سرحدوں پر پائیدار قیام امن ہی عمران خان کے دورہ ایران کا مقصد ہے،پاکستانی سفیر

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

تہران(خصوصی رپورٹ)اسلامی جمہوریہ ایران میں تعینات خاتون پاکستانی سفیر

رفعت مسعود نے کہا ہے کہ مشترکہ سرحدوں میں پایدار قیام امن اور باہمی

تجارتی تعلقات کی توسیع وزیراعظم عمران خان کے آئندہ دورہ ایران کے اہم

مقاصد ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے تہران کے میلاد ٹاور میں یوم پاکستان کی

مناسبت سے منعقدہ ایک تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ایران کے وزیرصنعت،

تجارت اور کان کنی “رضا رحمانی” اس تقریب کے خصوصی مہمان تھے۔اس

موقع پر پاکستانی سفیر نے کہا کہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ ایران کے مختلف

علاقوں میں سیلاب کی وجہ سے جشن نوروز ایران اور پاکستانی عوام، دونوں

کیلئے بہت مشکل ہوگیا کیونکہ اگر ایرانی عوام مشکلات میں پھنس جائیں اور ان

کو مصیبتوں کا سامنا ہو تو ایسا ہے جیسا کہ پاکستانی عوام مشکلات میں پھنس

گئے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی حکومت اور عوام مشکل کی اس گھڑی

وقت میں ایرانی حکومت اورعوام کیساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ان کی مدد اور

حمایت کیلئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرینگے۔انہوں نے مزید کہا کہ

حکومت پاکستان نے ایران میں سیلاب متاثرین کیلئے وزیر اعظم عمران خان کے

حکم سے امدادی سامان کے 2 جہاز بھیج دئیے ہیں۔ پاکستانی سفیر نے دونوں

ملکوں کے درمیان اقتصادی تعلقات کے فروغ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اب

دونوں ملکوں کے درمیان باہمی تجارتی حجم کی شرح 2 ارب ڈالر ہے جس کو

بڑھانے کیلئے ایران اور پاکستان کے تجارت کاروں اور کاروباری حلقوں کے

درمیان تعلقات میں مزید اضافہ کرنے کیلئے نئی تجاویز اور طریقہ کار پیش کرنے

کی ضرورت ہے۔رفعت مسعود نے مشترکہ سرحدوں کے مسائل اور مشکلات کا

ذکرکرتے ہوئے کہا کہ اگر دونوں ملکوں کے درمیان سیاسی اور فوجی تعلقات میں

مزید اضافہ ہوجائے تو سرحدوں کے امن میں بھی بہتری آئے گی اور یہ سارے

مسائل بھی حل ہوجائیں گے۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply