سانحہ ساہیوال،بیوروکریسی اثر انداز نہ ہونے پائے ،جوڈیشل کمیشن بنانے کو تیار ہیں،وزیراعظم

Spread the love

پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی اجلاس میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن جماعتوں کے مطالبہ پر سانحہ ساہیوال کا جوڈیشل کمیشن بنانے کو تیار ہیں، اپوزیشن چاہے تو جوڈیشل کمیشن کیلئے اپنے لوگ بھی نامزد کرسکتی ہے، یہ انسانی المیہ ہے، ہم اسے مثال بنائیں گے۔اجلا س میں وزیراعظم نے ہدایت کی کہ ساہیوال واقعہ کے حوالے سے بیوروکریسی پر دھیان رکھیں، بیوروکریسی ساہیوال واقعے پر اثر انداز نہ ہونے پائے اور واقعے پر میڈیا کو اعتماد میں لیا جائے۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ساہیوال واقعے کے حوالے سے قطر میں بھی اپ ڈیٹس لیتا رہا، ساہیوال واقعے میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے ۔اجلاس میں ارکان اسمبلی کا کہنا تھا کہ 48گھنٹوں میں جے آئی ٹی رپورٹ سامنے آگئی، پنجاب حکومت نے محنت سے کام کیا، اجلاس میں ارکان اسمبلی نے حلقوں کے حوالے سے شکایات بھی کیں جبکہ منی بجٹ کے حوالے سے سوالات کے جوابات نہیں دیے گئے۔دوسری طرف وزیراعظم کو پنجاب حکومت کی سانحہ ساہیوال پر رپورٹ بھی پیش کردی گئی ہے جس میں جے آئی ٹی رپورٹ کی روشنی میں حکومت پنجاب کے اقدامات سے بھی آگاہ کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں سی ٹی ڈی افسران کو قتل کا ذمہ دار قراردیتے ہوئے سانحہ ساہیوال میں مقتول میاں بیوی اور ان کی بیٹی کو بے گناہ قرار دیا گیا ہے جب کہ سی ٹی ڈی کے سربراہ سمیت 3 افسران کو تبدیل اور 2 کو معطل کردیا گیا ہے۔جے آئی ٹی رپورٹ 13 نکات پر مشتمل ہے جس کے مطابق پنجاب حکومت مکمل انکوائری رپورٹ 30 دن میں پیش کرنے کو یقینی بنائے گی،ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے پنجاب پولیس میں اصلاحات کیلئے سفارشات طلب کرلیں اور مستقبل میں ایسے واقعات کی روک تھام کیلئے بھی سفارشات طلب کی گئی ہیں۔

Leave a Reply