سافٹ امیج کوئی چیز نہیں، دنیا میں عزت کیلئے خود داری ضروری، کپتان

سافٹ امیج کوئی چیز نہیں، دنیا میں عزت کیلئے خود داری ضروری، کپتان

Spread the love

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) سافٹ امیج کوئی چیز

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے انگریزی بولنا اور انگریزی کپڑے پہننا سافٹ

امیج نہیں احساس کمتری ہے، سافٹ امیج خود داری سے آتا ہے، دنیا اسکی عزت

کرتی ہے جو پہلے اپنی عزت کرتے ہیں، سافٹ امیج کو پروموٹ کرنا ہے تو

پاکستانیت کو پروموٹ کریں۔ اسلام آباد میں نیشنل امیچور شارٹ فلم فیسٹیول سے

خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا سافٹ امیج کوئی چیز نہیں،

دہشت گردی کے خلاف جنگ میں جب پاکستانیوں کو انتہا پسند اور بنیاد پرست کہا

گیا تو ہمارے اندر یہ دفاعی سوچ پیدا ہوئی کہ ہم پاکستان کا سافٹ امیج پروموٹ

کریں۔ ہم امریکا کے لیے جنگ لڑ رہے تھے اور وہ ہمیں برا بھلا بھی کہہ رہے

تھے، حالانکہ ہمیں انکی اس جنگ میں حصہ لینے کی کوئی ضرورت نہ تھی، اس

وقت پاکستان کے لیے یہ کہا گیا کہ یہ بہت خطرناک جگہ ہے، یہاں بنیاد پرست اور

انتہا پسند موجود ہیں۔

=-= پاکستان سے متعلق مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

انہوں نے کہا مجھے اس دور میں طالبان خان کہا گیا، ہم نے بھارتی فلم انڈسٹری

کو کاپی کرنا شروع کر دیا، دنیا میں صرف اصل چیز بکتی ہے، کاپی نہیں، دنیا

میں آئیڈیاز کو پذیرائی ملتی ہے، ہم نے فلمیں بنانے میں اپنی سوچ کے بجائے

دوسروں کا کلچر اپنا لیا، ہمارے ٹی وی نے بہترین کام کیا جو بھارت میں دیکھا

جاتا ہے، اپنی سوچ لے کر آئیں اور ناکامی سے نہ گھبرائیں۔ فلم انڈسٹری میں

فحاشی کے کلچر کے بجائے اوریجنل کانٹینٹ لانا ہوگا۔ اس موقع پر وزیراعظم نے

میجر جنرل بابر افتخار سمیت آئی ایس پی آر کو شارٹ فلم فیسٹیول پر خراج تحسین

بھی پیش کیا اورکہا وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری آپ سے بڑی امیدیں ہیں۔

شارٹ فلمز پاکستان میں نئی شروعات ہیں۔ ہمیں فلموں میں پاکستانی کلچر کو اجاگر

کرنا چاہیے تھا۔

=-،-= دہشتگردی کیخلاف جنگ تقریباََ جیت چکے، ڈی جی آئی ایس پی آر

اس سے قبل فلم فیسٹیول سے خطاب کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا اللہ تعالیٰ نے پاکستان کو ہر نعمت سے نوازا ہے۔

وطن عزیز کو دو دہائیوں سے دہشتگردی کی جنگ کا سامنا کرنا رہا، تخریب

کاروں نے پاکستان کے عالمی وقار کو بہت نقصان پہنچایا اور آج بھی کوشش کر

رہے ہیں، انسداد دہشت گردی کی جنگ تقریباً جیت چکے ہیں۔ اب وقت آ گیا ہے کہ

عالمی سطح پر اپنا امیج بہترین بنائیں۔ پاکستان وہ خوش نصیب ملک ہے جہاں پر

60 فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے، نیشنل امیچور شارٹ فلم فیسٹیول میں

