل دیکھنے کو نہ ملا،ذرائع کے مطابق حکومت نے مبینہ نقص امن واحتجاجی

مظاہرے کئے جانے کی اطلاع پر گرفتاریاں عمل میں لائی ہیں ۔اسلام آباد اور راولپنڈی کے مختلف

علاقوں کی سڑکیں بلاک ہونے کی وجہ سے فیض آباد، مری روڈ، راول ڈیم، لیاقت باغ، کشمیر چوک

اور ترنول سمیت مختلف مقامات پر گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاریں لگ چکی ہیں۔منگلا پل کو ٹریفک

کے لئے بند کر دیا گیا ہے جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ پتوکی روڈ بلاک ہونے

سے گاڑیوں کی لمبی لائنیں لگ گئیں، گرمی میں مسافروں کا برا حال ہے۔ادھر کراچی کے مختلف

علاقوں میں بدترین ٹریفک جام کی خبریں ہیں۔ آئی آئی چندریگر روڈ، شاہراہ فیصل، ٹاور، بلدیہ

ٹاؤن،اورنگی ٹاؤن، لیاقت آباد، عیسیٰ نگری پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ چکی ہیں۔ اس کے علاوہ

ملیر کے مختلف علاقوں میں بھی ٹریفک جام کی اطلاعات ہیں۔اس وقت لاہور، گوجرانوالہ، قصور،

فیصل ا?باد، مریدکے، بہاولنگر، عارفوالہ، ساہیوال، وہاڑی، سمبڑیال، ڈسکہ، سرگودھا، صادق ا?باد،

اوکاڑہ، گوجر خان، کھاریاں، جہلم، نارووال، خیر پور گمبٹ، فقیر والی، چشتیاں، پاک پتن، دیپالپور،

رحیم یار خان سمیت دیگر شہروں میں ٹریفک جام کرکے شدید احتجاج کیا جا رہا ہے۔کراچی سمیت

سندھ کے دیگر شہروں میں بھی مذہبی جماعت کے کارکنوں سڑکیں بلاک کرکے شدید احتجاج جاری

رکھا ہوا ہے۔ خبریں ہیں کہ ٹنڈو الہ یار، جیکب ا?باد، حیدر ا?باد، میر پور خاص، سکھر، سانگھڑ اور

لاڑکانہ سمیت دیگر شہر احتجاج کی لپیٹ میں ہے۔واضح رہے تحریک لبیک نے 20 اپریل کو حکومت

کیخلاف احتجاجی تحریک شروع کرنے کا اعلان کررکھا تھا۔

سعد رضوی گرفتای احتجاج

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply