55

جماعتِ اسلامی پاکستان کے سابق امیر منور حسن انتقال کر گئے

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

کراچی(جتن آن لائن نیوز ) سابق امیر منور حسن

جماعتِ اسلامی پاکستان کے سابق امیر سید منور حسن طویل علالت کے بعد 79

سال کی عمر میںجمعہ کو کراچی کے مقامی ہسپتال میں انتقال کر گئے، صدر

مملکت ، وزیراعظم ، وزیر خارجہ ، چیئرمین سینیٹ ، چاروں صوبائی گورنرز،

وزرائے اعلیٰ ،وفاقی و صوبائی وزراء ، سیاسی و مذہبی قائدین اور سماجی

رہنمائوں نے سید منور حسن کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیاہے۔ایم پی اے سندھ

اسمبلی ورہنما جماعتِ اسلامی سید عبدالرشید نے سید منور حسن کے انتقال کی

تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ وہ طویل عرصے سے پارکنسن کے مرض میں مبتلا

اور زیر علاج تھے ان کی طبیعت میں اتار چڑھائو کافی عرصے سے جاری تھا

لیکن تین ہفتے قبل ان کو اچانک طبیعت بگڑنے پر مقامی ہسپتال میں داخل کیاگیا

تھا اور ایک ہفتے سے وہ انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں زیر علاج تھے۔ کچھ دن

قبل ڈاکٹرز نے سانس کی تکلیف کی وجہ سے وینٹی لیٹر پر بھی ڈال دیا تھا۔ جمعہ

کو ان کی طبیعت اچانک بگڑ گئی۔ ڈاکٹروں نے ہر ممکن کوشش کی مگرجانبر نہ

ہوسکے اور اپنے خالق حقیقی سے جا ملے۔ انہوں نے اپنے پسماندگان میں بیوہ

محترمہ عائشہ منورسابق رکن قومی اسمبلی و سیکریٹری جنرل جماعت اسلامی

معروف عالم دین علامہ طالب جوہری رضویہ سوسائٹی کراچی میں سپرد خاک

خواتین، بیٹے طلحہ منور، دو بھائیوں،سید شفیق حسن سابق جنرل منیجر ٹیکسٹائلز،

سابق ڈائریکٹر جنرل پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن سید ارشاد حسن اور دنیا بھر میں

پھیلے ہوئے تحریک اسلامی کے لاکھوں شیدائیوں کو سوگوار چھوڑا ہے۔ مرحوم

2008تا2013امیر جماعت اسلامی پاکستان،1993تا 2008تک سیکریٹری جنرل،

1992-93تک اسسٹنٹ سیکریٹری جنرل ، 1989تا 1991تک امیر جماعت اسلامی

کراچی اور 12سال تک اس کے سیکریٹری جنرل رہے، جبکہ 1966تا 1968تک

اسلامی جمعیت طلبہ کے ناظم اعلی رہے۔ وہ اپنے وقت کے مقبول طالب علم لیڈر

تھے۔ سید منور حسن نے پوری زندگی اسلامی نظام حیات کے نفاذ کی جدوجہد میں

گزاری۔

سابق امیر منور حسن

Leave a Reply