نوجوان شارٹ فلمز بنائیں گے۔ نیشنل امیچور شارٹ فلم فیسٹیول ایسا پلیٹ فارم ہے

جہاں پر نوجوانوں نے شارٹ فلم بنانی ہیں جس سے پاکستان کا بہترین تشخص

سامنے لایا جا سکے۔ نومبر2020ء میں اس فیسٹیول کے لیے ہم نے بہترین ٹیم

تشکیل دی، وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے

اس مقصد کی سرپرستی کی۔

=-،-= پی ٹی وی ،ریڈیو اور سرکاری خبر رساں ایجنسی کو جلد بدل دینگے

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے نیشنل امیچیور شارٹ فلم فیسٹیول سے

خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ماضی میں جس طرح جنگیں لڑیں ان کو صحیح

طرح بیان نہیں کیا گیا، پاکستان نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں بیشمار قربانیاں

دیں لیکن ہماری قربانیاں کا ذکر ایسا نہیں جیسا ہونا چاہیے۔ اگست میں پی ٹی آئی

حکومت کو تین سال پورے ہو جائیں گے، 14 اگست کو پی ٹی وی، ریڈیو پاکستان

سمیت سرکاری خبر ایجنسی اے پی پی کو تبدیل کرکے ڈیجیٹلائزڈ کریںگے، ماڈرن

ریڈیو لیکر آئیں گے۔ ریاستوں کے پاس رائے عامہ ہموار کرنے کیلئے میڈیا اہم

ذریعہ ہے، آئی ایس پی آر نے پاکستان میں شارٹ فلم کو نئی جہت بخشی، میڈیا

ریاست کا اہم ستون ہے، کراچی میں فلم سکول بنا رہے ہیں، کرونا وائرس کی وجہ

سے سینما کاروبار خسارے میں چلا گیا، وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں نیا

پاکستان بنے گا۔

=–= شوبز سے متعلق مزید دلچسپ خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

چودھری فواد حسین نے کہا افغانستان میں امن پاکستان کے لئے اہم ہے، افغانستان

میں مستحکم حکومت دیکھنا چاہتے ہیں، امریکا اور چین دنیا کی دو بڑی اقتصادی

طاقتیں ہیں، ان کے درمیان بہتر تعلقات سے پوری دنیا میں بہتری آئے گی، وزیر

اعظم نے امریکہ، چین اور افغانستان کے معاملات پر اپنا نکتہ نظر واضح کیا،

افغانستان سے متعلق اپنی سرزمین کسی کو استعمال نہیں کرنے دیں گے، طالبان

کو پہلے امریکا اور پھر افغان حکام کیساتھ مذاکرات پر آمادہ کیا، چین اور امریکا

کے درمیان تناﺅ کم کرنے کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہیں، وزیراعظم نے

امریکا کیساتھ سکیورٹی تعلقات کی بجائے اقتصادی تعلقات پر زور دیا ہے۔ انہوں

نے نیویارک ٹائم کو اپنے انٹرویو میں امریکا، چین اور افغانستان کے معاملات پر

اپنا نکتہ نظر واضح طور پر دنیا کے سامنے رکھا ہے۔ افغانستان کے اندر امن

پاکستان کے لئے بہت اہم ہے-

=-= قارئین، کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

وزیراعظم نے افغانستان کے استحکام کے لئے پاکستان کی پوزیشن واضح کی ہے،

ہم افغانستان کی مدد کرنا چاہتے ہیں۔ چین اور امریکا کے درمیان تناﺅ کم کرنے

کے لئے ہم اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہیں۔ 1970ء کی دہائی میں بھی پاکستان نے

اس وقت اپنا کردار ادا کیا تھا جب امریکا اور چین کے درمیان تناﺅ عروج پر تھا۔

امریکا اور چین دو بڑی اقتصادی طاقتیں ہیں، ان کے درمیان تعلقات بہتر ہوں گے

تو پوری دنیا میں بہتری آئے گی۔

سافٹ امیج کوئی چیز

Leave a Reply